Thursday , July 19 2018
Home / شہر کی خبریں / شادی مبارک کی امدادی رقم ایک لاکھ کردی گئی

شادی مبارک کی امدادی رقم ایک لاکھ کردی گئی

اسمبلی میں چیف منسٹر کا اعلان، غریب لڑکیوں کی شادی کے سلسلہ میں اہم قدم

حیدرآباد۔19 مارچ (سیاست نیوز) تلنگانہ حکومت نے غریب لڑکیوں کی شادی کے موقع پر امداد سے متعلق اسکیم شادی مبارک اور کلیان لکشمی کی رقم کو بڑھاکر ایک لاکھ 116 روپئے کرنے کا اعلان کیا ہے۔ چیف منسٹر کے چندر شیکھر رائو نے آج اسمبلی میں یہ اعلان کیا اور کہا کہ 75 ہزار 116 روپئے کی موجودہ امدادی رقم میں اضافہ کا مقصد غریب لڑکیوں کی شادیوں کو آسان بنانا ہے۔ تلنگانہ تشکیل کے بعد ان دونوں اسکیمات کا آغاز کیا گیا تھا۔ ابتداء میں اسکیم کے تحت 51 ہزار روپئے کی امداد دی جارہی تھی۔ بعد میں اس رقم کو بڑھاکر 75 ہزار 116 روپئے کیا گیا۔ چیف منسٹر نے بتایا کہ دونوں اسکیمات کے تحت ابھی تک 3 لاکھ 60 ہزار افراد کو فائدہ پہنچا ہے۔ شادی مبارک اسکیم کے تحت اقلیتی طبقات جبکہ کلیان لکشمی اسکیم کے تحت ایس سی ایس ٹی طبقات کی غریب لڑکیوں کی شادی کے سلسلہ میں امداد دی جاتی ہے۔ چیف منسٹر نے اپنے بیان میں کہا کہ غربت عوام کو مختلف انداز سے مسائل کا شکار کرتی ہے۔ بسااوقات روایات بھی عوام پر بوجھ بن جاتے ہیں جو غربت کا شکار ہیں۔ ہمارے سماج میں شادی کا معاملہ مہنگا ہوچکا ہے اور لڑکیوں کی شادی بوجھ بن چکی ہے۔ انہوں نے لڑکیوں کو بوجھ تصور کرتے ہوئے حمل کے دوران ہی ہلاک کرنے کے افسوسناک واقعات کا حوالہ دیا اور کہا کہ بعض وقت لڑکیاں غریب خاندانوں میں شادی کے بغیر ہی زندگی بسر کرنے پر مجبور ہیں۔ لڑکیوں کی شادی کے لیے والدین قرض کے بوجھ میں مبتلا ہوجاتے ہیں۔ تلنگانہ حکومت نے انسانی بنیادوں پر اس مسئلہ کا جائزہ لیا اور اگرچہ اس کا انتخابی منشور میں وعدہ نہیں کیا گیا تھا، پھر بھی حکومت نے غریب لڑکیوں کی شادی کے لیے 2 اکٹوبر 2014ء کو کلیان لکشمی اسکیم کا اعلان کیا۔ اس اسکیم سے تلنگانہ حکومت کے وقار میں اضافہ ہوا ہے۔ چیف منسٹر نے کہا کہ کلیان لکشمی اسکیم ان کے دل سے کافی قریب ہے اور ریاست کے عوام اس اسکیم کی ستائش کررہے ہیں۔ یہ اسکیم غریب لڑکیوں کی زندگی میں خوشحالی کا باعث بنی ہے۔ ابتداء میں کلیان لکشمی ایس سی ایس ٹی اور شادی مبارک اقلیتی طبقات کے لیے شروع کی گئی تھی جس کے تحت 51 ہزار روپئے کی امداد دی جارہی تھی بعد میں عوام کی نمائندگی پر اسکیمات پر سماج کے دیگر طبقات تک توسیع دی گئی۔ گزشتہ سال امدادی رقم کو 75 ہزار 116 روپئے کیا گیا تھا۔ انہوں نے کہا کہ کلیان لکشمی کے چیکس بروقت حاصل کرتے ہوئے لڑکیوں کی مائیں خوشی کے آنسوئوں کے ساتھ حکومت کو دعائیں دے رہی ہیں۔ انہوں نے کہا کہ دونوں اسکیمات کے تحت عمر کی حد 18 سال مقرر کی گئی ہے اور والدین اسکیم سے استفادہ کے لیے لڑکی کے 18سال ہونے کا انتظار کررہے ہیں۔ چیف منسٹر نے کہا کہ کلیان لکشمی اور شادی مبارک اسکیمات کم بچپن کی شادیوں کو روکنے میں کامیاب رہی ہیں۔ انہوں نے امید ظاہر کی کہ عوام دونوں اسکیمات کی امدادی رقم کو ایک لاکھ 116 روپئے کرنے کا خیرمقدم کریں گے۔ انہوں نے کہا کہ عوام کی دعوائوں سے تلنگانہ ویلفیر اسٹیٹ میں تبدیل ہوا ہے۔

TOPPOPULARRECENT