Tuesday , December 11 2018

شتروگھن سنہا کی ممبئی رہائش کے غیرقانونی حصہ کا انہدام

بی ایم سی کی انہدامی کارروائی میں بی جے پی ایم پی کا تعاون
ممبئی 9 جنوری (سیاست ڈاٹ کام) بی جے پی کے رکن پارلیمنٹ شتروگھن سنہا کی جوہر میں واقع آٹھ منزلہ رہائشی عمارت کی غیر قانونی توسیعی اور تعمیرات کو بلدی حکام نے آج منہدم کردیا۔ بریھن ممبئی میونسپل کارپوریشن (بی ایم سی) کو شتروگھن سنہا کی رہائش ’رامائن‘ میں حالیہ چند ماہ کے دوران غیر قانونی توسیع کی شکایات موصول ہوئی تھیں جس کے بعد اُنھیں نوٹس بھی جاری کی گئی تھی۔ بی ایم سی کے ایک عہدیدار نے کہاکہ ’’سنہا اگرچہ ہماری نوٹسوں کا جواب دے چکے ہیں۔ جس کے باوجود ہمیں خامیوں کا پتہ چلا ہے اور تعمیراتی ضابطوں کی خلاف ورزی کرتے ہوئے توسیع کی گئی ہے۔ چنانچہ گزشتہ ہفتہ ہم نے اُنھیں مزید ایک نوٹس دی تھی اور غیر قانونی تعمیرات کو گزشتہ روز منہدم کردیا‘‘۔ بہار کے رکن لوک سبھا شتروگھن سنہا مختلف مسائل پر اپنی پارٹی (بی جے پی) کے موقف سے جداگانہ اور متضاد موقف رکھتے ہیں۔ بلدی عہدیدار نے کہاکہ سنہا نے اپنے گھر میں کی گئی غیر قانونی تعمیرات کے انہدام میں حکام سے تعاون کیا جہاں وہ اپنے خاندان کے ساتھ رہتے ہیں۔ انھوں نے چند سال قبل اپنے بنگلہ کو دوبارہ فروغ دیتے ہوئے آٹھ منزلہ عمارت تعمیر کروایا تھا۔ ایک بلدی عہدیدار کے مطابق اس گھر میں توسیع و ترمیم کے ساتھ دو ٹائیلٹس، ورانڈے سے متصلہ سائبان، چھت پر تعمیر شدہ ایک بیت الخلاء، ایک دفتر اور ایک پوجا روم بنائے گئے تھے جنھیں منہدم کردیا گیا کیوں کہ وہ منظورہ تعمیراتی نقشہ میں شامل نہیں تھے۔ بلدی عہدیدار نے کہاکہ مقررہ قواعد کے مطابق سنہا کے خلاف پولیس میں ایک شکایت بھی درج کروائی گئی ہے۔

TOPPOPULARRECENT