Wednesday , September 19 2018
Home / اضلاع کی خبریں / سیاسی قائدین کی ٹی آر ایس میں شمولیت

سیاسی قائدین کی ٹی آر ایس میں شمولیت

نلگنڈہ۔/21مئی، ( سیاست ڈسٹرکٹ نیوز) تلنگانہ کی تعمیر نو کیلئے تلنگانہ راشٹرا سمیتی کے بانی صدر مسٹر کے چندر شیکھر راؤ کی قیادت کو مستحکم کرنے اور دوران انتخابات عوام سے کئے گئے وعدے و تیقنات اور ترقیاتی پروگراموں کی کامیاب عمل آوری کیلئے تلگودیشم، کانگریس اور سی پی ایم پارٹی کے سینکڑوں قائدین نے آج شام ٹی آر ایس قائد مسٹر ڈی نرسمہا

نلگنڈہ۔/21مئی، ( سیاست ڈسٹرکٹ نیوز) تلنگانہ کی تعمیر نو کیلئے تلنگانہ راشٹرا سمیتی کے بانی صدر مسٹر کے چندر شیکھر راؤ کی قیادت کو مستحکم کرنے اور دوران انتخابات عوام سے کئے گئے وعدے و تیقنات اور ترقیاتی پروگراموں کی کامیاب عمل آوری کیلئے تلگودیشم، کانگریس اور سی پی ایم پارٹی کے سینکڑوں قائدین نے آج شام ٹی آر ایس قائد مسٹر ڈی نرسمہا ریڈی کی قیادت میں ٹی آر ایس میں شمولیت اختیار کرلی ہے۔ تلگودیشم ضلع سکریٹری مسٹر بی کرشنا ریڈی ٹاؤن سکریٹری تلگودیشم پارٹی بی سرینواس ریڈی، رام نرسمہا ریڈی، ٹی این ٹی یو ضلع سکریٹری، کے ویرا چاری سابق ارکان بلدیہ سرینواس چاری، شتروگھنا ریڈی، اے راملو، کے رویندر ریڈی، بی ملیا، کانگریس اقلیتی قائد ووقف بورڈ رکن جناب محمد ایوب، ڈورنکل سابق سرپنچ، تپرتی اور کنگل منڈل کے ایم پی ٹی سیز و دیگر قائدین نے کہا کہ ٹی آر ایس پارٹی کو ضلع میں مستحکم کرنے اور ٹی آر ایس پارٹی کے ایجنڈے کی موثر عمل آوری کیلئے سوریا پیٹ رکن اسمبلی مسٹر جگدیش ریڈی سے 23مئی کو این آر ایس فنکشن ہال میں منعقدہ تہنیتی تقریب میں ملاقات کرتے ہوئے پارٹی میں شمولیت اختیار کریں گے۔

ضلع سکریٹری تلگودیشم پارٹی بی کرشنا ریڈی نے کہا کہ ضلع میں تلگودیشم پارٹی کو عوام نے مسترد کردیا ہے۔ضلع میں عام انتخابات کے موقع پر پارٹی عوامی اعتماد سے مکمل محروم ہوگئی ہے، عوام کی خواہش اور پارٹی کے قائدین کے اجلاس میں غور و خوض کے بعد ٹی آر ایس میں شامل ہونے کا فیصلہ کیا گیا ہے۔ انہوں نے کہاکہ پارٹی سے مستعفی ہوکر پارٹی سربراہ کو فیاکس بھی روانہ کئے ہیں۔کانگریس پارٹی قائد و آزاد رکن بلدیہ ایم گوپی نے بھی رکن اسمبلی نلگنڈہ کی ہٹ دھرمی کی وجہ پارٹی سے مستعفی ہوکر ٹی آر ایس میں شمولیت اختیار کی ہے۔ ٹی آر ایس قائد مسٹر ڈی نرسمہا ریڈی نے ان تمام قائدین کا پارٹی میں استقبال کیا اور کہا کہ رکن اسمبلی کے عوام کو گمراہ کرنے والے بیانات کی وجہ کامیابی حاصل ہوئی ہے۔ وہ اگر پارٹی میں شمولیت اختیار کرنا چاہتے ہیں تو پہلے اپنے عہدہ سے مستعفی ہوجائیں۔ انہوں نے کہا کہ ان کے خلاف مقدمہ دائر کیا گیاہے اور 6 جون کو عدالت سے ان کے خلاف فیصلہ کی توقع ہے۔ انہوں نے کہا کہ وہ کے چندر شیکھر راؤ کوچیف منسٹر کا عہدہ حاصل ہونے کے بعد حلقہ میں میڈیکل کالج قائم کریں گے۔اس موقع پر اقلیتی قائدین ٹی آر ایس مسٹر محمد عزیز الدین بشیر، محمد جہانگیر کے علاوہ دیگر قائدین موجود تھے۔

TOPPOPULARRECENT