Thursday , November 23 2017
Home / مذہبی خبریں / شریعت اسلامی ہماری زندگی کی روح

شریعت اسلامی ہماری زندگی کی روح

ورنگل میں خواتین و طالبات کی کانفرنس، 10ہزار دستخطیں
حیدرآباد۔/18اکٹوبر، ( راست ) متحدہ تحفظ شریعت کمیٹی برائے خواتین کی جانب سے خواتین و طالبات کیلئے ریاست تلنگانہ کے ضلع ورنگل میں ایک اہم عنوان ’’ تحفظ شریعت اور اصلاح معاشرہ کا نفرنس ‘‘ آج نندانا گارڈن فنکشن ہا ، ہنمکنڈہ ورنگل میں منعقد ہوئی۔ کانفرنس کا آغاز محترمہ کنیز سرتاج الوریٰ کی قرأت کلام پاک سے ہوا۔ محترمہ نصرت جہاں رکن اصلاح معاشرہ کمیٹی ورنگل نے خطبہ استقبالیہ دیا۔ انہوں نے کہا کہ شریعت اسلامی ہماری زندگی کی روح ہے۔ اس روح کو ہم سے جدا کرنے کی کوشش کی جائے گی تو ہماری زندگی بے فیض ہوجائے گی۔ ہمیں ہندوستان میں اپنی شریعت کے ساتھ ہی زندگی گذارنی ہے اور جو بھی قانون لانے کی بات کی جارہی ہے اس کی ہم سخت مذمت کرتے ہیں اور آخر دم تک شریعت اسلامی کے تحفظ کیلئے جدوجہد کریں گے۔ محترمہ امتہ الوجیھا رکن جماعت اسلامی ہند ورنگل نے درس قرآن پیش کیا۔ انہوں نے اپنے درس قرآن پر احکام طلاق پر قرآنی آیتوں کے ذریعہ تفصیلی روشنی ڈالی۔ محترمہ روحی خاں رکن عاملہ متحدہ تحفظ شریعت کمیٹی حیدرآباد نے ’ مسلم خواتین کی اہمیت اور اس کی ذمہ داریاں ‘ عنوان پر مخاطب کرتے ہوئے کہا کہ اسلام آنے کے بعد عورتوں کا مقام و مرتبہ اتنا بلند اور اعلیٰ ہوگیا کہ ماں کے قدموں کے نیچے جنت کہہ دیا گیا۔ بہن ، بیوی اور بیٹی کی نگہداشت و پرورش کو باعث اجر و ثواب قرار دیا گیا۔ پروفیسر جمیل النساء رکن آل انڈیا مسلم پرسنل لاء بورڈ نے خواتین کو مخاطب کرتے ہوئے تحفظ شریعت کانفرنس میں کہا کہ تین طلاق کا جو مسئلہ اٹھایا جارہا  ہے وہ ہماری شریعت میں راست مداخلت کی کوشش ہے۔ حکومت کی جانب سے یہ بتایا جارہا ہے کہ مسلم عورت کتنی مظلوم ہے اور مسلم قوانین بہت ظالم ہیں مسلم عورت کو اس سے راحت دلانا بہت ضروری ہے، یہ سب دراصل جھوٹا پروپگنڈہ ہے۔ حکومت کی یہ کوشش ہے کہ اس ملک کو ہندوراشٹر بنادے اور مسلمانوں کے تشخص کو ہندوستان سے مٹادے۔ ہم مسلمان خواتین حکومت کے ان ناپاک عزائم کو کبھی کامیاب نہیں ہونے دیں گے۔ محترمہ طلحہ جبین رکن متحدہ تحفظ شریعت کمیٹی حیدرآباد، ڈاکٹر اسماء زہرہ رکن عاملہ آل انڈیا مسلم پرسنل لاء بورڈ، محترمہ رحیم النساء اونرنندانا گارڈن فنکشن ہال ورنگل، کنوینر کانفرنس محترمہ افضل سلطانہ ، محترمہ عصمت فرزانہ رکن اصلاح معاشر کمیٹی و صدر استقبالیہ کمیٹی ورنگل نے بھی خطاب کیا۔ کنوینر محترمہ افضل سلطانہ نے آخر میں سب کا شکریہ ادا کیا اور محترمہ فرزانہ نے دعا کروائی۔ نظامت کے فرائض محترمہ نصرت جہاں رکن اصلاح معاشرہ کمیٹی ورنگل نے انجام دیئے۔

