Saturday , January 20 2018
Home / شہر کی خبریں / شادی مبارک اور دیگر اسکیمات کی مناسب تشہیر نہ ہونے کا اعتراف

شادی مبارک اور دیگر اسکیمات کی مناسب تشہیر نہ ہونے کا اعتراف

مستحقین تک اسکیمات کی عدم رسائی، وزیرفینانس ایٹالہ راجندر کا اسمبلی میں بیان

مستحقین تک اسکیمات کی عدم رسائی، وزیرفینانس ایٹالہ راجندر کا اسمبلی میں بیان
حیدرآباد۔/20مارچ، ( سیاست نیوز) وزیر فینانس ای راجندر نے اعتراف کیا کہ شادی مبارک اور دیگر اسکیمات کی مناسب تشہیر نہ ہونے کے سبب بہتر نتائج برآمد نہیں ہوئے ہیں۔ اسمبلی میں وقفہ سوالات کے دوران بی جے پی کے رکن این وی ایس ایس پربھاکر کے سوال کے جواب میں وزیر فینانس نے کہا کہ حکومت نے شادی مبارک، غریبوں کیلئے 6کیلو چاول، کلیان لکشمی، واٹر گرڈ اور دیگر اسکیمات کا آغاز کیا لیکن اس کی تشہیر پر حکومت نے زائد فنڈز خرچ نہیں کئے جس کے نتیجہ میں اسکیمات کے فوائد زائد مستحقین تک نہیں پہنچ سکے۔ انہوں نے کہا کہ اخبارات اور میڈیا میں سرکاری اسکیمات کی تشہیر پر جاریہ سال حکومت نے کوئی خاص توجہ نہیں دی اور تشہیری مہم کیلئے صرف 35لاکھ روپئے الاٹ کئے گئے تھے۔ انہوں نے کہا کہ آئندہ سال فلاحی اور ترقیاتی اسکیمات کی اخبارات کے ذریعہ مناسب تشہیر پر توجہ دی جائے گی۔ انہوں نے کہا کہ اخبارات کے ذریعہ عوام تک اسکیمات کے فوائد بہ آسانی پہنچائے جاسکتے ہیں۔ عوام میں شعور بیداری میں اخبارات کا اہم رول ہے۔ وزیر فینانس نے کہا کہ حکومت اشتہارات کی اجرائی کے سلسلہ میں بڑے اخبارات کے ساتھ چھوٹے اخبارات کو بھی ترجیح دے گی اور انہیں بھی اشتہارات جاری کئے جائیں گے۔ انہوں نے تیقن دیا کہ اشتہارات کی اجرائی کا عمل مکمل شفافیت پر مبنی ہوگا اور فنڈز کے بیجا استعمال کی ہرگز اجازت نہیں دی جائے گی۔ ضمنی سوالات کے جواب میں وزیر فینانس نے کہا کہ سرکاری اسکیمات کو عوام تک پہنچانے میں کسی قدر تساہل ہوا ہے جس کا انہیں اعتراف ہے۔ انہوں نے وضاحت کی کہ محکمہ اطلاعات و تعلقات عامہ کے ذریعہ اخبارات و میگزینس کو جاری ہونے والے اشتہارات صرف ایک ایجنسی کے ذریعہ جاری کرنے کی کوئی تجویز نہیں۔ انہوں نے کہا کہ ویجلنس اینڈ انفورسمنٹ کمیٹی قائم کی گئی تھی جس نے حکومت کو 17سفارشات پیش کی ہیں۔ ان سفارشات کی روشنی میں اخبارات اور میگزینس کو اشتہارات جاری کئے جائیں گے۔ راجندر نے کہا کہ سابق میں اشتہارات کی اجرائی میں بعض بے قاعدگیاں پائی گئیں اور عہدیدار اپنے قریبی اور جان پہچان والوں کو لاکھوں روپئے کے اشتہارات جاری کرتے رہے۔ ٹی آر ایس حکومت اس طرح کی سرگرمیوں کی ہرگز اجازت نہیں دے گی اور شفافیت کے ساتھ اشتہارات کی پالیسی تیار کی جائے گی۔ اشتہارات کی اجرائی کے سلسلہ میں تمام اخبارات کو اور میگزینس کے ساتھ یکساں سلوک کیا جائے گا۔ انہوں نے بتایا کہ تلنگانہ ریاست میں رجسٹرار آف نیوز پیپر آف انڈیا (RNI) سرٹیفکیٹ کے حامل 165 چھوٹے روز نامے موجود ہیں۔ انہوں نے کہا کہ میگزینس کو اڈھاک بنیاد پر اشتہارات جاری کئے جائیں گے اور یہ آر این آئی سرٹیفکیٹ، اشاعت کے تسلسل، سرکاری ویلفیر اسکیمات کے کوریج اور دیگر شرائط کی بنیاد پر ہوگا۔ انہوں نے کہا کہ 2جون سے اب تک سرکاری اشتہارات پر 34لاکھ 24ہزار 500روپئے خرچ کئے گئے۔ بی جے پی کے رکن پربھاکر نے کہا کہ حکومت کی اسکیمات عوام تک پہنچانے میں اخبارات کا اہم رول ہے۔ انہوں نے کہا کہ شادی مبارک اور کلیان لکشمی اسکیمات کے نتائج حوصلہ افزاء نہیں ہیں کیونکہ حکومت نے ان اسکیمات کی مناسب تشہیر نہیں کی۔ بی جے پی رکن نے تمام اخبارات کے ساتھ یکساں سلوک کا مشورہ دیا۔

TOPPOPULARRECENT