Wednesday , December 19 2018

شامی وزیر دفاع اسعد مصطفی مستعفی

’’میں ملک کی تباہی کا جھوٹا گواہ نہیں بننا چاہتا‘‘

’’میں ملک کی تباہی کا جھوٹا گواہ نہیں بننا چاہتا‘‘

دمشق ، 19 مئی (سیاست ڈاٹ کام) شام کے قائم مقام وزیر دفاع اسعد مصطفی یہ کہتے ہوئے اپنے عہدہ سے مستعفی ہو گئے ہیں کہ ’’وہ شام کی تباہی کے جھوٹے گواہ نہیں بننا چاہتے۔ شامی حکومت اپنے ہی شہریوں پر مظالم ڈھا کر تاریخ کا مجرم ترین ادارہ بن چکی ہے‘‘۔ انہوں نے کہا کہ وہ جیش الحر اور دوسرے ناموں سے باغی گروپوں کی تشکیل پر مزید پردہ پوشی نہیں کرسکتے۔ اسعد مصطفی نے بتایا کہ شامی وزارت دفاع کے پاس انقلابیوں کے مطالبات فوری طور پر پورا کرنے کے وسائل موجود نہیں۔ انہیں پورا کرنے کے تمام امکانات دم توڑ چکے ہیں۔ انہوں نے ملک میں جاری بحران کے باعث تمام فریقوں کو خبردار کیا کہ اگر انہوں نے اس موقع پر کوئی تاریخی غلطی کی تو اس کی مکمل ذمہ داری ان پر عائد ہو گی۔ بقول اسعد مصطفی بہت سے لوگ اس غلطی کا ارتکاب کر چکے ہیں جس کے باعث شام کا بحران گہرا ہوا۔ مستفعی وزیر دفاع نے شامی عوام کے دوستوں اور بھائیوں سے اپیل کی کہ وہ بچا کھچا ملک سنبھالنے میں ان کی بھرپور مدد کریں۔

TOPPOPULARRECENT