Thursday , November 23 2017
Home / دنیا / شام میں 10لاکھ افراد یرغمالیوں کی زندگی گزارنے پر مجبور : اقوام متحدہ

شام میں 10لاکھ افراد یرغمالیوں کی زندگی گزارنے پر مجبور : اقوام متحدہ

اقوام متحدہ، 22نومبر (سیاست ڈاٹ کام) اقوام متحدہ نے کہا ہے کہ شام میں تقریبا 10 لاکھ لوگ یرغمالیوں کی زندگی گزار رہے ہیں جو گذشتہ سال کے مقابلے میں دوگنی ہے ۔شام میں اقوام متحدہ کی ہنگامی امداد کنوینر اسٹیفن او برائن نے کہا ہے کہ اس ملک میں پھنسے ہوئے لوگوں کے اعداد و شمار گزشتہ چھ ماہ میں 486700 سے بڑھ کر 974080 ہو گئی ہے ۔ انہوں نے کہا کہ لوگوں کو الگ الگ رکھنے ، بھوکا، بمباری کے سائے میں، طبی اور انسانی امداد سے محروم رکھا گیا ہے تاکہ یہ لوگ یا تو بھاگ جائیں یا پھر خودسپرگی کر دیں۔او برائن نے اس کے لیے وہاں کی بشار الاسد حکومت کو ذمہ دار ٹھہراتے ہوئے کہا کہ ظلم کی سوچی سمجھی حکمت عملی خاص طور پر صدر بشار الاسد کی قیادت والی فوجیں استعمال کر رہی ہیں۔ محاصرے کے دائرے میں آنے والے نئے علاقوں میں باغیوں کے قبضے والے دمشق کے مضافاتی علاقے جوبار، ہزار الاسود اور خان الشیہ شامل ہیں۔ اس کے علاوہ دارالحکومت کے باہر مشرقی غوطہ کے کھیتی والے علاقے کا بھی محاصرہ ہو گیا ہے ۔او برائن نے اقوام متحدہ کی سلامتی کونسل کو صورت حال سے آگاہ کرتے ہوئے کہاجن لوگوں نے محاصرہ کر رکھا ہے وہ یہ اچھی طرح سے جانتے ہیں کونسل ان لوگوں کو روکنے کے لئے اقدامات کرنے کی یا تو اپنے عزم کو نافذ کرنے سے قاصر ہے یا پھر ایسا کرنا ہی نہیں چاہتی ہے ۔

ہٹلر سفاک تھا یا اسرائیل ؟
یہ سوال غیرمناسب : اردغان
استنبول ۔ 22 نومبر (سیاست ڈاٹ کام) صدر ترکی رجب طیب اردغان نے آج ایک اہم ریمارک کرتے ہوئے کہا کہ یہ پوچھنا انتہائی غیرمناسب ہیکہ ہٹلر اور اسرائیل دونوں کے درمیان کون زیادہ سفاک اور بے ر حم ہے۔ اس ریمارک سے ترکی ۔ اسرائیل کے حال ہی میں بحال ہوئے سفارتی تعلقات ایک بار پھر اثرانداز ہوسکتے ہیں کیونکہ صرف ایک ہفتہ قبل ہی ترکی نے اپنے وزیراعظم کے خارجی پالیسی مشیر کو اسرائیل میں ترکی کا نیا سفیر مقرر کیا ہے جو چھ سال تک منقطع رہنے والے سفارتی تعلقات کو بحال کرنے کی جانب ایک قدم تھا۔ کل رات اسرائیلی ٹیلیویژن کو ایک انٹرویو دیتے ہوئے انہوں نے کہا کہ ہٹلر نے جو کچھ کیا، وہ (اردغان) اسے تسلیم نہیں کرتے۔ جب سوال سینکڑوں افراد کی ہلاکت کا ہو تو یہ پوچھنا انتہائی غیرمناسب اور ناعاقبت اندیشی ہیکہ کون زیادہ سفاک اور بے رحم ہے۔

TOPPOPULARRECENT