Saturday , November 25 2017
Home / شہر کی خبریں / شمس آباد اور ابراہیم پٹنم کے درمیان الکٹرانک کلسٹر کا قیام

شمس آباد اور ابراہیم پٹنم کے درمیان الکٹرانک کلسٹر کا قیام

دونوں تلگو ریاستوں کو بین الاقوامی الکٹرانک کمپنیوں کی توجہ کا مرکز حاصل
حیدرآباد۔یکم، اگسٹ (سیاست نیوز) مرکزی حکومت نے ریاست تلنگانہ و آندھرا پردیش میں الکٹرانک اشیاء کی تیاری کیلئے کلسٹر کو منظوری فراہم کردی ہے اور دونوں ریاستوں میں دو علحدہ کلسٹر قائم کئے جائیں گے جہاں الکٹرانک کمپنیو ں کی جانب سے تحقیق اور اشیاء سازی کی صنعتیں قائم کی جائیں گی۔ مرکزی حکومت کی جانب سے دی گئی منظوری کے مطابق تلنگانہ اور آندھراپردیش میں قائم کئے جانے والے ان اجازت ناموں کے بعد دونوں تلگو ریاستیں بین الاقوامی الکٹرانک اشیاء سازی کی کمپنیوں کی توجہ کا مرکز بنیں گی۔ بتایاجاتا ہے کہ تلنگانہ میں تلنگانہ انڈسٹریل انفراسٹرکچر کارپوریشن کی جان بسے شہر کے نواحی علاوہ ریورال میں 600 ایکڑ اراضی کی فراہمی کا فیصلہ کیا گیاہے اور اس سلسلہ میں ریاست کی جانب سے مرکز کو تجاویز روانہ کردی گئی تھیں جنہیں منظوری حاصل ہو چکی ہے۔ تلنگانہ کو منظورہ پراجکٹ کی تفصیلات کے مطابق اس پراجکٹ کی جملہ مالیت 667کروڑ ہے ۔ اس پراجکٹ کی منظوری پر ریاستی وزیر انفارمیشن ٹیکنالوجی و صنعت مسٹر کے ٹی راما راؤ نے مرکزی حکومت سے اظہار تشکر کیا۔حکومت تلنگانہ کی جانب سے مرکزی حکومت سے ریورال میں الکٹرانک سٹی کے علاوہ سائنس سٹی کی منظوری کیلئے خواہش کی تھی اور توقع ہے کہ مرکزی حکومت کی جانب سے مہیشورم کے قریب سائنس سٹی کی تعمیر کیلئے بھی جلد منظوری فراہم کردی جائے گی۔ریاست آندھرا پردیش میں ضلع چتور کے قریب حکومت آندھراپردیش نے آندھراپردیش انڈسٹریل انفراسٹرکچر کارپوریشن کے ذریعہ 500 ایکڑ اراضی پر الکٹرانک سٹی و الکٹرانک کلسٹر کی تعمیر کا منصوبہ پیش کیا تھا جسے مرکزی حکومت کی منظوری حاصل ہو چکی ہے اور 340کروڑ کی لاگت سے اس منصوبہ کو عملی جامہ پہنایا جائے گا۔ریاست تلنگانہ میں تعمیر کئے جانے والے اس پراجکٹ کیلئے ریاستی حکومت کی جانب سے 667کروڑ خرچ کئے جائیں گے جبکہ مرکزی حکومت اس میں 240کروڑ کا حصہ ادا کرے گی۔مرکزی حکومت کی منظوری کے فوری بعدریاستی حکومت کی جانب سے اس پراجکٹ کو شروع کرنے کے لئے اقدامات کئے جانے کی توقع ہے اور کہا جا رہا ہے کہ ماہ نومبر یا ڈسمبر میں اس پراجکٹ کے سنگ بنیاد کے سلسلہ میں تیاریوں کا آغاز کرنے کی ریاستی وزیر مسٹر کے ٹی راما راؤ نے ہدایت دی ہے ۔

TOPPOPULARRECENT