Friday , November 17 2017
Home / سیاسیات / شردیادو کے 21 حامی جے ڈی (یو) سے معطل

شردیادو کے 21 حامی جے ڈی (یو) سے معطل

بی جے پی سے نتیش کمار کی مفاہمت کی مخالفت پر کارروائی
پٹنہ ۔ 14 اگست (سیاست ڈاٹ کام) جنتادل (یونائیٹیڈ) نے آج اپنے ان 21 قائدین کو مبینہ مخالف پارٹی سرگرمیوں پر معطل کردیا جو اس کے سینئر لیڈر شرد یادو کے وفادار سمجھے جاتے ہیں۔ انہوں نے بی جے پی سے مفاہمت کرنے سے متعلق نتیش کمار کے فیصلے کی مخالفت کی تھی۔ بہار جے ڈی (یو) کے صدر بسیتا نارائن سنگھ نے بشمول سابق وزیر رمائی رام، سابق رکن پارلیمنٹ ارجن رائے، سابق رکن اسمبلی راج کشور سنہا اور سابق رکن قانون ساز کونسل وجئے رما 21 قائدین کی ابتدائی رکنیت کو معطل کردیا۔ جے ڈی (یو) کے ریاستی جنرل سکریٹری انیل کمار نے ایک بیان میں یہ اطلاع دیتے ہوئے مزید کہا کہ ان کے علاوہ چند ضلعی سطح کے عہدیداروں کو بھی مخالف پارٹی سرگرمیوں میں ملوث ہونے کے الزام کے تحت معطل کردیا گیا ہے۔ رامائی رام اور ارجن رائے ان اہم قائدین میں شامل ہیں جنہوں نے شردیادو کی تین روزہ ’’سمواد یاترا‘‘ میں حصہ لیا تھا۔ یہ یاترا گذشتہ روز ختم ہوئی۔ شردیادو نے آر جے ڈی اور کانگریس کے ساتھ عظیم اتحاد سے جے ڈی (یو) کی علحدگی اور بی جے پی سے مفاہمت کیلئے نتیش کمار کے فیصلے کو 11 کروڑ عوام کی طرف سے دیئے گئے انتخابی فیصلے سے دھوکہ دہی قرار دیا تھا جس کے بعد انہیں جے ڈی (یو) پارلیمانی پارٹی کے لیڈر کے عہدہ سے برطرف کردیا گیا تھا۔ عوام سے راست رابطہ کیلئے شرد یادو کی ’’سمواد یاترا‘‘ سے جے ڈی (یو) کی بے تعلقی کے باوجود اس کے 21 سرکردہ قائدین اور چند ضلعی یونٹ کے عہدیداروں نے شرکت کی تھی۔ جے ڈی (یو) کے لیڈر نتیش کمار نے 19 اگست کو اپنی پارٹی کی قومی عاملہ کا اجلاس طلب کیا ہے جس میں توقع ہیکہ شرد یادو کے مقدر کا فیصلہ کیا جائے گا۔

 

Top Stories

TOPPOPULARRECENT