جامع مسجد محی الدین النساء میں
آج اجتماع
حیدرآباد ۔ 18 ۔ اکٹوبر : ( راست ) : جامع مسجد محی الدین النساء ملک پیٹ میں نورانی اجتماع سیدنا امام اعلی زین العابدینؓ 20 اکٹوبر بعد عشاء مولانا غلام خواجہ سیف اللہ سلمان سہروردی مخاطب کریں گے ۔۔

سواری علم شہزادی سکینہ
حیدرآباد ۔ 18 ۔ اکٹوبر : ( راست ) : ماتمی جلوس سواری علم شہزادی سکینہ بنت حسین 19 محرم جمعہ بعدمجلس 11 بجے شب دیوان دیوڑھی سے برآمد ہوگی ۔ سواری علم بادشاہی عاشور خانہ مدینہ بلڈنگ عاشور خانہ نعل مبارک پتھر گٹی گلزار حوض قدم رسول اعتبار چوک منڈی میر عالم پرانی حویلی سے ہوتے ہوئے براہ چھتہ بازار بارگاہ وقت فجر واپس ہوگی ۔۔

 

اعراس شریف
حیدرآباد ۔ 18 ۔ اکٹوبر : ( راست ) : حضرت پیر حاجی غلام احمد شاہ رکن نقشبندیؒ اور پیر نقشبندی حضرت غلام یحییٰ پاشاہ نقشبندیؒ کا عرس شریف زیر سرپرستی حضرت پیر تحسین شاہ ثانی نقشبندی 19 اکٹوبر خانقاہ نقشبندیہ مسجد الہی پالم روڈ کاماٹی پورہ دودھ باولی مقرر ہے ۔ بعد نماز عصر ختم قرآن مجید بعد نماز حضرت سجادہ نشین مولانا الحاج غلام محمد غوث پاشاہ نقشبندی مراسم صندل مالی انجام دیں گے ۔ حضرت نقشبند وطن کی کی تالیف بہ ارشادات حضرت مسکین شاہ نقشبندی خلوت درانجمن کی رسم اجراء سجادہ نشین بارگاہ حضرت نقشبند دکنؒ مولانا سید شاہ محمد خضر نقشبندی کے ہاتھوں عمل میں آئے گی ۔۔
٭٭    حضرت محمد اسمعیل شاہ قبلہؒ مجذوب و سالک المعروف بہ حضرت کملی والے شاہ صاحب قبلہؒ کا عرس شریف محلہ الاوہ بی بی بیرون دبیر پورہ میں 20 محرم کو بعد نماز عصر قصیدہ بردہ شریف جلوس صندل بعد نماز مغرب صندل مالی چادر گل فاتحہ سلام و دعا ہوگی ۔۔
٭٭    حضرت میر بختیار علی شاہ ابوالعلائی واقع ریاست نگر میں 17 اور 18 محرم مقرر ہے ۔ پروگرام کے مطابق 19 اکٹوبر کو بعد مغرب غسل شریف صندل مالی 20 اکٹوبر کو 9 تا 10 بجے دن تلاوت کلام پاک 10 تا 2 بجے دن محفل سماع ہوگی ۔ عصر تا مغرب محفل درود شریف چراغاں ہونگے ۔۔
٭٭    عرس حضرت غلام محمد علی خاں قبلہ موسی خیل ابوالعلائی منو میاں قبلہؒ ریاست نگر میں 17 اور 18 محرم کو مقرر ہے ۔ 17 محرم بعد عشاء غسل شریف صندل مالی 18 محرم 9 تا 10 بجے تلاوت کلام پاک 10 تا 2 بجے دن محفل سماع عصر تا مغرب محفل درود شریف مقرر ہے ۔۔
٭٭    عرس شریف حضرت سید شمس الدین شاہ قادری اعجازی چٹگوپہ شریف تعلقہ ہمناآباد میں 20 محرم صندل شریف سے آغاز ہوگا ۔۔

 

