Saturday , May 26 2018
Home / جرائم و حادثات / شادی کے نام پر دھوکہ نائجیریائی باشندہ گرفتار

شادی کے نام پر دھوکہ نائجیریائی باشندہ گرفتار

حیدرآباد /15 مئی ( سیاست نیوز ) شادی کے نام پر دھوکہ دینے والے ایک نائجیریائی باشندے کو پولیس راچہ کنڈہ سائبر کرائم نے گرفتار کرلیا ۔ بتایا جاتا ہے کہ فرضی شناخت اور کروڑہا روپئے فنڈز دینے کا لالچ دیکر ایک شہری کو لوٹ لیا گیا ۔ پولیس کے مطابق ایل بی نگر علاقہ کے ساکن راؤ کو 2 لاکھ 20 ہزار روپئے کا دھوکہ دیا گیا ۔ جبکہ 5 لاکھ امریکی ڈالر کے فنڈ کی اس کو لالچ دی گئی ۔ سائبر کرائم پولیس کے مطابق پولیس نے اس سلسلہ میں نائجیریائی باشندے او آر ایڈگیونیا عرف جارج پرنیل کو گرفتار کرلیا جس نے شادی کے رشتوں کی ویب سائٹ پر ڈاکٹر بیابر کے نام سے ایک پیغام رکھا تھا ۔ رشتوں کی جانچ کے دوران ایل بی نگر کے ساکن دھوکہ دہی کا شکار شکایت گذار شخص بی آر راؤ کا اس سے رابطہ ہوا اور دونوں میں واٹس اپ کے ذریعہ بات چیت اور تبادلہ بھی جاری تھا ۔ ڈاکٹر بیابر نے 14 مارچ کو ہندوستان آنے کی اطلاع دی اور راؤ کو اس بات سے واقف کروایا ۔ تاہم بی آر راؤ کو 14 مارچ کے دن فون موصول ہوا جس میں اجنبی نے خود کو کسٹمس کا عہدیدار ظاہر کرتے ہوئے راؤ کو بتایا کہ کسٹمس ڈپارٹمنٹ نے ڈاکٹر بیابر کو گرفتار کرلیا جو 5 لاکھ یو ایس ڈالر کے ساتھ ملک آرہی تھی ۔ جس کے بعد راؤ کو ان کی رہائی اور فنڈز کے حصول کیلئے فوری رقم جمع کرنے کیلئے کہا گیا اور مختلف بنک اکاونٹس میں رقم منگوائی گئی جس کے بعد اس شکایت گذار شخص کو اندازہ ہوگیا کہ یہ شخص دھوکہ دہی کا شکار ہوا ہے ۔ شکایت کے بعد پولیس نے تحقیقات کے دوران دہلی کے ایرپورٹ سے جارج پرنیل کو گرفتار کرلیا جو سال 2012 میں تین ماہ کیلئے ہندوستان آیا تھا ۔ پولیس سائبر کرائم نے بتایا کہ اس دھوکہ دہی کے معاملہ میں ماسٹر مائک ششما عرف سپریہ شرما ساکن ممبئی شاکر علی ساکن نوئیڈا اور ندیم خان ساکن جنوبی دہلی مفرور ہیں ۔

TOPPOPULARRECENT