Thursday , January 17 2019

شمالی ہند میں شدید سردی کی لہر ، درجہ حرارت نقطہ انجماد سے نیچے

کشمیر اور گل مرگ میں منفی درجہ حرارت، پنجاب اور ہریانہ کے چند علاقوں میں بارش
سرینگر۔12 ڈسمبر (سیاست ڈاٹ کام) اعلی درجہ حرارت میں آج کمی واقع ہوئی جبکہ وادیٔ کشمیر اور گل مرگ میں منفی 8 درجہ سلسیس درجہ حرارت ریکارڈ کیا گیا۔ قاضی گنڈ میں 0.4، کپواڑہ میں منفی 2.8، پہلگام میں منفی 5، لیہہ اور لداخ میں منفی 9.1 درجہ سلسیس ریکارڈ کیا گیا۔ کارگل منفی 9.3 درجہ کے ساتھ سرد ترین مقام تھا۔ چندی گڑھ، پنجاب اور ہریانہ کے بعض مقامات پر بارش سے درجہ حرارت میں کمی واقع ہوئی۔ پنجاب کے علاقوں امگالا، کرنال، پنج کولہ، بھیوانی، پٹیالہ، روپ نگر، ہلوارا، موہالی، فرید کوٹ اور چندی گڑھ میں بارش ہوئی جس کی وجہ سے راتوں رات درجہ حرارت میں کمی واقع ہوگئی اور دہرادون سے موصولہ اطلاع کے بموجب ریاست اتراکھنڈ میں آج برف باری اور بارش اونچے پہاڑوں کی چوٹیوں پر ریکارڈ کی گئی۔ سرد ہوائوں کی وجہ سے عوام کے مصائب میں مزید اضافہ ہوگیا۔ برف باری اور بارش سے سردی میں اور بھی شدت پیدا ہوگئی۔ امکان ہے کہ اتراکھنڈ میں اسی طرح کا موسم کل تک برقرار رہے گا۔ شملہ سے موصولہ اطلاع کے بموجب ہماچل پردیش میں بھی اس سیزن کی پہلی برف باری دیکھی گئی جس کی وجہ سے مقامی ہوٹل کا کاروبار کرنے والوں کے چہروں پر خوشی کی لہر دوڑ گئی۔ سیاح رج اور مال روڈ پر جمع ہوگئے تھے تاکہ برف باری کا لطف اٹھاسکیں۔ برف باری کی وجہ سے درختوں کے پتے منجمد ہوگئے۔ عمارتوں کی چھتوں پر برف جم گیا۔ خاص طور پر رج، مال روڈ اور جاکو میں ایک خوشگوار نظارہ دیکھا گیا۔ شملہ میں تاحال 3.8 سنٹی میٹر برف باری ریکارڈ کی گئی۔ محکمہ موسمیات کے بموجب برف باری کا سلسلہ ہنوز جاری ہے اور پنجاب، ہریانہ اور دہلی میں جلد ہی کثیر تعداد میں سیاحوں کی آمد اور برف باری کا نظارہ دیکھنے کا موقع ملے گا۔ سیاحوں کے ایک اور مرکز کفری میں جو ضلع شملہ میں واقع ہے، 7 سنٹی میٹر برف باری ہوئی۔ موسمیاتی مرکز شملہ کے ڈائرکٹر منموہن سنگھ نے کہا کہ ڈلہوزی ضلع چامبا کے سیاحوں کے بموجب وہاں 1.5 سنٹی میٹر، 6 سنٹی میٹر اور 3 سنٹی میٹر برف باری الترتیب ریکارڈ کی گئی۔ عمومی حیثیت سے ان پہاڑی علاقوں کے علاوہ میدانی علاقوں میں بھی شدید سردی کی لہر جاری ہے۔

Top Stories

TOPPOPULARRECENT