Wednesday , December 19 2018

شمالی وزیرستان: سکیورٹی فورسز کی کارروائی جاری

اسلام آباد، 23 مئی (سیاست ڈاٹ کام) پاکستان کے قبائلی علاقے شمالی وزیرستان میں شدت پسندوں کے خلاف سکیورٹی فورسز کی کارروائیاں میں چار مشتبہ شدت پسند ہلاک اور متعدد زخمی ہو گئے ہیں۔ اطلاعات کے مطابق سکیورٹی فورسز نے میران شاہ کے قریب علاقہ ماچس کیمپ اور میرعلی میں شدت پسندوں کے ٹھکانوں کو نشانہ بنایا۔ یہ کارروائیاں دو روز قبل چہارشنبہ کو شروع کی گئی تھیں جس میں اب تک 70 سے زائد شدت پسندوں کو ہلاک کرنے کا دعویٰ کیا جا چکا ہے۔ فوج کے مطابق مرنے والوں میں غیر ملکی جنگجوؤں سمیت اہم شدت پسند کمانڈر بھی شامل ہیں۔

چہارشنبہ ہی کو شدت پسندوں نے سکیورٹی فورسز پر حملہ کرکے ایک افسر سمیت چار اہلکاروں کو ہلاک کر دیا تھا۔ عسکریت پسندوں کے خلاف ہونے والی کارروائی میں سکیورٹی فورسز کو جیٹ طیاروں اور گن شپ ہیلی کاپٹروں کی بھی مدد حاصل ہے۔ افغان سرحد سے ملحقہ قبائلی علاقوں میں شدت پسندوں نے اپنی محفوظ پناہ گاہیں قائم کر رکھی ہیں اور یہاں میڈیا کی رسائی نہ ہونے کی وجہ سے جانی نقصان کی آزاد ذرائع سے تصدیق تقریباً نا ممکن ہے۔ سکیورٹی فورسز نے اس سے قبل بھی شدت پسندوں کے خلاف فضائی کارروائی کی تھی لیکن حکومت کے ساتھ طالبان کے مذاکراتی عمل کے دوران شدت پسندوں کی طرف سے فائر بندی کے اعلان کے بعد سکیورٹی فورسز نے بھی یہ کارروائیاں روک دی تھیں۔

TOPPOPULARRECENT