Friday , September 21 2018
Home / سیاسیات / شردھا اسکام :ترنمول کانگریس ارکان کا پارلیمنٹ میں احتجاج

شردھا اسکام :ترنمول کانگریس ارکان کا پارلیمنٹ میں احتجاج

نئی دہلی 15 ڈسمبر (سیاست ڈاٹ کام ) ترنمول کانگریس ارکان نے آج شردھا اسکام میں حکومت کی جانب سے سی بی آئی کے مبینہ طور پر بیجا استعمال کا مسئلہ اٹھایا جس پر حکومت نے شدید ردعمل کا اظہار کیا ۔ آج جیسے ہی لوک سبھا کی کارروائی شروع ہوئی ترنمول کانگریس ارکان ایوان کے وسط میں پہنچ گئے اور سی بی آئی کے بیجا استعمال کا الزام عائد کرتے ہوئے حکوم

نئی دہلی 15 ڈسمبر (سیاست ڈاٹ کام ) ترنمول کانگریس ارکان نے آج شردھا اسکام میں حکومت کی جانب سے سی بی آئی کے مبینہ طور پر بیجا استعمال کا مسئلہ اٹھایا جس پر حکومت نے شدید ردعمل کا اظہار کیا ۔ آج جیسے ہی لوک سبھا کی کارروائی شروع ہوئی ترنمول کانگریس ارکان ایوان کے وسط میں پہنچ گئے اور سی بی آئی کے بیجا استعمال کا الزام عائد کرتے ہوئے حکومت کے خلاف نعرے لگانے لگے ۔ انہوں نے ایک سیاسی جماعت کے صدر کا حوالہ دیتے ہوئے کہا کہ وہ ترنمول قائدین کو سی بی آئی کا نشانہ بنانے کے ذمہ دار ہیں۔ ترنمول کانگریس ارکان نے کہا کہ جب بی جے پی اپوزیشن میں تھی تب وہ سی بی آئی کو ’’کانگریس بیورو آف انوسٹیگیشن‘‘ قرار دیا کرتی تھی۔ انہو ںنے کہا کہ سپریم کورٹ نے سی بی آئی کو ’’بند پنجرے کا طوطا‘‘ سے تعبیر کیا اور تحقیقاتی ایجنسی کے سابق سربراہ کی 2G مقدمہ میں سرزنش بھی کی ہے۔ ترنمول کانگریس کے رکن ساوگتا رائے نے کہا کہ سی بی آئی کو مزید وزیر اعظم کے کنٹرول میں نہیں ہونا چاہئے اس کا کنٹرول انسداد کرپشن نگرانکار ادارے لوک پال کے حوالے کیا جانا چاہئے ۔ ترنمول کانگریس ارکان نے اس وقت اپنی نشستوں پرواپس آنے سے اتفاق کیا جب وزیر پارلیمانی امور ایم وینکیا نائیڈو بیان دینے کیلئے اٹھے ۔ انہوں نے کہا کہ موجودہ حکومت پیشرو یو پی اے حکومت کی طرح سی بی آئی کے بیجا استعمال پر یقین نہیں رکھتی۔ انہوں نے ترنمول کانگریس پر تنقید کرتے ہوئے کہا کہ وہ اُن لوگوں کو بچانے کی کوشش نہ کریں جو داغدار ہیں ورنہ خود ان کی امیج خراب ہوگی۔ انہوں نے بی جے پی صدر کا حوالہ دینے پر بھی شدید اعتراض کیا ۔ بی جے پی ارکان کے ساتھ لفظی تکرار کے بعد ترنمول کانگریس کے ارکان نے ایوان سے واک آوٹ کردیا ۔ جب ترنمول کانگریس ارکان ایوان سے جارہے تھے ان میں ایک رکن سلطان احمد پلے کارڈ تھامے ہوئے تھے جس میں سہارا گروپ سربراہ سبراتا رائے کی وزیر اعظم نریندر مودی سے مصافحہ کی تصویر تھی ۔ترنمول کانگریس ارکان نے مغربی بنگال کے وزیر مدن مترا کی گرفتاری کے خلاف سیاہ چادر اوڑھے پارلیمنٹ کے باہر بھی احتجاجی مظاہرہ کیا ۔ وہ پلے کارڈس تھامے ہوئے نعرے لگا رہے تھے کہ وزیر اعظم ،امیت شاہ ،بنگال غصہ میں ہے۔ پارٹی ارکان نے سی بی آئی کے بیجا استعمال کا الزام عائد کیا اور کہا کہ وہ پارلیمنٹ کے دونوں ایوان میں یہ مسئلہ اٹھاتے رہیں گے ۔ راجیہ سبھا میں بھی ترنمول کانگریس کی ہنگامہ آرائی کے بعد وزیر فینانس ارون جیٹلی نے کہا کہ سی بی آئی آزادانہ طور پر کام کررہی ہے ۔

TOPPOPULARRECENT