Monday , November 20 2017
Home / ہندوستان / شاملی ضلع میں امتناع احکام نافذ ‘ کیرانہ کی سرحدات بند

شاملی ضلع میں امتناع احکام نافذ ‘ کیرانہ کی سرحدات بند

سنگیت سوم نے امتناعی احکام کے پیش نظر ریلی معطل کردی ۔ حکومت کو 15 دن کا الٹی میٹم
مظفر نگر 17 جون ( سیاست ڈاٹ کام ) سارے شاملی ضلع میں امتناعی احکام نافذک ردئے گئے ہیں اور کیرانہ کی سرحداتک و کو بند کردیا گیا ہے جبکہ بی جے پی رکن اسمبلی سنگین سوم نے اس مقام تک اپنی ریلی کو معطل کردیا ۔ انہوں نے تاہم نقل مقام تنازعہ میں ریاستی حکومت کو 15 دن کا وقت دیا ہے اور کہا کہ جو لوگ مقام چھوڑ کر چلے گئے ہیں انہیں واپس لایا جائے ۔ سنگیت سوم نے سردھانا میں اپنے گھر سے کیرانہ تک ریلی کا آغاز کیا تھا اور ان کے ساتھ ہزاروں حامی بھی تھے تاہم انہیں شہر کی سرحد کے قریب ہی روک دیا گیا کیونکہ شہر میں حالات بہتر نہیں ہیں۔ میرٹھ ضلع کلکٹر پنکج یادو نے یہ بات بتائی ۔ سماجوادی پارٹی کے لیڈر اتل پرادھان کی قیادت میں نکالی گئی ایک اور ریلی کو بھی سردھانا سے کچھ فاصلے پر ہی روک دیا گیا تھا ۔ مسٹر یادو نے بتایا کہ احتیاطی اقدام کے طور پر پولیس اور پی اے سی کو کثیر تعداد میں متعین رکھا گیا ہے

اور دفعہ 144 کو لاگو کردیا گیا ہے ۔ کسی کو بھی اس صورتحال میں قانون کی خلاف ورزی کرنے کا موقع نہیں دیا جا رہا ہے ۔ شاملی کے ضلع کلکٹر سجیت کمار نے بتایا کہ امتناعی احکام سارے شاملی ضلع میں لاگو کردئے گئے ہیں جن میں کیرانا ٹاؤن بھی شامل ہے ۔ کسی بھی سیاسی لیڈر کے ساتھ کیرانہ تک کوئی ریلی یا مارچ منعقد کرنے کی اجازت نہیں دی جائیگی ۔ انہوں نے بتایا کہ کیرانہ کی سرحدات کو بند کردیا گیا ہے اور نیم فوجی دستوں کو متعین کردیا گیا ہے ۔ صورتحال پر قریبی نظر رکھی جا رہی ہے ۔ سنگیت سوم نے اپنی نربھئے ریلی کو امتناعی احکام نافذ کئے جانے کے بعد معطل کردیا ہے اور انہوں نے کہا کہ ہم پندرہ دن کا الٹی میٹم دے رہے ہیں کہ حکومت جو لوگ یہاں سے روانہ ہوئے ہیں انہیں واپس لائے یا پھر ہم سڑکوں پر اتر آئیں گے ۔ انہوں نے کہا کہ اگر ایسا نہیں کیا گیا تو وہ انتباہ دیتے ہیں کہ کوئی بھی طاقت بی جے پی ورکرس کو کیرانہ یا کہیں اور بھی جانے سے روک نہیں پائیگی ۔ انہوں نے کہا کہ وہ قانون کی پابندی کرنے والے ہیں اور چونکہ حکام نے یہاں امتناعی احکام نافذ کردئے ہیں اس لئے وہ اپنی ریلی کو معطل کر رہے ہیں۔ یو پی کے بی جے پی صدر کیشو پرساد موریہ نے بھی انہیں قانون کی پابندی کرنے کی ہدایت دی ہے ۔

TOPPOPULARRECENT