Monday , January 22 2018
Home / عرب دنیا / شام میں دولت اسلامیہ کی ایندھن کی ناکہ بندی کا خطرہ

شام میں دولت اسلامیہ کی ایندھن کی ناکہ بندی کا خطرہ

بیروت۔21جون ( سیاست ڈاٹ کام ) بین الاقوامی طبی امدادی ادارہ نے آج انتباہ دیا کہ دولت اسلامیہ شمالی شام میں ایندھن کی ناکہ بندی کرسکتا ہے جس سے راحت رسانی کوششوں میں بڑے پیمانے پر رکاوٹ پیدا ہوگی ۔ دولت اسلامیہ کی ناکہ بندی کا اثر انسانی بنیادوں پر راحت رسانی سرگرمیوں پر بھی مرتب ہوگا ‘ جب کہ شام پہلے ہی چار سال سے زیادہ عرصہ سے تباہ ک

بیروت۔21جون ( سیاست ڈاٹ کام ) بین الاقوامی طبی امدادی ادارہ نے آج انتباہ دیا کہ دولت اسلامیہ شمالی شام میں ایندھن کی ناکہ بندی کرسکتا ہے جس سے راحت رسانی کوششوں میں بڑے پیمانے پر رکاوٹ پیدا ہوگی ۔ دولت اسلامیہ کی ناکہ بندی کا اثر انسانی بنیادوں پر راحت رسانی سرگرمیوں پر بھی مرتب ہوگا ‘ جب کہ شام پہلے ہی چار سال سے زیادہ عرصہ سے تباہ کن خانہ جنگی سے متاثر ہے ۔ ڈونیا ڈکہل منیجر برائے ماورا سرحد ڈاکٹرس کی تنظیم کے منیجر برائے شام ہیں ‘ انتباہ دیا کہ کئی دواخانے اور طبی تنظیمیں نمایاں طور پر اپنی سرگرمیوں میں کمی کرچکی ہیں کیونکہ جنریٹرس چلانے اور نقل و حرکت کیلئے ایندھن کی قلت ہے ۔ ڈکہل نے کہا کہ ایندھن کی کمی مختلف مسلح گروپ کی شمالی شام میں لڑائی کی وجہ سے مزید پیچیدہ مسئلہ بن گئی ہے ۔ دولت اسلامیہ اور القاعدہ سے ملحق انصرا محاذ کی سرگرمیوں کی وجہ سے یہ علاقہ بری طرح متاثر ہے ۔ دولت اسلامیہ کا تیل کے کنوؤں اور مشرقی شام میں تیل صاف کرنے کے کارخانوں پر قبضہ ہوچکا ہے اور وہ باقی علاقوں پر دباؤ ڈال رہے ہیں ‘ جہاں باغی گروپس صدر شام بشارالاسد کو اقتدار سے بیدخل کرنے کیلئے جنگ میں مصروف ہیں ۔ ایم ایس ایف نے کہا کہ ہما اور ادلیب کے طبی عہدیداروں نے مرکزی اور شمال مغربی شام میں مدد کی ہنگامی اپیل کی ہے ۔ 15اور 16جون سے دواخانوں میں ایندھن کی کمی پیدا ہوگئی ہے

اور مدد طلب کررہے ہیں ۔ اسی طرح کی اپیلیں حلب اور لتاکیا سے بھی کی گئی ہیں ۔ یہ بحرروم کے ساحل پر حکومت کے مستحکم گڑھ ہیں جو ہسپتال خطرے سے دوچار ہیں انہیں بند کیا جارہا ہے اور کئی شامی شہریوں کی زندگیاں اس سے بھی زیادہ خطرے سے دوچار ہیں ۔ انہوں نے کہا کہ ایندھن ‘ پینے کا پانی حاصل کرنے اور پمپ چلانے کیلئے ‘ نومولود بچوں کے انکیوبیٹرس کیلئے اور ایمبولنس گاڑیاں چلانے کیلئے بہت ضروری ہے ۔ ایم ایس ایف نے کچھ ایندھن سربراہ کرنا شروع کردیا ہے لیکن جو مدد وہ فراہم کررہے ہیں اس کا صرف مختصر مدتی اثر مرتب ہوگا ۔ انہوں نے کہا کہ اس لئے ہم شام کی خانہ جنگی کے تمام فریقین سے اپیل کرتے ہیں کہ ایندھن کی باقاعدہ سربراہیاں ملک گیر سطح پر خانہ جنگی کے دوران جاری رکھی جانی چاہیئے تاکہ عوامی ضروریات کی اور آبادی کی فوری ضروریات کی تکمیل ہوسکے ۔ اس تنظیم کے شام میں پانچ دواخانے ہیں اور یہ تنظیم 100سے زیادہ کلینکس کو راست طبی امداد فراہم کرتی ہیں اور صحت کے مراکز اور فیلڈ ہاسپٹلس استفادہ کرتے ہیں ۔

TOPPOPULARRECENT