شام کے موضوع پر روس میں چوٹی کانفرنس

سوچی (روس) ۔ 22 نومبر (سیاست ڈاٹ کام) صدر روس ولادیمیر پوٹن نے آج شام کی 6 سالہ خانہ جنگی کے تمام فریقین سے ایک دوسرے کو رعایتیں دینے اور باہم مفاہمت کرنے کا رویہ اختیار کرنا ہوگا۔ بحراسود کے سیاحتی مقام سوچی میں شام امن مذاکرات کے دوران صدر روس نے ترکی اور ایران کے قائدین کے ساتھ تبادلہ خیال کیا اور کہا کہ شام میں دولت اسلامیہ اپنی شکست کے قریب ہے اور شام میں خانہ جنگی کے خاتمہ کیلئے تمام فریقین کو ایک دوسرے کو رعایتیں دینے اور ان سے مفاہمت کرنے کا رویہ اختیار کرنے کی ضرورت ہے۔ انہوں نے خاص طور پر کہا کہ شام کے صدر بشارالاسد کو بھی اس بحران کی یکسوئی کیلئے یہی طریقہ اختیار کرنا ہوگا۔ قبل ازیں شام کے موضوع پر جنیوا میں امن مذاکرات کیلئے ایک متحدہ محاذ قائم کرنے سے تمام فریقین نے اتفاق کیا تھا۔

جارجیا میں ’’دہشت گرد‘‘ دھاوے کے دوران فائرنگ اور دھماکے
تبلیسی ۔ 22 نومبر (سیاست ڈاٹ کام) بم دھماکے اور فائرنگ کی آوازیں جارجیا کے دارالحکومت تبلیسی میں آج سنائی دیں جبکہ فوج نے دہشت گرد شعبوں کے خفیہ ٹھکانوں پر جو تبلیسی کے مضافات میں ایک رہائشی عمارت میں قائم تھے، دھاوا کیا۔ دہشت گرد گروپ کے کئی ارکان نے ہتھیار ڈالنے سے انکار کرتے ہوئے خودکار رائفلوں سے فائرنگ کا آغاز کردیا اور انسداد دہشت گردی شعبہ کے عملہ پر دستی بم برسائے۔ گولیوں سے زخمی ایک فوجی دواخانہ میں شریک کردیا گیا۔ ٹیلیویژن پر بیان دیتے ہوئے فوج کی خاتون ترجمان نینو جیورگوبیانی نے کہا کہ ایک مشتبہ شخص گرفتار کرلیاگیا اور خصوصی کارروائی کے دوران دیگر کئی کی گرفتاری کی کارروائی جاری ہے۔

TOPPOPULARRECENT