شادی شدہ ہونے کا اعلان کرنے مودی کو کئی الیکشن لگ گئے

ڈوڈا 11 اپریل (سیاست ڈاٹ کام) نائب صدر کانگریس راہول گاندھی نے آج نریندر مودی کی شخصی زندگی کو تنقید کا نشانہ بناتے ہوئے کہاکہ بی جے پی کے وزارت عظمیٰ کے امیدوار کو جو ’’خواتین کے احترام‘‘ کی باتیں کرتے ہیں، خود اپنے شادی شدہ ہونے کا اعتراف کرنے کے لئے کئی الیکشن لگ گئے۔ اُنھوں نے اب تک کئی الیکشن لڑے لیکن کبھی بھی اپنے شادی شدہ ہو

ڈوڈا 11 اپریل (سیاست ڈاٹ کام) نائب صدر کانگریس راہول گاندھی نے آج نریندر مودی کی شخصی زندگی کو تنقید کا نشانہ بناتے ہوئے کہاکہ بی جے پی کے وزارت عظمیٰ کے امیدوار کو جو ’’خواتین کے احترام‘‘ کی باتیں کرتے ہیں، خود اپنے شادی شدہ ہونے کا اعتراف کرنے کے لئے کئی الیکشن لگ گئے۔ اُنھوں نے اب تک کئی الیکشن لڑے لیکن کبھی بھی اپنے شادی شدہ ہونے کا اعتراف نہیں کیا۔ یہ پہلی بار ہے کہ اُنھوں نے اِس کا اعتراف کیا ہے۔

راہول گاندھی کا یہ تبصرہ مودی کے اعتراف پر پیدا ہونے والے تنازعہ کے سلسلہ میں تھا۔ اپنے حلف نامہ میں نریندر مودی نے اپنے شادی شدہ ہونے کا اعتراف کرلیا۔ لیکن قبل ازیں اُنھوں نے حلف نامہ کا ایک کالم خالی چھوڑ دیا تھا حالانکہ حلف نامہ میں تمام کالموں کو پُر کرنے کا لزوم ہے اور قاصر رہنے پر الیکشن کمیشن کارروائی بھی کرسکتا ہے۔ مودی پر گجرات میں خواتین کی جاسوسی کے سلسلہ میں تنقید کرتے ہوئے راہول گاندھی نے کہاکہ چیف منسٹر گجرات کے دفتر نے پولیس کی ایک ٹیم تشکیل دی تھی جو ایک خاتون کے ٹیلیفون ٹیاپ کررہی تھی۔ چیف منسٹر گجرات جاننا چاہتے تھے کہ اُن کے اطراف و اکناف کیا ہورہا ہے۔ اُنھوں نے کہاکہ اگر اِن مثالوں سے بی جے پی کا حقیقی چہرہ ظاہر نہیں ہوتا تو اور کیا ہوتا ہے۔

بی جے پی یہ دعویٰ کیسے کرسکتی ہے کہ وہ ملک گیر سطح پر خواتین کو بااختیار بنائے گی۔ راہول گاندھی نے کہاکہ ملک کو امن، ترقی اور خوشحالی کی ضرورت ہے اور یہ اتحاد کے ذریعہ ہی ممکن ہے۔ جبکہ بی جے پی انتشار کی سیاست میں ملوث ہے۔ راہول گاندھی نے یاد دہانی کی کہ بی جے پی نے انڈیا شائننگ مہم چلائی تھی جو بُری طرح ناکام رہی۔ اُنھوں نے کہاکہ بی جے پی نے کانگریس کے انتخابی منشور سے کچھ اقتباسات چُرا کر اپنا منشور پیش کیا ہے۔

TOPPOPULARRECENT