Wednesday , December 12 2018

شاہ اور مہاراشٹر حکومت کا ایک ہی وکیل مفادات کا ٹکراؤ : کانگریس

نئی دہلی۔ 23جنوری (سیاست ڈاٹ کام) کانگریس نے سہراب الدین فرضی انکاؤنٹر معاملے میں بی جے پی صدر امیت شاہ کے وکیل کے اب سپریم کورٹ میں جج لویا کی موت کے معاملے میں مہاراشٹر حکومت کا موقف رکھنے پر سوال اٹھاتے ہوئے کہا ہے کہ کیا یہ ‘مفادات کا ٹکراؤ’ نہیں ہے ۔ کانگریس کے مواصلات محکمہ کے سربراہ رندیپ سنگھ سرجے والا نے آج ٹوئیٹ کر کے کہا، ‘ایک وکیل نے پہلے ایک معاملے میں مسٹر امت شاہ کا موقف رکھا اور اب وہ جج لویا معاملے میں مہاراشٹر کی بی جے پی کی حکومت کی جانب سے سپریم کورٹ میں پیش ہو رہا ہے کیا یہ ‘مفادات کا ٹکراؤ ‘ نہیں ہے ؟ انہوں نے لکھا کیا سپریم کورٹ یہ بات سنے گا۔قابل ذکر ہے کہ مسٹر شاہ کو سہراب الدین فرضی انکاؤنٹر کیس میں جیل جانا پڑا تھا لیکن بعد میں عدالت نے انہیں بری کر دیا تھا۔ سہراب الدین معاملے کی سماعت مرکزی تفتیشی بیورو کی خصوصی عدالت کر رہی تھی اور جسٹس بی ایچ لویا اس کے جج تھے لیکن ان کی اچانک موت ہو گئی تھی۔ اب ان کی موت کی جانچ کرانے کی مانگ کو لے کر سپریم کورٹ میں معاملہ چل رہا ہے ۔

نیتاجی ہمارے قومی ہیرو ہیں : ممتا بنرجی
کلکتہ 23جنوری(یو این آئی)مغربی بنگال کی وزیر اعلیٰ ممتا بنرجی نیتاجی سبھاش چندر بوس کی 121ویں یوم پیدائش پر خراج عقیدت پیش کرتے ہوئے ایک بار پھر مرکزی حکومت سے مطالبہ کیا کہ نیتاجی کے یوم پیدائش کوقومی تعطیل کا اعلان کیا جائے ۔اس سے قبل ممتا بنرجی نے وزیر اعظم مودی کو خط لکھ کر مشورہ دیا تھا کہ سوامی ویکانند اور نیتاجی سبھاش چندر بوس کے یوم پیدائش پرقومی تعطیل کا اعلان کیا جائے ۔وزیر اعلیٰ نے ٹوئیٹ کرتے ہوئے لکھا تھا کہ ہم نے وزیر اعظم کو خط لکھا ہے کہ 12جنوری کو سوامی ویکانند اور 23جنوری کو نیتاجی سبھاش چندر بوس کے یوم پیدائش کو قومی تعطیل قرار دیا جائے ۔

TOPPOPULARRECENT