Sunday , November 19 2017
Home / عرب دنیا / شراب کی دکانات مہربند کرنے کا حکمنامہ کالعدم

شراب کی دکانات مہربند کرنے کا حکمنامہ کالعدم

اسلام آباد ۔ 20 مارچ (سیاست ڈاٹ کام) پاکستان کی سپریم کورٹ نے سندھ ہائیکورٹ کے اس حکمنامہ کو کالعدم قرار دیا جس کے تحت شراب فروخت کرنے والی 120 دکانات کو مہربند کرنے کا حکم جاری کیا گیا تھا کیونکہ ان پر الزام تھاکہ وہ صوبہ ہند شراب کی غیرقانونی فروخت میں ملوث تھیں۔ جسٹس اعجاز افضل اور جسٹس مظہرعالم پر مشتمل دو رکنی بنچ نے شراب کی دکانات کے مالکان کی جانب سے داخل کردہ درخواست کو قبول کرلیا جہاں ان کے وکلاء نے استدلال پیش کیا تھا کہ شراب فروخت کرنے والی تمام دکانات کو لائسنس جاری کئے گئے تھے اور وہ حکومت نہ صرف ٹیکس ادا کرتے ہیں بلکہ قانون کے دائرہ کار میں رہتے ہوئے اپنا کاروبار چلاتے ہیں۔ بنچ نے یہ بھی کہا کہ شراب کی دکانات کے مالکان کی عرضداشت کی سماعت اندرون تین ہفتہ کی جائے گی۔ جسٹس افضل نے خصوصی طور پر کہا کہ پاکستان میں شراب کی فروخت پر 1979ء سے ہی امتناع عائد ہے۔ تاہم خلاف ورزی کرنے والا مستوجب سزاء ہوگا۔البتہ قانون کے مطابق جن دکانا ت کو لائسنس جاری کئے گئے ہیں انہیں شراب کی فروخت سے روکا نہیں جاسکتا۔

TOPPOPULARRECENT