Thursday , December 14 2017
Home / جرائم و حادثات / شرابیوں کیلئے امریکی نظریہ متعارف کرنے پر غور

شرابیوں کیلئے امریکی نظریہ متعارف کرنے پر غور

تمام کی شراب نوشی ایک کو چھوٹ پر عمل، مہیش بھگوت
حیدرآباد 24 جولائی (سیاست نیوز) کمیونٹی پولیسنگ اور جدید آلات کے استعمال میں بین الاقوامی شہروں کے طرز پر اقدامات کرنے والی سائبرآباد پولیس نے ایک اور قدم آگے بڑھایا ہے۔ نشہ کی حالت میں گاڑی چلانے والوں کے خلاف جرمانے، کونسلنگ اور سزاؤں جیسے اقدامات کے بعد اب ’’ڈزیگنیٹیڈ ڈرائیو آف ڈے‘‘ جیسی انوکھی پالیسی اپنانے کا فیصلہ کیا ہے۔ گزشتہ روز گچی باؤلی انڈور اسٹیڈیم میں شرکت کے بعد پیدا شدہ نتائج سے کمشنر ایسٹ مسٹر بھگوت نے یہ فیصلہ کیا۔ اب شرابیوں کو پابند کرنے کے بجائے سائبرآباد پولیس انھیں ترغیب دے گی کہ وہ خوب نشہ کریں لیکن ایک ساتھی کو چھوٹ دیں۔ گزشتہ روز کے اجلاس میں شرکت سے واپسی کے دوران تقریباً 30 افراد کے خلاف مقدمہ درج کیا گیا تھا۔ جو مخالف نشہ ڈرائیونگ اجلاس سے واپس ہورہے تھے۔ اس طرح کے اجلاسوں میں شرکت، کونسلنگ اور سزاؤں کے بعد بھی مقدمات میں اضافہ پر کمشنر نے اپنا ردعمل ظاہر کیا اور کہاکہ شرابیوں کو روکنے کے لئے انھیں سزا نہیں ترغیب دینی چاہئے۔ انھوں نے امریکی نظریہ پر عمل کرنے کا فیصلہ کیا جہاں نائیٹ کلب پارٹی میں شرکت کرنے والے افراد اپنے گروپ کے ممبر کو پابند کرتے ہیں کہ وہ نشہ نہ کرے اور تمام ساتھی اپنی مرضی کے مطابق نشہ کرتے ہیں اور جو شخص اس دن نشہ نہیں کرتا وہ ان تمام کو اپنی منزل تک پہونچاتا ہے اور اس گروپ کے اراکین کی ایک کے بعد ایک ذمہ داری ہوتی ہے۔ کمشنر ایٹ بھگوت کا کہنا ہے کہ اس نظریہ سے حادثات کی روک تھام اور اموات میں کمی واقع ہوگی۔ اس امریکی نظریہ ’’ڈزیگنیٹیڈ ڈرائیو آف ڈے‘‘ کو امکان ہے کہ سائبرآباد میں بہت جلد عمل میں لایا جائے گا۔

TOPPOPULARRECENT