محفل درس قرآن
حیدرآباد ۔ 18 ۔ اکٹوبر : ( راست ) : قرآن و سیرت سوسائٹی کے زیر اہتمام ہفتہ واری محفل درس قرآن بروز چہارشنبہ بعد نماز مغرب بمقام اندرون خواجہ کا چھلہ مغل پورہ میں منعقد ہوگی ۔ مولانا محمد عبدالمجید صدیقی نظامی سورہ الاعراف کا سلسلہ وار درس دیں گے اور تفسیر بیان کریں گے ۔۔
٭٭    مولانا عبید اللہ مفتاحی نائب معتمد لجنتہ العلماء اے پی کے بموجب 19 اکٹوبر دوپہر 12 تا 1 بجے مدرسہ فاطمہ اصلاح البنات ، آئی اے ایس کالونی روبرو میٹرو پولیس اسکول ٹولی چوکی میں مولانا عترت احمد حسامی رکن عاملہ لجنتہ العلماء خواتین کے لیے درس قرآن دیں گے ۔۔

 

حبیب عیدروسؒ کے مرید خطۂ عالم میں موجود
آپؒ کو اپنے والد سے خلافت و اجازت ، مولانا حبیب سہیل کا خطاب
حیدرآباد ۔ 18 اکٹوبر ۔ ( راست ) حضرت حبیب عیدروس بن حسین العیدروس رحمۃ اللہ علیہ کے مرید خطۂ عالم میں موجود ہیں ۔ یہ اہل دکن کی خوش بختی ہے کہ آپ ؒ نے اپنی آخری آرام گاہ کیلئے اس خطہ کو چنا اور آج خطۂ صالحین میں آرام فرما رہے ہیں ۔ حبیب عیدروسؒ جب پہلی مرتبہ 1269 ھ میں حیدرآباد تشریف لائے تو اس وقت حضرت سعداللہ شاہ نقشبندیؒ نے حضور اکرم ﷺ سے رویائے منامی میں حبیب عیدروسؒ کی آمد کی اطلاع پائی اور جب ملاقات ہوئی تو انھوں نے اپنے سلسلۂ نقشبندیہ کی خلافت و اجازت عنایت فرمائی اور حبیب عیدروسؒ نے تبرکاً اس کو قبول فرمالیا یہ زمانہ آصف جاہی فرمانرواں ناصرالدولہ کا تھا ۔ حضرت حبیب عیدروسؒ کو اپنے والدِ بزرگوار حبیب حسین بن احمد العیدروس سے ارادت حاصل تھی اور انہی سے آپؒ کو آبائی طریق پر خلافت و اجازت حاصل تھی ۔ حبیب عیدروسؒ کو حضرموت ، یمن کے ایک شہر ’’الحزم‘‘ میں علماء و مشائخ کبار کی موجودگی و سرپرستی میں 1256 ھ میں جدِّ امجد سلطان الاولیاء حبیب عبداللہ العیدروس الاکبرؒ کا خرقۂ مبارکہ پہناکر سلسلۂ عیدروسیہ العلویہ کی تمام تر اجازت کے ساتھ مجلس میں موجود دیگر مشائخین کی اجازت بھی عطا کی گئیں۔ دوسری مرتبہ حبیب عیدروسؒ کی حیدرآباد میں تشریف آوری بزمانہ افضل الدولہ عمل میں آئی اس وقت ملازمین نظمِ جمعیت میں عروب کی تعداد زیادہ تھی اور محلہ شاہ علی بنڈہ میں ایک عرصہ آپؒ نے قیام فرمایا اور پھر گلبرگہ ، ورنگل وغیرہ اضلاع میں بھی چند روز قیام فرمایا اور اس کے بعد ہندوستان کے مختلف شہروں کا سفر فرمایا ۔ اس دوران کئی لوگ آپؒ کے گرویدہ ہوکر آپؒ کے حلقۂ ارادت میں شامل ہوئے ۔ حبیب عیدروسؒ کے مریدین کا تعلق نہ صرف ہندوستان بلکہ جاوہ ، یمن اور وسطی ایشیاء وغیرہ سے ہے۔ آپؒ نے اپنا آخری سفرِ حیدرآباد1306 ھ میں میر محبوب علی خاں کے زمانہ میں فرمایااور آصف جاہ سابع میر عثمان علی خاںؒ نے خطۂ صالحین کی اراضی کو اپنے اراکین سلطنت کے بلند پایہ علماء ، مشائخین اور اہل فہم و دانش کی آخری آرام گاہ کے طورپر مخصوص کیا تھا اور انہی کی خواہش پر حبیب عیدروسؒ کی تدفین خطۂ صالحین میں عمل میں آئی ۔ ان خیالات کا اظہار مولانا حبیب سہیل بن سعید العیدروس نے خطۂ صالحین میں علماء و مشائخین کبار کی موجودگی میں بروز اتوار فاتحہ و ذکر کی محفل میں فرمایا ۔ اس محفل میں شہر حیدرآباد کے مختلف ثناء خوانِ رسولؐ نے کلام پیش کرنے کی سعادت حاصل کی ۔ آخر میں حضرت حبیب مجتبیٰ بن جعفرالعیدروس گدی نشین و نائب متولی خطۂ صالحین کی دعا پر یہ مبارک محفل اختتام کو پہنچی ۔

