Tuesday , January 23 2018
Home / سیاسیات / سیاسی جماعتوں کوفنڈز کی تحقیقات کیلئے ایس آئی ٹی کے قیام کا مطالبہ

سیاسی جماعتوں کوفنڈز کی تحقیقات کیلئے ایس آئی ٹی کے قیام کا مطالبہ

نئی دہلی 3 فبروری ( سیاست ڈاٹ کام ) عام آدمی پارٹی نے آج کہا کہ وہ کانگریس اور بی جے پی کی قیادت سے کہے گی کہ وہ سپریم کورٹ کی نامزد کردہ کسی خصوصی تحقیقاتی ٹیم کے ذریعہ تحقیقات سے اتفاق کریں تاکہ دہلی انتخابات میں تمام تینوں جماعتوں کی فنڈنگ کی تحقیقات ہوسکے ۔ پارٹی نے کہا ہے کہ وہ کانگریس کی صدر سونیا گاندھی اور بی جے پی کے صدر امیت شا

نئی دہلی 3 فبروری ( سیاست ڈاٹ کام ) عام آدمی پارٹی نے آج کہا کہ وہ کانگریس اور بی جے پی کی قیادت سے کہے گی کہ وہ سپریم کورٹ کی نامزد کردہ کسی خصوصی تحقیقاتی ٹیم کے ذریعہ تحقیقات سے اتفاق کریں تاکہ دہلی انتخابات میں تمام تینوں جماعتوں کی فنڈنگ کی تحقیقات ہوسکے ۔ پارٹی نے کہا ہے کہ وہ کانگریس کی صدر سونیا گاندھی اور بی جے پی کے صدر امیت شاہ کو مکتوب روانہ کریگی تاکہ ان تحقیقات کیلئے ان کی منظوری حاصل کی جاسکے ۔ پارٹی نے کہا کہ وہ چاہتی ہے کہ سیاسی جماعتوں کی فنڈنگ کو شفاف کیا جائے ۔ عام آدمی پارٹی کے سینئر لیڈر آشوتوش نے ایک ٹوئیٹ میں کہا کہ عام آدمی پارٹی کی جانب سے بی جے پی اور کانگرسے کے صدور کو مکتوب روانہ کئے جائیں گے اور ان سے درخواست کی جائیگی کہ صاف و شفاف سیاست کو یقینی بنانے تمام جماعتوں کی فنڈنگ کی تحقیقات میں وہ تعاون کریں۔ پارٹی نے کہا کہ عام آدمی پارٹی کا ایک پانچ رکنی وفد سپریم کورٹ سے رجوع ہوگا تاکہ یہ درخواست کی جاسکے کہ ایک خصوصی تحقیقاتی ٹیم تشکیل دی جائے جس کے ذریعہ تینوں سیاسی جماعتوں کی فنڈنگ کی تحقیقات کروائی جاسکیں۔

انہوں نے ٹوئیٹر پر کہا کہ پانچ قائدین کی ٹیم آشوتوش ‘ کمار وشواس ‘ سنجے سنگھ ‘ آشیش کھیتان اور یوگیندر یادو سپریم کورٹ سے رجوع ہوگی اور درخواست کی جائیگی کہ سیاسی جماعتوں کی فنڈنگ کی تحقیقات کیلئے خصوصی تحقیقاتی ٹیم تشکیل دی جائے ۔ انہوں نے ٹوئیٹر پر کہا کہ ہم سپریم کورٹ کو ایک مکتوب حوالے کرنے جائیں گے جن میں بی جے پی ‘ کانگریس اور عام آدمی پارٹی کی فنڈنگ کی تحقیقات کا مطالبہ کیا جائیگا۔ واضح رہے کہ عام آدمی پارٹی کے کچھ سابقہ قائدین نے ایک علیحدہ گروپ قائم کرتے ہوئے الزام عائد کیا تھا کہ عام آدمی پارٹی نے مشتبہ کمپنیوں سے دو کروڑ روپئے حاصل کئے ہیں۔ یوگیندر یادو نے بھی کل رات اپنے ٹوئیٹر پر کہا تھا کہ عام آدمی پارٹی کا مطالبہ ہے کہ ایک خصوصی تحقیقاتی ٹیم تشکیل دیتے ہوئے دہلی انتخابات میں تینوں اہم جماعتوں کی فنڈنگ کے تعلق سے تحقیقات کروائی جائیں۔ اس ایس آئی ٹی کی نگرانی سپریم کورٹ کی جانب سے کی جانی چاہئے ۔

اس دوران مرکزی وزیر فینانس مسٹر ارون جیٹلی نے عام آدمی پارٹی پر سخت تنقید کرتے ہوئے آج کہا کہ یہ پارٹی ایسی کمپنیوں سے رقومات حاصل کرتے ہوئے رنگے ہاتھ پکڑی گئی ہے جن کا کوئی کاروبار نہیں ہے ۔ مسٹر جیٹلی نے الزام عائد کیا کہ کجریوال کی پارٹی توجہ ہٹانے کی حکمت عملی پر عمل پیرا ہے ۔ جیٹلی نے کہا کہ عام آدمی پارٹی کو پچاس پچاس لاکھ روپئے کے چار چیکس کے ذریعہ دو کروڑ روپئے کا عطیہ کالا دھن استعمال کرنے کی ہی ایک شکل ہے ۔ انہوں نے اشارہ دیا تھا کہ متعلقہ حکام کی جانب سے اس معاملہ کی تحقیقات کروائی جائیں گی ۔ آپ والینٹر ایکشن منچ ( عوام ) نے دو کروڑ روپئے گذشتہ سال مختلف کمپنیوں سے حاصل کرنے کا الزام عائد کیا تھا ۔ عام آدمی پارٹی کی جانب سے سپریم کورٹ کے ذریعہ تحقیقات کے مطالبہ پر ارون جیٹلی نے کہا کہ یہ سب کچھ توجہ ہٹانے کی کوششیں ہیں ۔ عام آدمی پارٹی اور اس کی قیادت اس معاملہ میں رنگے ہاتھوں پکڑی گئی ہے ۔

TOPPOPULARRECENT