Wednesday , December 13 2017
Home / عرب دنیا / شام میں فضائی حملے ،القاعدہ کے 22 شورش پسند ہلاک

شام میں فضائی حملے ،القاعدہ کے 22 شورش پسند ہلاک

بیروت ۔ 4 اپریل (سیاست ڈاٹ کام) شمالی شام میں القاعدہ کے ایک مبینہ ٹھکانے پر کئے گئے فضائی حملے میں تقریباً 22 دہشت گرد ہلاک ہوگئے جن میں القاعدہ سے وابستہ ایک سینئر ترجمان بھی شامل ہے۔ برطانیہ کے سیرین آبزرویٹری برائے انسانی حقوق کا کہنا ہیکہ شامی افواج یا روسی افواج سے تعلق رکھنے والے لڑاکا طیاروں نے جندالاقصیٰ نامی انتہاء پسند گروپ کے ہیڈکوارٹرس پر حملہ کیا۔ جندالاقصیٰ کے عسکریت پسند النصرہ فرنٹ کے ساتھ بھی لڑائیوں میں حصہ لیتے ہیں۔ النصرہ فرنٹ شام میں القاعدہ سے ملحقہ ایک دہشت گرد تنظیم ہے۔ دوسری طرف لبنان کی ملیشیا حزب اللہ سے تعلق رکھنے والے ایک میڈیا آؤٹ لیٹ کا کہنا ہیکہ فضائی حملوں میں النصرہ فرنٹ کے ترجمان رضوان ناموس ہلاک ہوگئے ہیں جو ابو فراس السوری کی حیثیت سے زیادہ مشہور ہیں۔ حملوں میں ان کے بیٹے کی ہلاکت کی بھی اطلاع ہے۔ یاد رہے کہ شام میں خانہ جنگی گذشتہ پانچ سال سے جاری ہے اور شامی افواج کے شانہ بشانہ لڑنے کیلئے حزب اللہ نے بھی اپنے ہزاروں جنگجوؤں کو روانہ کیا ہے۔ القاعدہ کا ایک ترجمان بھی ابوفراس الشوری جس کا حقیقی نام رضوان حمس ہے اتحادی فوج کے فضائی حملوں میں ہلاک ہوگیا۔ باغیوں او رسرکاری فوج کے درمیان 27 فبروری سے شام میں جنگ بندی نافذ ہے لیکن القاعدہ اور النصرہ محاذ پر اس کا نافذ نہیں ہے۔

TOPPOPULARRECENT