 

حجاج و معتمرین اللہ کے وفد
بنڈلہ گوڑہ میں حجاج کا خصوصی پروگرام۔علماء کرام کا خطاب
حیدرآباد ۔ 17 ۔ اکٹوبر ( راست ) اللہ زوجل کے وہ بندے خوش نصیب ہیں جنہیں سعادت حج نصیب ہوئی ہے ۔ اس سعادت سے بہرور ہونے کے بعد حاجی تمام گناہوں سے ایسے پاک ہوجاتاہے جیسا نومولود گناہوں سے پاک ہوتاہے لیکن حاجیوں کو حج کے بعد اپنی زندگی میں صالح انقلاب لانا ضروری ہے ۔ اگر ان کی زندگیوں میں صالح انقلاب برپا ہوتاہے تو سمجھئے کہ بارگاہ رب العزت میں ان کا حج ان کی عبادتیں و ریاضتیں قبول ہوگئی ہیں ۔ ان خیالات کا اظہار علماء اکرام نے ’’ حج کے بعد کی زندگی کیسی ہو ‘‘ کے زیرعنوان حجاج اکرام کیلئے منعقدہ ایک خصوصی پروگرام سے خطاب کرتے ہوئے کیا ۔ جس کا اہتمام عرفات ٹورس ، حج و عمر گروپ پرانی حویلی نے عرفات گارڈن فنکشن ہال بنڈلہ گوڑہ میں کیا تھا ۔ استاذ القراء قاری محمد علی خاں کی قرات کلام پاک سے پروگرام کا آغاز ہوا ۔ ڈاکٹر طیب پاشاہ قادری اور حافظ محمد حسن الدین انس نے نعت شریف پیش کرنے کی سعادت حاصل کی ۔ مولانا خواجہ نذیر الدین سبیلی ناظم جامعہ عائشہ نسواں نے اپنے مختصر لیکن جامع خطاب میں احادیث رسول ﷺ کے حوالے سے کہاکہ حجاج کی دعاؤں میں بہت اثر ہوتا ہے ۔ حضورﷺ نے بارگاہ رب العزت میں دعا فرمائی ۔’’ اے اللہ تو حاجی کی مغفرت فرما ، اے اللہ حاجی جس کیلئے دعا کرے اس کی دعا بھی قبول فرما‘‘ ۔ مولانا نے ایک اور حدیث پاک کے حوالے سے بتایا ، حج و عمرہ کرنے والے لوگ اللہ کے وفد ہوتے ہیں اگر وہ لوگ دعا کریں گے تو ان کی ہر دعا قبول ہوگی ۔ مولانا نے حجاج کرام کو مبارکباد دیتے ہوئے یہ بھی کہا کہ حجاج کرام صاحبِ دعا ہیں ۔ مولانا سید ومیض احمد ندوی اور مولانا عارف باللہ قاسمی نے انتہائی دلنشن انداز میں حجاج کرام کو ان کا مقام و مرتبہ یاد دلاتے ہوئے کہا کہ حاجی اس سعادت کے حصول کے بعد خود کو پوری طرح سنت رسول ﷺ میں ڈھال لیتا ہے ۔ مکہ مکرمہ اور مدینہ منورہ میں اس نے ایام حج کے دوران جس طرح عبادتیں کی تقوی و پرہیزگاری اختیار کی اس طرح حج کے بعد بھی وہ نمازوں کا پابند ہوجاتا ہے وہ سنت رسول ﷺ پر اپنی زندگی گذارنے کیا ہے حقیقت یہ ہیکہ حج کے بعد حجاج کا اصل مجاہدہ شروع ہوتا ہے ۔ فرائض و واجبات سے وہ غافل نہیں ہوتا ۔ تقوی ، پرہیزگاری اختیار کرتا ہے ۔ اس پروگرام میں عرفات ٹورس حج اینڈ عمرہ گروپ کے ذریعہ حج کی سعادت حاصل کرنے والی حجاج کرام کی کثیر تعداد موجود تھی ۔ اس موقع پر مفتی عبدالحسیب قاسمی نے بھی مخاطب کیا ۔خادم الحاج حافظ محمد افضل نے آخر میں شکریہ ادا کیا ۔ واضح رہے کہ عرفات ٹورس حج اینڈ عمرہ گروپ شہر حیدرآباد کا بااعتماد و قدیم ادارہ ہے جو ایک طویل عرصہ سے جید علماء کرام کی نگرانی میں معتمرین و حجاج کرام کی اطمینان بخش خدمات انجام دیتا آرہا ہے ۔

