Tuesday , December 12 2017
Home / دنیا / شام کے شہر حلب میں خوفناک جنگ ‘ 35ہلاک

شام کے شہر حلب میں خوفناک جنگ ‘ 35ہلاک

16حکومت حامی اور 19 جہادی ہلاک‘ دوبارہ قبضہ کرنے باغیوں کی کوشش
بیروت۔10اپریل ( سیاست ڈاٹ کام ) شام کے دوسرے بڑے شہر حلب میں کم از کم 16 حکومت حامی جنگجو اور 19 القاعدہ کے ارکان جن کا تعلق باغی گروپس سے ہے ‘گذشتہ 24گھنٹے کی خوفناک جنگ میںہلاک ہوگئے ۔ شامی رصدگاہ برائے انسانی حقوق نے کہاکہ آدھی رات کے بعد خوفناک جنگ صوبہ حلب کے جنوب میں کئی محاذوں پر شروع ہوگئی ۔ لبنان کی شیعہ حزب اللہ کے جنگجو سرکاری فوج اور دیگر حکومت کے وفادار نیم فوجی جنگجوؤں کے ساتھ جنگ کررہے ہیں ۔ نگران کار گروپ کے بموجب شل باری اور لڑائی میں گذشتہ 24گھنٹے کے دوران 19حکومت حامی جنگجو بھی ہلاک ہوگئے ۔ جب کہ ایک جہادی نے خود کو دھماکہ سے اڑا لیا ۔ امریکہ اور روس کی ثالثی سے صلح کا معاہدہ طئے پایا تھا لیکن شام کی جنگ میں ایک دوسرے کے قریب جہادیوں کے خلاف جنگ کو اس کے دائرہ کار میں شامل نہیں کرتے ۔ شام کے بیشتر علاقہ میں 27فبروری کا جنگ بندی معاہدہ برقرار ہے ۔

بعض علاقوں میں النصرۃ محاذ اپنے حلیف باغی گروپس کے ساتھ جنگ بندی معاہدہ کی اکثر خلاف ورزی کرتے ہوئے حکومت حامی فوجوں سے جنگ میں مصروف ہیں ‘ خاص طور پر حلب کے مضافاتی علاقوں میں جنگ بندی ناکام ہوچکی ہے اور خوفناک جنگ جاری ہے ۔ النصرۃ محاذ کے ایک شعبہ احرارالشام اور اُن کے حلیف جارحانہ پیشرفت کررہے ہیں تاکہ حلب کے مضافاتی علاقوں پر دوبارہ قبضہ کرسکیں ۔ جنگ بندی کے نافذ ہونے کے بعد بھی یہ جنگ جاری ہے ۔ شہریوں کی ہلاکتوں میں کمی آئی ہے کیونکہ فضائی دھاؤں میں بیرل بموں سے حملے حکومت کی جانب سے رہائشی علاقوں پر بند ہوچکے ہیں ۔ محاذ پر تشددکسی طرح بھی روکا نہیں جاسکا ۔ علاوہ ازیں باغیوں نے وقفہ وقفہ سے شیخ مقصود کے علاقہ پر جہاں کُرد آبادی اکثریت میں ہیں حملے کئے جس کی وجہ سے جنگ بندی کے بعد کئی شہری ہلاک ہوگئے ۔ شام میں خانہ جنگی مارچ 2011ء سے جاری ہے جب کہ حکومت مخالف احتجاجی مظاہروں کا آغاز ہوا تھا جو بعد میں فوجی محاذ پر جنگ کی شکل اختیار کرگئے جس میں کئی علاقائی ممالک ملوث ہوگئے ہیں ۔

TOPPOPULARRECENT