Tuesday , December 11 2018

سی پی جوشی نے راہول کی ایماء پر معذرت خواہی کرلی

نئی دہلی ؍ جئے پور 23 نومبر (سیاست ڈاٹ کام) راجستھان کے سینئر کانگریس لیڈر سی پی جوشی نے آج اپنے ذات پات سے متعلق ریمارکس کے لئے معذرت خواہی کرلی جبکہ پارٹی سربراہ راہول گاندھی نے اُن کے تبصرے پر ناپسندیدگی ظاہر کرتے ہوئے اُن سے اظہار تعصب کیا تھا۔ تاہم بی جے پی نے اُن کی معذرت خواہی کو مسترد کرتے ہوئے کہاکہ اُن کے ریمارکس نے ہندوستانی کلچر اور ہندو مذہب کی توہین کی ہے۔ جمعرات کو چناؤ والے راجستھان میں جلسہ عام سے خطاب کرتے ہوئے جوشی نے مبینہ طور پر کہا تھا کہ وزیراعظم نریندر مودی، بی جے پی ایم پی اوما بھارتی اور ہندو جہدکار سادھوی رتمبھرا کا تعلق نچلے طبقات سے ہے اور وہ ہندومت کے تعلق سے کچھ نہیں جانتے۔ اُنھوں نے کہا تھا کہ برہمن ہی ہیں جو علم رکھتے ہیں اور ہندومت کو جانتے ہیں۔ جوشی نے ہندی میں ایک ٹوئیٹ کے ذریعہ ہاکہ کانگریس پارٹی اور پارٹی ورکرس کے اُصولوں اور احساسات کا احترام کرتے ہوئے مَیں معذرت چاہتا ہوں ، اگر میرے بیان سے سماج کے کسی طبقہ کو کوئی ٹھیس پہونچی ہو۔

TOPPOPULARRECENT