 

تحفظ شریعت کانفرنس 22 اکٹوبر کو انعقاد
حیدرآباد ۔ 18 ۔ اکٹوبر : ( راست ) : آل انڈیا تحفظ شریعت کانفرنس کے ضمن میں 22 اکٹوبر تلنگانہ ، آندھرا پردیش ، کرناٹک و بہار کے مسلم ایم ایل ایز تلنگانہ کے مسلم کارپوریٹرس ، علماء کرام ، مشائخین عظام ، تمام دینی و ملی جماعتوں کا اجلاس خواجہ منشن مانصاحب ٹینک بنجارہ ہلز میں جناب زاہد علی خاں ایڈیٹر سیاست کی زیر صدارت صبح 10-30 بجے دن منعقد ہوگا ۔ اس اجلاس میں دستور ہند کی دفعہ 44 اور یکساں سیول کوڈ کے تناظر میں مباحث ہوں گے ۔ جناب محمد مشتاق ملک صدر تحریک مسلم شبان کا افتتاحی کلیدی خطاب ہوگا ۔ مجلس استقبالیہ آل انڈیا تحفظ شریعت کانفرنس کے پریس نوٹ کے بموجب اضلاع کرناٹک ، بیدر ، بسواکلیان ، ہمناآباد ، چٹگوپہ ، آورات ، بھالکی ، گلبرگہ ، رائچور اور مہاراشٹرا سے ناندیڑ ، جالنہ ، اورنگ آباد سے تلنگانہ سے کریم نگر ، نلگنڈہ ، کورٹلہ ، ظہیر آباد ، سنگاریڈی ، جگتیال ، عادل آباد ، نرمل ، نظام آباد ، بھینسہ و دیگر علاقوں کے کارپوریٹرس نے شرکت کی توثیق کردی ہے ۔۔

 

خلیفہ سوم حضرت سیدنا عثمان غنیؓ
کا منقبتی مقابلہ
حیدرآباد ۔ 18 ۔ اکٹوبر : ( راست ) : محمد ضیا عرفان قادری حسامی کے بموجب ادارہ اپنا شہر اپنے لوگ ۔ انجمن بقائے ادب جمالستان اردو کے زیر اہتمام خلیفہ سوم حضرت سیدنا عثمان غنیؓ کی یاد میں آپ کے یوم شہادت کے موقع پر حسب ذیل دو طرحی مصرع دئیے گئے تھے ۔ ’ جنت ہے صلہ الفت عثمان غنیؓ کا ‘ ۔ ’ جو بیعت رضواں ہے عثمان کا تحفہ ہے ‘ ۔ وصول ہونے والی منقبتوں میں چار شعراء کو مساوی طور پر انعام کا مستحق قرار دیا گیا ۔ لہذا ججس کی متفقہ رائے ہے ۔ چاروں شعراء کو مساوی طور پر پانچ سو فی کس دئیے جائیں گے ۔۔

 

ماہانہ محفل سماع
حیدرآباد ۔ 18 ۔ اکٹوبر : ( راست ) : محفل سماع ماہانہ حضرت سرکار سیدنا امیر ابوالعلاء احراریؒ و الحاج پیر صوفی عزت اللہ شاہ صاحبؒ قبلہ خلیفہ دیوان جی حضور خواجہ اعظم اجمیریؒ بہ مقام خانقاہ عزت منزل روبرو نعمت لاج گوشہ محل روڈ بیگم بازار 17 محرم بعد نماز مغرب ذکر اللہ و درود شریف بعد عشاء سماع بعد سلام بحضور خیرالانامؐ زیر نگرانی الحاج شاہ قاری صوفی غلام خواجہ غوث اللہ شریف ابوالعلائی نبیرہ و سجادہ نشین پیر صوفی عزت اللہ شاہؒ مقرر ہے ۔۔

