Saturday , June 23 2018
Home / دنیا / شام اور عر اق میں شکست کی صورت میں جہادی برطانیہ کیلئے خطرہ

شام اور عر اق میں شکست کی صورت میں جہادی برطانیہ کیلئے خطرہ

لندن ۔ 16 اگست ۔ ( سیاست ڈاٹ کام ) برطانوی ایجنسیوں نے خبردار کیا ہے کہ عراق اور شام میں آئی سس کی ناکامی کی صورت میں ان ممالک میں گئے ہوئے برطانوی جہادی تیزی کے ساتھ واپس آسکتے ہیں جس کے نتیجے میں برطانیہ میں بھی دہشت گردی کی کارروائیاں کی جاسکتی ہیں۔ سرکاری اعداد و شمار کے مطابق اس وقت شام میں 500 کے قریب برطانوی جہادی لڑائی میں مصرو

لندن ۔ 16 اگست ۔ ( سیاست ڈاٹ کام ) برطانوی ایجنسیوں نے خبردار کیا ہے کہ عراق اور شام میں آئی سس کی ناکامی کی صورت میں ان ممالک میں گئے ہوئے برطانوی جہادی تیزی کے ساتھ واپس آسکتے ہیں جس کے نتیجے میں برطانیہ میں بھی دہشت گردی کی کارروائیاں کی جاسکتی ہیں۔ سرکاری اعداد و شمار کے مطابق اس وقت شام میں 500 کے قریب برطانوی جہادی لڑائی میں مصروف ہیں جبکہ برطانیہ کی پارلیمنٹ کی انسداد دہشت گردی کمیٹی کے چئیرمین خالد محمود ایم پی کا کہنا ہے کہ شام میں دو ہزار برطانوی جہادی موجود ہیں۔ جبکہ باور کیا جاتا ہے کہ عراق میں بھی برطانوی جہادی لڑ رہے ہیں۔ اب امریکہ کی طرف سے آئی سس کے خلاف حملوں کی وجہ سے ہوسکتا ہے کہ انتہا پسندوں کو شام

اور عراق دونوں جگہوں پر شکست ہوجائے جس کے بعد وہاں موجود جہادی برطانیہ اور دوسرے یورپی ممالک میں واپس جانا شروع ہوجائیں گے۔ یورپ کے دوسرے ممالک سے بھی ہزاروں مسلمان نوجوان جہاد کے لئے گئے ہوئے ہیں۔ ان میں جہادی خواتین بھی موجود ہیں۔ سکاٹ لینڈ یارڈ کے سربراہ سربرنارڈ ہوگن ہاؤ نے خبردار کیا ہے کہ شام اور عراق میں جنگ میں ناکامی کی صورت میں برطانوی جہادی واپس آسکتے ہیں۔ ان کا کہنا ہے کہ بڑے پیمانے پر جہادیوں کی واپسی کے حوالے سے پولیس اپنی تیاریاں مکمل کررہی ہے۔ پولیس کا خیال ہے کہ جو 500 افراد شام میں جہاد کررہے ہیں ان میں سے نصف کے قریب کا تعلق لندن سے ہے۔ چنانچہ سکاٹ لینڈ یارڈ کو ان کی واپسی کے موقع پر انتہائی تیزی کے ساتھ کام کرنا ہوگا۔

TOPPOPULARRECENT