Monday , May 28 2018
Home / سیاسیات / شمال مشرقی ہند کی تین ریاستوں میں آج رائے شماری

شمال مشرقی ہند کی تین ریاستوں میں آج رائے شماری

تریپورہ میں بایاں محاذ حکومت بیدخل ہونے اور دیگر دو ریاستوں میں بی جے پی کا موقف مستحکم ہونے ایگزٹ پولس کی پیش قیاسیاں

اگرتلہ ؍ کوہیما ؍ شیلانگ ۔ 2 مارچ (سیاست ڈاٹ کام) تین شمال مشرقی ہند کی ریاستوں میگھالیہ، ناگالینڈ اور تریپورہ کے اسمبلی انتخابات کی آج سخت حفاظتی انتظامات کے دوران رائے شماری منعقد ہوگی۔ بی جے پی تمام تینوں ریاستوں میں طاقتور دعویدار بن کر ابھر رہی ہے۔ ایگزٹ پولس میں پیش قیاسی کی گئی ہیکہ پارٹی 25 سال قدیم بائیں محاذ کی حکومت کو تریپورہ میں اقتدار سے بیدخل کردے گی اور دیگر دو ریاستوں میں اپنے موقف کو مستحکم کرے گی۔ کانگریس گذشتہ 10 سال سے میگھالیہ میں برسراقتدار ہے۔ ناگا پیپلز فرنٹ ناگالینڈ میں 2003ء سے حکومت کررہا ہے۔ 2008ء میں صرف 3 ماہ کیلئے یہاں صدر راج نافذ کیا گیا تھا۔ آسام، منی پور اور اروناچل پردیش میں تشکیل حکومت سے بی جے پی کے حوصلے بلند ہوگئے ہیں اور وہ اس علاقہ میں اپنے نقوش قدم کی توسیع کی کوشش میں مصروف ہے۔

رائے شماری کا آغاز تمام ریاستوں میں سخت حفاظتی انتظامات کے درمیان 8 بجے صبح ہوگا۔ الیکشن کمیشن کے عہدیداروں نے کہا کہ تریپورہ میں 18 فروری کو رائے دہی منعقد کی گئی تھی جبکہ ناگالینڈ اور میگھالیہ میں 27 فروری کو ووٹ ڈالے گئے تھے حالانکہ تینوں ریاستوں میں اسمبلی کی 60 ، 60 نشستیں ہیں لیکن ان 60 انتخابی حلقوں میں انتخابات ہوئے جس کی مختلف وجوہات تھیں۔ تریپورہ میں سی پی آئی ایم کے امیدوار فوت ہوگئے اور میگھالیہ میں این سی پی کے امیدوار کو ہلاک کردیا گیا۔ اس لئے دونوں ریاستوں نے ایک ایک نشست پر رائے دہی ملتوی کردی گئی۔ ناگالینڈ میں نیشنلسٹ ڈیموکریٹک پروگریسیو پارٹی جس کے قائد لیفیوریو کو بلامقابلہ منتخب قرار دیا گیا۔ میگھالیہ میں کانگریس نے 59 امیدوار اور بی جے پی نے 47 امیدوار کھڑے کئے تھے۔ پہلی بار چیف منسٹر میگھالیہ مکل سنگما دو نشستوں سے مقابلہ کررہے ہیں۔ ناگالینڈ میں بی جے پی کا این ڈی پی پی کے ساتھ اتحاد ہے جو سابق چیف منسٹر لیفیوریو کی پارٹی ہے۔ محاذ 40 نشستوں پر اور بھگوا پارٹی 20 نشستوں پر مقابلہ کررہی ہے۔ کانگریس نے 1963ء میں ریاست کے قیام سے اب تک ناگالینڈ کو 3 چیف منسٹر دیئے ہیں اور اب وہ 18 نشستوں پر انتخابی مقابلہ کررہی ہے جبکہ بی جے پی کے 20 امیدوار مقابلہ میں ہیں۔ رائے دہی کا عمل ناگالینڈ میں مشکلات کا شکار ہوا۔ ناگالینڈ قبائیلی ہوہوس اور شہری انتظامیہ کی پارٹی کی اہم کمیٹی نے ناگاسیاسی مسئلہ کی انتخابات سے قبل یکسوئی کا مطالبہ کیا تھا جس کی وجہ سے ابتداء میں سیاسی پارٹیاں انتخابی عمل سے دور رہیں ۔ 31 جنوری کو پرچہ جات نامزدگی کا آغاز ہوا لیکن صرف 5 فروری کو 22 امیدواروں نے اپنے پرچے داخل کئے۔

TOPPOPULARRECENT