Monday , December 11 2017
Home / ہندوستان / شعبہ ٔ صنعت کو جوکھم لینے کی عظیم تر صلاحیت کے مظاہرہ کا مشورہ

شعبہ ٔ صنعت کو جوکھم لینے کی عظیم تر صلاحیت کے مظاہرہ کا مشورہ

عالمی معاشی انتشار نے ہندوستان کیلئے ایک بڑا موقع مضمر، وزیراعظم نریندر مودی کی شعبۂ صنعت و بزنس کے قائدین سے خطاب
نئی دہلی ۔ 8 ۔ ستمبر (سیاست ڈاٹ کام) ہندوستان کیلئے عالمی معاشی انتشار میں بڑا موقع دیکھتے ہوئے وزیراعظم نریندر مودی نے ہندوستان کے شعبۂ صنعت سے خواہش کی کہ زیادہ سرمایہ کاری کرنے جوکھم لینے کی ’’عظیم تر صلاحیت‘‘ کا مظاہرہ کریں۔ انہوں نے شعبۂ صنعت اور بزنس کے قائدین ، بینک کاروں اور ماہرین معاشیات سے اپنی قیامگاہ پر ملاقات کے دوران شعبۂ صنعت سے جرات کا مظاہرہ کرنے کی اپیل کی۔ انہوں نے کہا کہ عالمی انتشار ہندوستان کیلئے ایک موقع ہے۔ تین گھنٹے طویل تبادلہ خیال کے دوران حکومت نے تیقن دیا کہ انفراسٹرکچر میں سرمایہ کاری میں اضافہ کیا جائے گا اور ہندوستان میں عالمی سرمایہ کو ترغیب دینے کیلئے بزنس کرنا زیادہ آسان بنادیا جائے گا۔ وزیراعظم نے شعبۂ صنعت پر زور دیا کہ خطرہ مول لینے اور اندرون ملک سرمایہ کاری میں اپنے حصہ میں اضافہ کی صلاحیت کا مظاہرہ کریں۔ آج کے اجلاس میں وزیراعظم نے کہا کہ دونوں فریقین اس بات سے اتفاق کرتے ہیں کہ آج کا عالمی منظر نامہ ہندوستان کیلئے ایک موقع سے کم نہیں اور اسے گرفت میں لے لینا چاہئے ۔

 

نریندر مودی نے اجلاس  کے بعد اپنے ٹوئیٹر پر اسے تعمیری اجلاس قرار دیا ۔ انہوں نے کہا کہ مختصر یہ کہ شرکاء نے احساس ظاہر کیا کہ عالمی صورتحال خاص طور پر سرمایہ اور کرنسی منڈیوں کی تغیر پذیر صورتحال ہندوستان کیلئے ایک موقع سے کم نہیں۔ یہ ایک عبوری مرحلہ ہے اور حقیقی معیشت کو مستحکم بنانے کے اقدامات کئے جانے چاہئے ۔ انڈیا ان کارپوریشن میں زور دے کر کہا کہ شرح سود میں تخفیف کے علاوہ منظوری کے عمل میں تیز رفتاری پیدا کی جانی چاہئے ۔ تین گھنٹے طویل اجلاس کے اختتام پر وزیراعظم نریندر مودی نے عالمی معاشی صورتحال کا حوالہ دیتے ہوئے زور دیا کہ شعبۂ صنعت کو خطرے مول لینا چاہئے ۔ انہوں نے کہا کہ چونکہ آپ اسے ہندوستان کیلئے ایک عظیم موقع تصور کرتے ہیں۔ ہندوستان کے نجی شعبہ کو بھی اپنی سرمایہ کاری میں اضافہ کرناچاہئے ۔ شعبۂ صنعت نے وزیراعظم نریندر مودی کے مشورہ پر ردعمل ظاہر کیا ہے۔ سی آئی آئی نے کہا کہ دو سب سے بڑے مسائل احیاء کا مطالبہ اور جی ایس ٹی کیلئے اعلیٰ تر معاشی مسابقتی صلاحیت ہیں۔ یہ اہم بات ہے کہ ہندوستان دیگر ابھرتی ہوئی معیشتوں میں شامل نہ ہو۔

TOPPOPULARRECENT