Saturday , December 15 2018

سیاسی عزم کا فقدان رام مندر کی تعمیر میں تاخیر کا باعث

مودی حکومت پر شیوسینا کی تنقید، ترجمان ’سامنا‘ میں اداریہ

ممبئی 26 نومبر (سیاست ڈاٹ کام) شیوسینا نے آج الزام عائد کیاکہ سیاسی عزم کے فقدان کی وجہ سے رام مندر کی ایودھیا میں تعمیر تاخیر کا شکار ہورہی ہے اور کہاکہ وزیراعظم کا سیاسی عزم کا فقدان رام مندر کی ایودھیا میں تعمیر میں تاخیر کی وجہ ہے۔ وزیراعظم نریندر مودی کو سیاسی ڈرامہ کرنا چھوڑ دینا چاہئے جو وہ گزشتہ کئی سال سے اِس معاملے میں کرتے آرہے ہیں اور کانگریس کے کندھے پر بندوق رکھ کر نہیں چلانا چاہئے۔ مودی پر طنز کرتے ہوئے شیوسینا نے کہاکہ سابق لوک سبھا انتخابات کے موقع پر اُنھوں نے اپنے 56 انچ کے سینے پر فخر ظاہر کرتے ہوئے تبصرہ کیا تھا، کیا کانگریس نے اتنی ہمت ہے کہ وہ رام مندر تعمیر کرکے دکھائے۔ یہی وجہ ہے کہ اُسے اقتدار سے بیدخل کردیا گیا اور 56 انچ سینے والا یہ شخص انتظامیہ کی کنجیوں کا مالک بن گیا۔ اس کے باوجود آپ کانگریس کو پانی میں نہیں پھینک سکے، نہ زمین میں پھینک سکے اور نہ ہوا میں اُڑا سکے۔ لوگ ایک بار پھر آپ کے سینے کی جسامت کا ناپ لیں گے اگر لارڈ رام اب بھی ایودھیا میں جلاوطن رہیں گے تو جو لوگ آپ کے سیاسی ڈرامے سے ماثر ہوا کرتے تھے اِس سے متاثر ہونا چھوڑ دیں گے۔ شیوسینا کے ترجمان ’سامنا‘ میں آج کے اداریہ میں مودی حکومت پر سخت تنقید کی گئی ہے۔ شیوسینا نے کہاکہ وزیراعظم کانگریس پر الزام عائد کرتے ہیں کہ وہ عدالتی کارروائی میں رکاوٹیں پیدا کررہی تھی۔ شیوسینا نے کہاکہ مودی کو گاندھی خاندان اور کانگریس پر الزامات عائد کرنا ترک کردینا چاہئے۔ آپ کو اقتدار اِس لئے سونپا گیا تھا کہ آپ ایسے مسائل کی یکسوئی کریں۔ کانگریس اور سماج وادی پارٹی کو اِس لئے اقتدار سے بیدخل کردیا گیا کیوں کہ وہ رام مندر کی تعمیر میں رکاوٹیں پیدا کررہے تھے۔ کیا نوٹوں کی تنسیخ کانگریس کی مخالفت کے باوجود نہیں کی گئی۔ کیا آپ نے جموں و کشمیر میں پی ڈی پی کے ساتھ مخلوط حکومت قائم نہیں کی، کیا محبوبہ مفتی کانگریس کی جانب سے رکاوٹوں پیدا کرنے کے باوجود بی جے پی سے اتحاد کرنے پر تیار نہیں ہوگئیں۔ پھر رام مندر کی ایودھیا میں تعمیر کی راہ میں کانگریس کے رکاوٹیں پیدا کرنے سے فرق کیوں پڑگیا۔ بی جے پی کے دعوؤں کے برعکس یہ کانگریس نہیں بلکہ سیاسی عزم کا فقصدان ہے جو رام مندر کی تعمیر میں سب سے بڑی رکاوٹ ہے۔ شیوسینا مہاشٹرا اور مرکز میںبی جے پی کی حلیف جماعت ہے۔

TOPPOPULARRECENT