Thursday , June 21 2018
Home / ہندوستان / سی بی آئی تحقیقات میں شمولیت سے چوکسی کا انکار

سی بی آئی تحقیقات میں شمولیت سے چوکسی کا انکار

نئی دہلی 20 مارچ (سیاست ڈاٹ کام) ہیرے جواہرات کے تاجر میہول چوکسی نے پنجاب نیشنل بینک کو دو ارب امریکی ڈالر کی دھوکہ دہی کیس کی سی بی آئی تحقیقات میں شمولیت سے انکار کردیا ہے اور دعویٰ کیاکہ ناقابل یقین الزامات کے نتیجہ میں ان کا بزنس اچانک بند ہوگیا ہے۔ اُنھیں اور ان کے خاندان کو سابق ساتھیوں سے خطرات لاحق ہوگئے ہیں۔ چوکسی نے سی بی آئی کے نام اپنے تازہ ترین مکتوب مورخہ 16 مارچ میں تحقیقات میں شمولیت سے انکار کیلئے اپنی صحت، پاسپورٹ کی معطلی، میڈیا کی طرف سے عدالتی انداز میں الزامات لگانے اور اپنی طرف سے فیصلے سنانے کے واقعات کا حوالہ بھی دیا۔ سی بی آئی نے ان سے تحقیقات میں شامل ہونے کی خواہش کے ساتھ مکتوب روانہ کیا تھا۔ جس کے جواب میں میہول چوکسی نے مزید کہاکہ ’’ریجنل پاسپورٹ آفیسر نے آج کی تاریخ تک مجھ سے ربط نہیں کیا اور میرا پاسپورٹ بدستور معطل ہے۔ آپ کے دفتر کو یقین دلانا چاہتا ہوں کہ میں ہندوستان واپسی کے لئے کوئی بہانہ نہیں بنارہا ہوں‘‘۔ سی بی آئی نے ایک ایف آئی آر کے ضمن میں چوکسی کو پوچھ گچھ کے لئے حاضر ہونے کی ہدایت کی تھی۔ اس ایف آئی آر میں ان کے بھانجہ نیرو مودی، آمی مودی اور نشل مودی کے نام بھی شامل ہیں۔ چوکسی نے کہاکہ ’’میں اعادہ کرتا ہوں کہ میں بیرون ملک ہوں۔ پہلے بھی آپ کی نوٹسوں کا جواب دے چکا ہوں۔ حیرت ہے کہ پھر یہ مسئلے اُٹھائے گئے ہیں جن پر پہلے بھی جواب نہیں دیئے گئے۔ جس سے میری سلامتی کے خطرات انتہائی سطح تک بڑھ رہے ہیں‘‘۔

TOPPOPULARRECENT