Tuesday , July 17 2018
Home / شہر کی خبریں / سی پی ایس اسکیم کو فوری برخاست کرنے کا مطالبہ

سی پی ایس اسکیم کو فوری برخاست کرنے کا مطالبہ

عثمانیہ جنرل ہاسپٹل کے ملازمین کا احتجاج ، او پی ایس پنشن اسکیم کے احیاء پر زور
حیدرآباد۔15مارچ(سیاست نیوز) عثمانیہ جنرل اسپتال کے اسٹاف نے وقفہ لنچ کے دوران سی پی ایس اسکیم کے خلاف احتجاجی دھرنا منظم کیا اور حکومت تلنگانہ سے مطالبہ کیاکہ وہ مرکز پر دبائو کے ذریعہ سی پی آئی کے بجائے او پی ایس پنشن اسکیم کا احیاء عمل میں لایا جائے ۔ ملازمین نے پی آر سی کے بشمول برسر برخاست آندھرا ملازمین کو تبادلے کرنے او رآندھرا میں خدمات انجام دے رہے تلنگانہ کے سرکاری ملازمین کو واپس ریاست میںلانے کا بھی حکومت مطالبہ کیا۔ ٹی این جی اوز گریٹر حیدرآباد صدر ایس ایم حسینی مجیب نے مہمان خصوصی شرکت کی اور کہا کہ ٹی این جی اوز سی پی ایس کی برخواستگی تک اپنی جدوجہد کو جاری رکھے گی۔ حکومت کی فلاحی اسکیمات کو روبعمل لانے میںسرکاری ملازمین اہم رول ادا کررہے ہیں مگر سرکاری ملازمین کے متعلق حکومت کا رویہ ٹھیک نہیں ہے۔ریاست کی برسراقتدار سیاسی جماعت پر یہ ذمہ داری عائد ہوتی ہے کہ وہ ایوا ن پارلیمنٹ میں سی پی ایس کے خلاف ریاست کے سرکاری ملازمین کی نمائندگی کرے اور مرکز پر دبائو بنائے تاکہ تلنگانہ کے سرکاری ملازمین کے ساتھ ہونی والی ناانصافیوں کو ختم کیاجاسکے۔انہوں نے کہاکہ آئوٹ سورسنگ اور کنٹراکٹ کی بنیاد پر برسوں سے خدمات انجام دینے والے ملازمین کے ساتھ انصاف کا وعدہ تو کیاگیا مگر چار سالوں میںاس پر عمل ندارد ہے۔ انہوں نے کہاکہ 25مارچ کو ایل بی نگر اسٹیڈیم میں سی پی ایس کے علاوہ ملازمین کے دیگر مسائل کے عنوان پر ٹی این جی اوز کا ایک بڑا احتجاجی جلسہ عام منعقد کیاجارہا ہے۔ مجوزہ جلسہ عام کے متعلق سرکاری ملازمین کے اندر شعور بیداری مہم کے طور پر ہر محکمہ میں وقفہ لنچ کے دوران احتجاجی پروگرام منعقد بھی کیاجارہا ہے۔ اس موقع پر جی پربھاکر ‘ اومادیوی ، محمد رحیم‘ اور عثمانیہ جنرل اسپتال کے مختلف شعبوں میںخدمات انجام دینے والے ملازمین کی کثیرتعداد بھی موجود تھی۔

TOPPOPULARRECENT