Tuesday , November 21 2017
Home / جرائم و حادثات / شادی شدہ خاتون کو ہراساں کرنے والے شخص کو انوکھی سزا

شادی شدہ خاتون کو ہراساں کرنے والے شخص کو انوکھی سزا

باغ عامہ کے روبرو دن بھر شی ٹیمس کا پوسٹر تھامے کھڑے رہنے کی ہدایت
حیدرآباد /9 جنوری ( سیاست نیوز ) شادی خاتون کو مسلسل ہراساں اور ازدواجی زندگی میں اختلافات کا موجب بننے والے شخص کو عدالت نے انوکھی سزا سنائی اور اسے گن پارک کے قریب ٹریفک پولیس کے ہمراہ ’’ شی ‘‘ ٹیم کا پوسٹر تھامے رہنے کی ہدایت دی جس میں خواتین پر ظلم اور عوامی بیداری سے متعلق نعرے درج ہے ۔ بتایا جاتا ہے کہ ایک شادی شدہ خاتون کو اس کے قریبی رشتہ دار 39 سالہ ایم اے رحیم ساکن مولی علی سکندرآباد آئے دن بذریعہ فون ہراساں کر رہا تھا ۔ خاتون کی جانب سے موبائل فون نمبرات تبدیل کرنے کے باوجود بھی وہ نئے نمبرات حاصل کرکے اسے ہراساں کر رہا تھا ۔ اتنا ہی نہیں موبائل فون سوئچ آف کرنے پر رحیم نے خاتون کے شوہر کو فون پر ربط پیدا کرتے ہوئے اس کی بیوی سے فون پر بات کرانے کیلئے اصرار کر رہا تھا جس کے نتیجہ میں میاں بیوی کے درمیان اختلافات پیدا ہوگئے ۔ اس جوڑے نے رحیم کی ہراسانی کے خلاف شی ٹیم سے ایک شکایت درج کروائی جس پر شی ٹیم نے فی الفور کارروائی کرتے ہوئے رحیم کو حراست میں لے لیا ۔ خاتون کی جانب سے ہراساں کرنے والے کے خلاف شکایت درج نہ کرنے پر پولیس از خود کارروائی کرتے ہوئے اس کے خلاف ایک مقدمہ درج کرلیا اور اسے چوتھے اسپیشل پولیس پولیٹن نامپلی کے اجلاس میں پیش کیا ۔ جہاں پر اسے سزا سنائی گئی ۔ مجسٹریٹ نے ایک انوکھی سزا سناتے ہوئے ملزم کو پبلک گارڈن کے روبرو واقع گن پارک چوراہے پر سماجی کام کے تحت شی ٹیم کے پوسٹرس تھامے رہنے کی سزا دی ۔

TOPPOPULARRECENT