Wednesday , December 13 2017
Home / Top Stories / سی بی ایف سی کو اپنا کام کرنے دیا جائے : مرکز

سی بی ایف سی کو اپنا کام کرنے دیا جائے : مرکز

بھنسالی اور دھمکی دینے والے یکساں قصوروار : یوگی آدتیہ ناتھ
گورکھپور ؍ نئی دہلی ؍ جئے پور ۔ 21 نومبر (سیاست ڈاٹ کام) سنسر بورڈ کا کچھ فرض ہے اور اسے اپنا فرض ادا کرنے کی اجازت دی جانی چاہئے۔ مرکزی حکومت نے کہا کہ فلم پدماوتی کا تنازعہ یوپی کے چیف منسٹر یوگی آدتیہ ناتھ کے سنجے لیلیٰ بھنسالی کو انہیں اور دیپیکا پڈوکون کو دھمکیاں دینے والے مساوی طور پر قصوروار ہیں، کہتے ہوئے ایک تنازعہ کھڑا کردیا تھا۔ اس پس منظر میں مرکزی حکومت کا یہ بیان اہمیت رکھتا ہے۔ بالی ووڈ اداکار رنویر سنگھ نے جنہوں نے فلم میں علاء الدین خلجی کا کردار ادا کیا ہے، کہاکہ انہیں اس فلم پر 200 فیصد اطمینان ہے۔ حیدرآباد میں بی جے پی رکن اسمبلی ٹی راجہ سنگھ لودھ نے چیف منسٹر کے چندرشیکھر راؤ سے اپیل کی ہیکہ وہ فلم کی نمائش کی اجازت نہ دیں اور دھمکی دی ہیکہ جن ٹاکیزوں میں فلم کی نمائش کی جائے گی انہیں نذرآتش کردیا جائے گا۔ مختلف غیرمعروف گروپس کی جانب سے فلمساز بھنسالی اور اداکارہ دیپیکاپڈوکون کو تاریخ مسخ کرنے کے الزام میں مختلف قسم کی دھمکیاں دی جاچکی ہیں۔ بھنسالی نے کہا کہ اگر کوئی کارروائی نہ کی جائے تو یہ دونوں فریقین کیلئے مضر ثابت ہوگی۔ چیف منسٹر راجستھان وسندھراراجے نے دریں اثناء کہا کہ فلم کی ریاست میں نمائش کی اجازت نہیں دی جائے گی جب تک کہ مرکزی حکومت اس میں ضروری تبدیلیوں کی ہدایت نہ دے۔ مرکزی وزیر اطلاعات و نشریات راجہ وردھن راٹھور نے تاہم تجویز پیش کی کہ سنسر بورڈ کو اپنا کام کرنے کی اجازت دی جانی چاہئے۔ وہ ایک پریس کانفرنس میں اخباری نمائندوں کے سوالات کے جواب دے رہے تھے۔ چیف منسٹر پنجاب امریندرسنگھ نے کل کہا تھا کہ سنیما لائسنس کا یہ مطلب نہیں کہ تاریخی حقائق کو توڑمروڑ کر پیش کیا جائے۔ آج انہوں نے وضاحت کی کہ وہ نہ تو فلم پر امتناع کی تائید میں ہے اور نہ دھمکیاں دینے والوں کی تائید کرتے ہیں۔ دھمکیوں اور احتجاج کے درمیان فرق ہونا چاہئے۔

