Monday , December 18 2017
Home / دنیا / شام میں برطانیہ کے فضائی حملے جاری

شام میں برطانیہ کے فضائی حملے جاری

تیل کے ذخائر نشانہ ، جرمن پارلیمنٹ بھی فوج بھیجنے کی حامی
لندن ؍ برلن۔ 5 ڈسمبر۔(سیاست ڈاٹ کام) برطانیہ نے پارلیمنٹ کی تائید کے بعد آج شام میں دوبارہ فضائی حملے شروع کردیئے اور پھر ایک بار دہشت گرد گروپس کے زیرقبضہ تیل کے ذخائر کو نشانہ بنایا گیا۔ برطانوی وزارت دفاع کے مطابق ٹورنیڈو GR4s کے ذریعہ آئی ایس کے نشانوں پر حملے کئے گئے ۔ بیان میں بتایا گیا کہ رمادی کے قریب آئی ایس کے ٹھکانوں کو نشانہ بنایا گیا ۔ ایک دہشت گرد نشانہ باز نے عراقی فوج پر فائرنگ شروع کردی تھی لیکن اُسے گائیڈڈ بم کے ذریعہ ہلاک کردیا گیا۔ سمجھا جاتا ہے کہ اس بار کئے گئے حملوں میں تیل کے ذخائر اصل نشانہ تھے اور اس کارروائی میں دو ٹورنیڈو کے علاوہ پہلی مرتبہ دو ٹائیفون طیارے استعمال کئے گئے ۔ اس دوران  جرمن پارلیمنٹ نے شام میں خود کو دولت اسلامیہ کہلانے والی شدت پسند تنظیم کے خلاف لڑنے والے امریکی اتحاد کی مدد کرنے کیلئے فوج بھیجنے کی منظوری دے دی ہے۔ دولت اسلامیہ کے خلاف جنگ میں فوجی مدد فراہم کرنے کے منصوبے کی حق میں 445 جبکہ اس کی مخالفت میں 146 ووٹ پڑے۔ جرمنی خطے میں جاسوسی کرنے والا ٹورناڈو ہوائی جہاز، ایک بحری جنگی جہاز اور 1200 فوجیوں کو بھیجے گا۔ جرمنی نے آئی ایس کے خلاف جنگ میں شامل ہونے کا فیصلہ پیرس میں 12 نومبر کو ہونے والے حملوں کے بعد فرانسیسی صدر فرانسو اولاند کی درخواست پر کیا تھا۔ جرمنی کے وزرا کے خیال میں جرمنی بھی اب دولت اسلامیہ کے نشانے پر ہے۔ واضح رہے کہ یہ فیصلہ ایک ایسے وقت میں سامنے آیا ہے جب برطانیہ نے بھی پارلیمنٹ کی منظوری کے بعد شام پر فضائی حملوں کا آغاز کر دیا ہے۔ یہ جرمنی کا کسی دوسرے ملک میں حالیہ سب سے بڑا فوجی آپریشن ہو گا۔

TOPPOPULARRECENT