Thursday , December 14 2017
Home / Top Stories / شمالی کوریا کی ہائیڈروجن بم کا کامیاب تجربہ

شمالی کوریا کی ہائیڈروجن بم کا کامیاب تجربہ

حسب ِمعمول امریکہ اور دیگر ممالک کا احتجاج ، نیوکلیئر تجربات زلزلہ کا سبب: جاپان
سیئول۔ 6 جنوری (سیاست ڈاٹ کام) شمالی کوریا نے آج ایک اہم بیان دیتے ہوئے کہا کہ اس نے ایک طاقتور ہائیڈروجن بم دھماکہ کی ٹسٹنگ کی ہے جس نے یقیناً ملک کے اس عزم کو بھی حیرت زدہ کردیا ہے جس کی قیمت پر شمالی کوریا نے واضح کیا تھا کہ وہ اپنے نیوکلیئر پروگرام کو محدود رکھے گا۔ ٹیلی ویژن پر دکھائی جارہی خبروں کے مطابق ہائیڈروجن بم دھماکہ کی ٹسٹنگ معمولی نوعیت کی ہے، البتہ یہ بھی کہا جارہا ہے کہ اس طرح ملک کو نیوکلیئر طاقت کا حامل بنانے کی جانب ایک اور اہم پیشرفت کی گئی ہے جس کے لئے شمالی کوریا کے کئی دشمنوں کا بشمول امریکہ کا ذکر کیا گیا ہے جن سے نمٹنا اور جن کا سامنا کرنے کیلئے شمالی کوریا کو بھی ہمیشہ تیار رہنے کی دھن سوار ہے۔ یہ ایک فطری بات ہے کہ کوئی بھی کمزور فرد یا کمزور ملک بھی اپنی دفاع کے لئے اتنے بھی فکرمند ہوتے ہیں جتنا کہ طاقتور افراد اور ممالک، ہائیڈروجن بم دھماکہ کامیاب ٹسٹنگ کی خبر جیسے ہی عام ہوئی پیانگ ہانگ کی سڑکوں پر عوام جشن منانے لگے۔ صدر جنوبی کوریا پارک ۔ گیون ہائے نے اس ٹسٹنگ کو اشتعال انگیز قرار دیا اور کہا کہ اس ٹسٹنگ کی خبروں نے ہمارے مستقبل اور زندگیوں کو خطرے میں ڈال دیا ہے جس کی جتنی بھی مذمت کی جائے وہ کم ہے۔ دوسری طرف جیسا کہ توقعات تھیں۔ امریکہ نے شمالی کوریا کے ہائیڈروجن بم دھماکہ کی ٹسٹنگ کی مذمت کرتے ہوئے جنوبی کوریا کی طرح اس عمل کو اشتعال انگیز قرار دیا۔ اسٹیٹ ڈپارٹمنٹ کے ترجمان جان کربی نے کہا کہ امریکہ نے اپنے حلیف ممالک کے تحفظ کا سلسلہ بدستور جاری رکھے گا۔ فی الحال چونکہ ہمیں صدفیصد وثوق کے ساتھ یہ معلوم نہیں ہوا ہے کہ شمالی کوریا نے ہائیڈروجن بم دھماکہ ٹسٹنگ کی ہے یا نہیں، تاہم اس کے باوجود ہم اقوام متحدہ کی سلامتی کونسل قرارداد کی خلاف ورزی کی مذمت کرتے ہیں اور شمالی کوریا کو یہ پیغام دینا چاہتے ہیں کہ وہ اپنی بین الاقوامی ذمہ داریوں سے روگردانی نہ کرے۔ امریکہ اپنے قریب ترین علاقائی شراکت داروں کیساتھ شمالی کوریا میں پیش آنے والے واقعات پر گہری نظر رکھے ہوئے ہے۔ حیرت انگیز بات یہ ہے کہ شمالی کوریا نے جہاں بم ٹسٹنگ کی ہے وہاں سے قریب 5.1 شدت کا زلزلہ کا جھٹکا بھی محسوس کیا گیا۔ امریکی جیولوجیکل سروے کے مطابق زلزلہ کا مبداء ملک کے شمال مشرقی علاقہ میں ہے۔ جاپان سے ملنے والی خبروں کے مطابق حکومت جاپان نے تو یہ تک کہہ دیا ہے کہ شمالی کوریا میں رونما ہوئے زلزلہ کی وجہ کچھ اور نہیں بلکہ نیوکلیئر ٹسٹنگ ہے جس نے زمینی تہوں کو تہس نہس کردیا۔ جاپان کے چینسکابینی سیکریٹری یوشہیدے سوگا جو حکومت کے کلیدی ترجمان بھی ہیں، نے اخباری نمائندوں سے بات چیت کرتے ہوئے کہا کہ اگر ہم ماضی کے واقعات کو مدنظر رکھیں تو یہ بات آسانی سے کہی جاسکتی ہے کہ زلزلہ دراصل نیوکلیئر ٹسٹنگ کی وجہ سے رونما ہوا۔ بہرحال اس وقت ایسے ترقی یافتہ ممالک جو ترقی پذیر ممالک کو اپنی صف میں شامل ہوتا نہیں دیکھ سکتے۔

TOPPOPULARRECENT