Saturday , January 20 2018
Home / شہر کی خبریں / سید ابراہیم کا بحیثیت آزاد امیدوار محبوب نگر سے میدان میں

سید ابراہیم کا بحیثیت آزاد امیدوار محبوب نگر سے میدان میں

لوک سبھا و اسمبلی دونوں حلقوں سے بیک وقت مقابلہ ۔ سیاسی جماعتوں پر دھوکہ دہی کا الزام

لوک سبھا و اسمبلی دونوں حلقوں سے بیک وقت مقابلہ ۔ سیاسی جماعتوں پر دھوکہ دہی کا الزام

حیدرآباد۔/15اپریل، ( سیاست نیوز) ٹی آر ایس اور کانگریس پارٹی کی جانب سے لمحہ آخر میں ٹکٹ سے محروم کئے جانے والے محبوب نگر کے سید ابراہیم حلقہ لوک سبھا محبوب نگر اور حلقہ اسمبلی محبوب نگر سے بحیثیت آزاد امیدوار مقابلہ کررہے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ اگرچہ ٹی آر ایس اور کانگریس نے ان سے دھوکہ کیا لیکن وہ عوامی تائید اور عوام کے بی فارم کے ذریعہ انتخابی میدان میں ہیں۔ انہوں نے کہا کہ انتخابات دراصل انصاف اور ناانصافی کے درمیان عوامی فیصلہ ہے۔ انہیں یقین ہے کہ محبوب نگر کے عوام انہیں اسمبلی حلقہ سے اپنے نمائندہ کے طور پر بھاری اکثریت سے منتخب کریں گے۔ سید ابراہیم نے دعویٰ کیا کہ بلالحاظ مذہب و ملت عوام ان کے ساتھ ہیں اور گذشتہ دو انتخابات میں ان سے ہوئی ناانصافی کے سبب ہمدردی کی لہر پائی جاتی ہے۔ سید ابراہیم نے بتایا کہ 2009 ء میں شکست کے بعد محبوب نگر اسمبلی حلقہ کے ضمنی چناؤ میں دوبارہ انہوں نے مقابلہ کیا اس وقت رائے دہی کو فرقہ پرستی کا رنگ دے کر انہیں شکست دی گئی۔ انہوں نے کہا کہ محبوب نگر لوک سبھا حلقہ سے چندر شیکھر راؤ کی کامیابی میں انہوں نے اہم رول ادا کیا تھا۔ اس کے علاوہ تلنگانہ تحریک میں بھی ان کے سرگرم رول سے عوام اچھی طرح واقف ہیں۔ انہوں نے الزام عائد کیا کہ ٹی آر ایس سربراہ چندر شیکھر راؤ نے انہیں ٹکٹ کا وعدہ کرتے ہوئے لمحہ آخر میں جے اے سی قائد سرینواس گوڑ کو ٹکٹ دے دیا جبکہ ان کا تعلق محبوب نگر اسمبلی حلقہ سے نہیں ہے۔

انہوں نے بتایا کہ کانگریس کے جنرل سکریٹری ڈگ وجئے سنگھ اور دیگر اہم قائدین نے بھی انہیں ٹکٹ کا تیقن دیا تھا تاہم ضلع کے کانگریسی قائدین نے ان کے خلاف مہم چلائی کیونکہ انہیں اندیشہ تھا کہ کامیابی کے بعد سید ابراہیم طاقتور قائد کے طور پر اُبھریں گے۔انہوں نے کہا کہ کانگریس نے ایک غیر مقبول امیدوار کو اسمبلی حلقہ سے میدان میں اُتار کر صرف ضابطہ کی تکمیل کی ہے۔ انہوں نے کہاکہ اگرچہ دیگر امیدواروں کے پاس اپنی اپنی پارٹی کے بی فارم ہیں لیکن وہ عوام کے بی فارم پر مقابلہ کررہے ہیں۔ خود اسمبلی حلقہ محبوب نگر کے رائے دہندوں نے ان سے خواہش کی کہ وہ کسی بھی صورت میں انتخابات میں حصہ لیں۔ سید ابراہیم نے کہا کہ عوام انہیں بھاری اکثریت سے منتخب کرتے ہوئے کانگریس اور ٹی آر ایس کو سبق سکھائیں گے۔ انہوں نے بتایا کہ وہ محبوب نگر کی ترقی کیلئے جامع منصوبہ رکھتے ہیں۔ تمام دیہاتوں اور وارڈس میں مفت منرل واٹر پلانٹس قائم کئے جائیں گے۔ اس کے علاوہ محبوب نگر ٹاؤن کو گرین سٹی میں تبدیل کیا جائیگا۔ انہوں نے چیاریٹبل ٹرسٹ اور صحت و تعلیم کے مسائل کی یکسوئی کا وعدہ کیا۔ سید ابراہیم نے عوام بالخصوص اقلیتوں سے اپیل کی کہ وہ اپنے ووٹ کو کانگریس کے حق میں استعمال کرکے ضائع نہ کریں۔

TOPPOPULARRECENT