Friday , November 24 2017
Home / شہر کی خبریں / سیاسی مداخلت سے وقف بورڈ کی آمدنی بری طرح متاثر

سیاسی مداخلت سے وقف بورڈ کی آمدنی بری طرح متاثر

چیف منسٹر چندر شیکھر راؤ کے تعاون سے آمدنی میں اضافہ کرنے صدر نشین محمد سلیم کا فیصلہ

حیدرآباد۔14 جولائی (سیاست نیوز) تلنگانہ میں اہم اوقافی اداروں میں سیاسی مداخلت کے سبب وقف بورڈ کی آمدنی بری طرح متاثر ہوئی ہے۔ بڑی درگاہوں کے انتظامات کے سلسلہ میں ہراج کو روکنے میں سیاسی قائدین کی مداخلت کم کرنے کے لیے صدرنشین وقف بورڈ محمد سلیم نے چیف منسٹر کے تعاون کے ذریعہ آمدنی میں اضافہ کے اقدامات کا فیصلہ کیا ہے۔ تلنگانہ کی تین اہم درگاہیں فی الوقت بورڈ کی خاطر خواہ آمدنی کا اہم ذریعہ ہے۔ حالیہ عرصے تک یہ تینوں وقف بورڈ کی راست نگرانی میں تھی کیوں کہ مقامی ٹی آر ایس عوامی نمائندوں و قائدین نے ہراج میں رکاوٹ پیدا کردی تھی۔ صدرنشین وقف بورڈ محمد سلیم نے گمشتہ دنوں درگاہ حضرت جہانگیر پیراںؒ کے انتظامات کا کامیابی سے ہراج کیا جس سے بورڈ کی آمدنی میں اضافہ کی امید ہے۔ درگاہ سعد اللہ حسینیؒ بڑا پہاڑ نظام آباد کے انتظامات ابھی بھی عہدیداروں کی کمیٹی کے تحت ہیں۔ وزیر زراعت پوچارم سرینواس ریڈی نے انتظامات کا ہراج روکنے میں اہم رول ادا کیا اور وہ ابھی بھی بورڈ کو ہراج کے سلسلہ میں تعاون سے گریز کررہے ہیں۔ وہ چاہتے ہیں کہ عہدیداروں پر مشتمل کمیٹی کے تحت انتظامات کو برقرار رکھا جائے ۔ عہدیداروں کی کمیٹی کے قیام کے بعد سے درگاہ سے وقف بورڈ کو ہونے والی آمدنی بری طرح متاثر ہوئی ہے۔ سالانہ ایک کروڑ سے زائد کی آمدنی والا یہ ادارہ خسارے میں ہے۔ صدرنشین وقف بورڈ محمد سلیم نے گزشتہ دنوں وزیر زراعت کے پاس منعقدہ اجلاس میں ہراج کیئے جانے کی تائید کی۔ بتایا جاتا ہے کہ بہت جلد درگاہ کے انتظامات کے سلسلہ میں ہراج کو قطعیت دی جائے گی۔ عرس انتظامات کے سلسلہ میں وقف بورڈ نے جو رقم عہدیداروں کی کمیٹی کو جاری کی تھی اس کے خرچ کا کوئی حساب پیش نہیں کیا گیا اور نہ ہی عرس کے موقع پر زائرین کو مناسب سہولتیں فراہم کی گئیں۔

TOPPOPULARRECENT