قرات ، حمد ، نعت و اذاں کی
فری تربیتی کلاسیس
حیدرآباد ۔ 18 ۔ اکٹوبر : ( راست ) : کلیتہ البنین جامعتہ المومنات مغل پورہ میں 19 اکٹوبر بعد نماز مغرب قرات کلام پاک ، حمد ، نعت و اذاں کی مفت تربیتی کلاسیس حافظ محمد صابر پاشاہ قادری لیں گے ۔ مولانا محمد مستان علی قادری نگرانی کریں گے ۔۔

 

شریعت قانون الہٰی ، صبح قیامت تک بدلی نہیں جائے گی
شرعی امور میں مداخلت ناقابل برداشت ، مولانا سید مدثر احمد کا خطاب
حیدرآباد ۔ 18 ۔ اکٹوبر : ( راست ) : اللہ کی فرمانبرداری اور رسول کی اطاعت کے مجموعے کا نام شریعت ہے ۔ صحابہ کرامؓ کا عمل بھی شریعت کا ایک حصہ ہے ۔ شریعت کے مطابق عمل آوری میں سرمو فرق آنے پر آدمی گنہگار ہوجاتا ہے ۔ حتی کہ بسا اوقات کسی عمل سے اسلام سے خارج ہونے کا امکان بھی پایا جاتا ہے ۔ شریعت دراصل عقائد ، عبادات ، معاملت ، معاشرت و اخلاق پر محیط ہے ۔ شریعت محمدیؐ کے نفاذ کے ساتھ ہی حق سبحانہ و تعالیٰ نے دیگر قدیم شریعتوں کو منسوخ کردیا ۔ مسجد آثار شریف رحمانیہ تاڑلہ گڈہ کاروان سے مولانا حافظ و قاری سید مدثر احمد قادری نقشبندی نے خطاب کرتے ہوئے ان خیالات کا اظہار کیا ۔ انہوں نے کہا کہ آنحضرت ﷺ نے معمولی توراۃ و انجیل کی تلاوت پر اپنی ناراضی کا اظہار فرمایا ۔ آپؐ کا ناراض ہونا گویا خدا کا ناراض ہونا ہے ۔ جب تلاوت پر اتنا جلال رکھتے ہیں تو آپؐ کی لائی ہوئی شریعت کے خلاف عمل کیسے گوارا فرمائیں گے ۔ اور جب اپنے محبوبوں پر ہی اتنا جلال ہو تو شریعت کی تبدیلی کی بات کرنے والے عدوؤں کو کیا بخش دیں گے ؟ ہرگز نہیں ۔ مسلمان خدا و رسول سے محبت و خوف رکھتے ہیں اور ان کے پاس شریعت ہی خدا و رسول کے قرب کا ذریعہ ہے ۔۔

 

عرس حضرت خواجہ محبوب مرزا چشتی ؒ
حیدرآباد۔/18اکٹوبر، ( راست ) حضرت محبوب الہ خواجہ محبوب مرزا چشتی ؒ کا چار روزہ عرس شریف 2نومبر تا 5 نومبر درگاہ شریف حضرت محبوب گلشن سرور نگر میں منعقد ہوگا۔ 2نومبر کو سجادہ نشین مراسم غسل شریف ادا کریں گے۔3نومبر کو چار بجے شام جلوس صندل شریف خانقاہ آمنہ محبوب منزل نلہ کنٹہ سے بعد قصیدہ بردہ شریف سماع برآمد ہوگا۔ ساڑھے بارہ بجے شب صندل مالی مقرر ہے۔ 4 نومبر کو جشن چراغاں روشن ہوں گے ۔ بعد نماز مغرب جلسہ فیضان اولیاء مقرر ہے جس کو حضرت سید شاہ اعظم علی صوفی صدر کل ہند جمعیت المشائخ مخاطب کریں گے۔ دو بجے شب تک محفل سماع مقرر ہے۔ 5 نومبر کو دس بجے دن ختم قرآن، محفل سماع، بعد مغرب قل کی محفل مراسم عرس شریف مولانا افضل مرزا محبوبی چشتی سجادہ نشین انجام دیں گے۔

 

 

TOPPOPULARRECENT