فلم ڈائرکٹر سدھیر مشرا نے کہا کہ فلمساز کا حق اظہار کسی بھی شخص کا بنیادی حق ہے جیسا کہ حق احتجاج ہوتا ہے۔ اسکرپٹ رائٹر اپوروا اسرانی نے کہاکہ یہ فنکار تاریخی یا اساطیری نام کی تاویلات کا حق رکھتا ہے جیسا کہ وہ حق وجود رکھتا ہے چاہے اس کا متن کچھ بھی کیوں نہ ہو۔ فلم پدماوتی اپنے مواد کی بناء پر تنازعات میں گھری ہوئی ہے۔ یہ افواہیں بھی گرم ہیں کہ فلم میں رانی پدماوتی اور سلطان علاء الدین خلجی کے کرداروں کا ایک خواب کا منظر ہے جس میں دونوں کو رومانی صورتحال میں دیکھا جاسکتا ہے۔ کئی گروپس فلم کے خلاف احتجاج کررہے ہیں اور انہوں نے فلم میں تاریخ کو مسخ کرکے پیش کرنے کا الزام عائد کیا ہے تاہم مورخین کی رائے اس بارے میں منقسم ہیکہ رانی پدماوتی کا درحقیقت کوئی وجود تھا یا نہیں۔ دریں اثناء گورکھپور سے موصولہ اطلاع کے بموجب اترپردیش کے چیف منسٹر یوگی آدتیہ ناتھ نے فلم ’’پدماوتی‘‘ کے ڈائریکٹر سنجے لیلا بھنسالی پر عوامی جذبات سے کھلواڑ کے عادی ہونے کا الزام عائد کرتے ہوئے کہا کہ فلم ’’پدماوتی‘‘ کا ڈائریکٹر بھی اس فلم کے اداکاروں کو دھمکی دینے والوں سے کچھ کم قصوروار نہیں ہے۔ چیف منسٹر نے ادعا کیا کہ اگر کوئی کارروائی کی جاتی ہے تو یہ دونوں طرف ہوگی۔ یوگی نے بھنسالی کی مذمت کرتے ہوئے اس مسئلہ پر جاری تنازعہ کو مزید پیچیدہ بنادیا ہے، کیونکہ بعض گروپس اس فلم کی نمائش کی مخالفت کرتے ہوئے اس میں حقائق کو مسخ کئے جانے کا الزام عائد کررہے ہیں۔ یوگی آدتیہ ناتھ کے ان ریمارکس سے قبل دیگر دو بی جے پی زیراقتدار ریاستوں مدھیہ پردیش اور راجستھان کے چیف منسٹروں نے بھی فلم ’’پدماوتی‘‘ کی نمائش کی مخالفت کی تھی۔ بعدازاں کانگریس کے زیراقتدار پنجاب کے چیف منسٹر کیپٹن امریندر سنگھ نے بھی اس فلم کی مذمت کرتے ہوئے کہا کہ ایسے افراد کو فلم ساز کو لائسنس نہ دیئے جائیں جو ’’تاریخی حقائق کو مسخ کیا کرتے ہیں۔ حکومت اترپردیش نے اعلان کیا ہے کہ اس ریاست میں ’’پدماوتی‘‘ کی نمائش کی اس وقت تک اجازت نہیں دی جائے گی جب تک اس کے قابل اعتراض حصوں کو حذف نہیں کیا جاتا۔

 

کام نہیں کرنے والے افسران کو وقت سے پہلے ریٹائر کر دیا جائے گا:یوگی
جونپور۔ 21 نومبر۔ ( سیاست ڈاٹ کام ) اتر پردیش کے چیف منسٹر یوگی آد تیہ ناتھ نے کہا ہے کہ عوامی شکایات، ترقیاتی کاموں اور لااینڈ آرڈرکو برقرار رکھنے میں ناکام رہنے والے افسران وقت سے پہلے ریٹائرڈ کردیئے جائیں گے ۔ یوگی آدتیہ ناتھ آج یہاں ایک انتخابی ریلی کوخطاب کر رہے تھے ۔ انہوں نے کہا کہ شہروں میں اچھی سڑکیں، اچھی اسٹریٹ لائٹ،صاف صفائی اور صاف پینے کا پانی کا انتظام کیا جانا چاہئے ۔ انہوں نے کہا کہ منصوبوں میں جو پیسہ لگایا جاتا ہے وہ عوام کا ہے اور عوام کا پیسہ اس کی ترقی میں خرچ کیا جانا چاہئے اور بھارتیہ جنتا پارٹی (بی جے پی) کی حکومت صحیح سمت میں اس کا صحیح استعمال کر رہی ہے ۔ انہوں نے کہا کہ ریاست کو بدعنوانی سے آزاد کرنا ہوگا، پھر دنیا کی کوئی طاقت ریاست کی ترقی کو روک نہیں سکتی ہے ۔ وزیر اعظم نریندر مودی اور میری یہی منشا ہے ۔

TOPPOPULARRECENT