شعبہ ٹیلی کام 90,000 ملازمین کی کٹوتی کا اندیشہ

ممبئی ۔ 15 جنوری (سیاست ڈاٹ کام) حالیہ عرصہ تک پرکشش اور تابناک تصور کیا جانے والا ٹیلی کام شعبہ اب غیریقینی سے دوچار ہوچکا ہے جس میں آئندہ 6 تا 9 ماہ کے دوران ملازمین کی تعداد میں بدستور انحطاط جاری رہے گا اور روزگار سے محروم ہونے والوں کی تعداد 80,000 تا 90,000 تک پہنچ جائے گی۔ سی آئی ای ایل (سیل) ہیومن ریسورسیس سرویسیس نے اپنی رپورٹ میں آج کہا کہ ٹیلی کام شعبہ جو بڑھتی ہوئی مسابقت اور منافع میں کمی کے سبب دگرگوں حالات سے گذر رہا ہے۔ حالیہ عرصہ میں کافی اتھل پتھل سے ملازمتوں کی صورتحال غیریقینی ہوگئی ہے۔ یہ رپورٹ 65 ٹیلکو سے وابستہ 100 سینئر اور وسطی سطح کے ملازمین کے درمیان کئے گئے سروے پر مبنی ہے۔ رپورٹ کے مطابق گذشتہ سال سے اس شعبہ میں پہلے ہی 40,000 افراد روزگار سے محروم ہوچکے ہیں اور یہ صورتحال آئندہ تا 9 ماہ جاری رہے گی جس میں یہ اندیشہ ہیکہ مزید 80,000 تا 90,000 افراد اپنی ملازمتوں سے محروم ہوں گے۔

TOPPOPULARRECENT