Sunday , November 19 2017
Home / شہر کی خبریں / شعبہ شہری ہوا بازی سے حیدرآباد میں ہیلی کاپٹر اڑانے کی تربیت

شعبہ شہری ہوا بازی سے حیدرآباد میں ہیلی کاپٹر اڑانے کی تربیت

نوجوانوں کو بہترین مواقع ، بین الاقوامی کمپنیوں سے اشتراک
حیدرآباد۔21جولائی (سیاست نیوز) شہر حیدرآباد میں شعبۂ ہوابازی میں ہو رہی تیز رفتار ترقی کو دیکھتے ہوئے اب ہیلی کاپٹر اڑانے کی تربیت کے آغاز پر غور کیا جانے لگا ہے۔ شہر حیدرآباد میں بہت جلد MI-171ہیلی کاپٹر کی تربیت کا آغاز عمل میں آئے گا جس سے شہر حیدرآباد کے نوجوانوں کو فضائیہ کے شعبہ میں بہترین مواقع میسر آنے کی توقع کی جا رہی ہے۔ آدی بٹلہ میں ٹاٹا ایویئیشن اور سیکوراسکائی کی جانب سے ہیلی کاپٹرس کی تیاری اور خصوصی معاشی زون کے آغاز کے بعد سے اب جو صورتحال پیدا ہوئی ہے اسے دیکھتے ہوئے مختلف بین الاقوامی کمپنیوںکی اشتراک سے ہیلی کاپٹر اڑانے کی تربیت کے علاوہ ہیلی کاپٹرس کی دیکھ ریکھ کے ساتھ ان کی مرمت وغیرہ کی تربیت کے کورسس شروع کئے جائیں گے۔ انڈین انسٹیٹیوٹ آف ائیرو اسپیس ٹکنالوجی اینڈ مینجمنٹ کی جانب سے شروع کئے جانے والے پرواز کی تربیت کے کورس کیلئے ادارے نے اسکائی ٹیکنک سے اشتراک کا فیصلہ کیا ہے جو کے متحدہ عرب امارات کی ایک کمپنی ہے جو ہیلی کاپٹر اڑانے کی تربیت کے علاوہ مینٹیننس امور کی تربیت فراہم کرتی ہے۔ مسٹر جی ستیہ نارائینہ ماہر فضائیہ نے بتایا کہ انڈین انسٹیٹیوٹ آف ائیرو اسپیس ٹکنالوجی اینڈ مینجمنٹ اس تربیت کے آغاز کیلئے حقیقی ہیلی کاپٹر کے کاکپٹ پر دو سمیولیٹر تیار کئے ہیں جو MI-17اور MI-171ہیلی کاپٹر اڑانے کی تربیت میں معاون ثابت ہوں گے۔ ان سمیولیٹرس کو TV3-117انجن سے آراستہ کیا گیا ہے تاکہ حقیقی پرواز اور سمیولیٹر پر فراہم کی جانے والی تربیت میں فرق محسوس نہ ہونے پائے ۔ علاوہ ازیں یہ سمیولیٹر ائی ایف آر اور وی ایف آر ٹکنالوجی سے مربوط رہیں گے جس میں فلائٹ انفارمیشن سسٹم ‘ ہیلی پیڈ ٹریننگ و دیگر سہولتیں بھی موجود ہیں۔ انڈین انسٹیٹیوٹ آف ائیرو اسپیس ٹکنالوجی اینڈ مینجمنٹ نے نوجوانوں کو تربیت کی فراہمی کیلئے جن ہیلی کاپٹر سمیولیٹر کا انتخاب کیا ہے ان میں رات کی تاریکی میں دیکھنے والے گلاس کی فراہمی اور ان کا استعمال بھی ممکن ہے۔ اسی طرح موسم کی صورتحال اور مختلف مقامات کے موسم کی تفصیلات بھی اس میں موجود رہیں گی جس کے ذریعہ ہیلی کاپٹر پائیلٹ کی بہتر تربیت ممکن ہے اور فضائیہ میں انہیں مہارت حاصل ہوگی۔ شہر حیدرآباد میں اس سہولت کے آغاز کے بعد شہر میں ہیلی کاپٹر تیار کرنے والے اداروں میں ہی انہیں ملازمتیں حاصل ہونے کا قوی امکان ہے علاوہ ازیں تیز رفتار ترقی کے اس دور میں یہ نوجوان خانگی ہیلی کاپٹرس کے پائیلٹ کی حیثیت سے بھی خدمات انجام دے پائیں گے۔

TOPPOPULARRECENT