Wednesday , December 19 2018

شمالی کوریا کو جنوبی کوریا سے بات چیت کی پیشکش قبول

 

سیول، 5 جنوری (سیاست ڈاٹ کام) شمالی کوریا نے اگلے ہفتے مجوزہ اعلی سطح کی بات چیت کے لئے جنوبی کوریا کی پیشکش قبول کر لی ہے ۔ میڈیا رپورٹوں کے مطابق یہ بات چیت 9 جنوری کو ہوگی اور اس میں جنوبی کوریا میں فروری میں منعقد کئے جانے والے موسم سرما کے پیرا اولمپک کھیلوں میں شمالی کوریا کے کھلاڑیوں کے حصہ لینے پر زیادہ توجہ دی جائے گی۔ شمالی کوریا کے حکمران کم جونگ ان نے اس ہفتے کہا تھا کہ ان کھیلوں میں ان کی طرف سے اپنی ٹیم بھیجنا لوگوں کے اتحاد کو ظاہر کرنے کا ایک بہتر موقع ہوگا۔ دونوں ممالک کے درمیان یہ بات چیت پانمنجوم گاؤں میں ہو گی جو سرحد پر واقع ہے اور یہ زیادہ سکیورٹی والا غیر فوجی علاقہ ہے جہاں دونوں ممالک کے درمیان کئی بار بات چیت ہوچکی ہے ۔ جنوبی کوریا کے صدر مون جائی ان نے پہلے بھی کہا تھا کہ وہ ان سرمائی کھیلوں میں شمالی کوریا کے کھلاڑیوں کے حصہ لینے کے دونوں ممالک کے درمیان ایک اہم موقع کے طور پر دیکھتے ہیں۔ اسی ہفتے ایک مثبت اشارہ بھی رہا کہ شمالی کوریا نے سرحد پر ایک ٹیلی فون ہاٹ لائن شروع کی ہے ۔دراصل دونوں کوریائی پڑوسی ممالک کے درمیان کشیدگی کو کم کرنے کے لئے جنوبی کوریا اپنی طرف سے ہر ممکن اقدامات کر ر ہا ہے اور اس نے رشتوں کو معمول پر لانے کے لئے امریکہ کے ساتھ فروری میں ہونے والی اپنے فوجی مشق کو ملتوی کرنے کی درخواست امریکہ کو بھیج دی ہے ۔
ترک بینکر کو سزاء دینا ترکی کیخلاف امریکہ کی سازش
استنبول ۔ 5 جنوری (سیاست ڈاٹ کام) صدر ترکی رجب طیب اردغان نے امریکہ میں ایک اعلیٰ سطحی ترک بینکر کو سزاء دیئے جانے کے فیصلہ کی شدید مذمت کی اور کہا کہ ترکی کے خلاف امریکہ نے جن سازشوں کا سلسلہ جاری رکھا ہے، یہ واقعہ بھی ان میں سے ایک ہے۔ استنبول ایرپورٹ پر اخباری نمائندوں سے بات کرتے ہوئے انہوں نے یہ بات کہی کیونکہ ترک کی ہاک بینک کے ڈپٹی چیف ایگزیکیٹیو کو سزاء دیئے جانے کی خبر انہیں مل چکی تھی۔ اردغان نے کہا کہ اگر یہی امریکہ کا انصاف ہے تو سمجھ لیجئے کہ دنیا قریب الختم ہے۔

TOPPOPULARRECENT