Saturday , September 22 2018
Home / اضلاع کی خبریں / شادنگر میں سب کورٹ کے قیام سے عوام کو سہولت

شادنگر میں سب کورٹ کے قیام سے عوام کو سہولت

شادنگر۔12فبروری( سیاست ڈسٹرکٹ نیوز) بارکونسل آف انڈیا کے جدید فوائد کے مطابق بار اسوسی ایشن کو انتخابات ہر سال 31مارچ کے اندر مکمل کرنا ہے ۔ جدید قواعد و ضوابط کو مدنظر رکھتے ہوئے بار اسوسی ایشن کے عہدیدار اس پر عمل آوری کرنے کیلئے ٹھوس اقدامات کریں ۔ ان خیالات کا اظہار ریاستی بار کونسل چیرمین اے نرسمہا ریڈی نے شاد نگر آئی بی گیسٹ ہاؤ

شادنگر۔12فبروری( سیاست ڈسٹرکٹ نیوز) بارکونسل آف انڈیا کے جدید فوائد کے مطابق بار اسوسی ایشن کو انتخابات ہر سال 31مارچ کے اندر مکمل کرنا ہے ۔ جدید قواعد و ضوابط کو مدنظر رکھتے ہوئے بار اسوسی ایشن کے عہدیدار اس پر عمل آوری کرنے کیلئے ٹھوس اقدامات کریں ۔ ان خیالات کا اظہار ریاستی بار کونسل چیرمین اے نرسمہا ریڈی نے شاد نگر آئی بی گیسٹ ہاؤز میں توقف کرتے ہوئے منعقدہ پریس کانفرنس سے مخاطب کرتے ہوئے کیا ۔ انہوں نے معزز وکلاء پر زور دیتے ہوئے کہا کہ جدید قواعد کے مطابق معزز وکلاء اپنی پریکٹس کرنے والے مقام پر ہی ووٹر لسٹ میں اپنا نام درج کروائیں ۔ ایک ہی مقام پر نام درج کروانے پر زور دیا ۔ جدید قواعد کے مطابق سال میں ایک مرتبہ بار اسوسی ایشن کے انتخابی عمل پر عمل آوری کرنے پر زور دیا ۔ معزز وکلاء کا جہاں ووٹ ہوگا وہیں پر اپنے ووٹ کے استعمال کرنے کی تلقین کی ۔ جدید قواعد پر عمل آوری کیلئے معزز وکلاء اپنا بھرپور تعاون فراہم کریں ۔ مستقر شاد نگر میں سب کورٹ کی منظوری پر مسرت کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ شاد نگر میں سب کورٹ کی منظوری میں رکن اسمبلی شادنگر چولہ پلی پرتاپ ریڈی کا بھرپور تعاون حاصل رہا ہے ۔ انہوں نے لاء منسٹر ‘ رکن اسمبلی ‘ بار اسوسی اشین شادنگر اورمعزز وکلاء شاد نگر کا تہہ دل سے شکریہ ادا کیا ۔ سب کورٹ شاد نگر کو کارگرد بنانے بہت جلد ایک نوٹیفکیشن جاری ہونے کی امید ظاہر کی ۔ سب کورٹ کو جلد از جلد کارگرد بنانے کیلئے متعلقہ اعلیٰ عہدیداروں کو توجہ دلائی جارہی ہے ۔ سب کورٹ کا شاد نگر میں قیام سے عوام کو کافی سہولت ہونے کی امید ظاہر کی ۔

قبل ازیں دیوانی مقدمات جو کہ سب کورٹ کے دائرہ میں آئے تھے ان افراد کو کافی سہولت ہوگی ۔ فی الحال سب کورٹ محبوب نگر میں شاد نگر اور اس کے اطراف و اکناف کے سب سے زیادہ مقدمات ہیں ۔ ریاستی بار کونسل چیرمین اے نرسمہا ریڈی نے ایک سوال کے جواب میں کہا کہ علحدہ تلنگانہ قیام کے لئے راہ ہموارہوچکی ہے اور تلنگانہ علاقہ کی عوام کا ایک دیرینہ خواب بہت جلد پورا ہوگا ۔قیام تلنگانہ سے معزز وکلاء کو بھی کافی فائدہ ہوگا اور اڈمنسٹریشن میں بھی کافی تبدیلی آئے گی ۔ بعض اوقات معزز وکلاء کو مسائل سے دوچار ہونا پڑ رہا ہے ۔انہوں نے وکلاء پر زور دیتے ہوئے کہا کہ وکلاء کیلئے فراہم کردہ میڈی کلیم پالیسی سے بھرپور استفادہ کریں ۔ اسموقع پر ہائی کورٹ سینیئر ایڈوکیٹ پربھاکر ریڈی ‘ بار اسوسی ایشن شاد نگر صدر جگن موہن ریڈی ‘ سینئر ایڈوکیٹس ٹی ویریندر ریڈی ‘ ایم اے کریم ‘ ایس اپا‘ چندی مہیندر ریڈی ‘ ایم رام داس ‘ راج گوپال ‘ محترمہ صبیحہ سلطانہ ‘ ای نرسملو ‘نریندر ‘ انجیا کے علاوہ مقامی معزز وکلاء موجود تھے ۔ ریاستی بار کونسل چیرمین اے نرسمہا ریڈی کی شاد نگر آمد پر شاد نگر بار اسوسی ایشن اورمعزز وکلاء نے شاندار خیرمقدم کیا ۔

TOPPOPULARRECENT