Saturday , June 23 2018
Home / شہر کی خبریں / شمس آباد ایرپورٹ جانے والی چندرائن گٹہ روڈ پر تاریکی

شمس آباد ایرپورٹ جانے والی چندرائن گٹہ روڈ پر تاریکی

اسٹریٹ لائیٹس کی موجودگی کے باوجود انہیں روشن کرنے میں بلدیہ کی کوتاہی ، حادثات میں اضافہ

اسٹریٹ لائیٹس کی موجودگی کے باوجود انہیں روشن کرنے میں بلدیہ کی کوتاہی ، حادثات میں اضافہ
حیدرآباد۔ 16 ستمبر (سیاست نیوز) پرانے شہر کے ساتھ حکومت اور سرکاری اداروں کا سوتیلا سلوک ختم ہونے پر پرانے شہر کی ترقی بھی یقینی بنائی جاسکتی ہے۔ راجیوگاندھی انٹرنیشنل ایرپورٹ شمس آباد کیلئے حیدرآباد سے دو راستے ہیں جو ایرپورٹ تک پہنچتے ہیں لیکن پرانے شہر سے ہوکر گذرنے والی ایرپورٹ سڑک رات کے اوقات میں تاریکی کا شکار ہوتی ہے، جبکہ ایرپورٹ سے شمس آباد والی سڑک بقعہ نور بنادی جاتی ہے۔ ایسا نہیں ہے کہ چندرائن گٹہ سے ایرپورٹ جانے والی سڑک پر اسٹریٹ لائیٹس موجود نہیں ہیں لیکن اسٹریٹ لائیٹس کی موجودگی کے باوجود یہ لائیٹس کھولی نہیں جاتی جس کے سبب رات کے اوقات میں اس سڑک پر خطرناک حادثات پیش آتے ہیں۔ اس کے علاوہ ایرپورٹ سے شہر کی سمت آنے والی گاڑیوں اور مسافرین اس سڑک کا انتخاب کرنے میں خوف محسوس کرتے ہیں چونکہ ایرپورٹ کی سڑک کے بعد جب چندرائن گٹہ کا رُخ کیا جاتا ہے تو وہاں سے پہاڑی شریف کے آگے تک بھی بلکہ تقریباً شاہین نگر کے قریب تک اسٹریٹ لائیٹس موجود نہیں ہیں، جس کی وجہ سے اس اہم سڑک پر رات کے اوقات میں سفر کرنے والوں کی تعداد بتدریج گھٹتی جارہی ہے۔ جو لوگ چارمینار یا پرانے شہر کے کسی علاقہ کو ایرپورٹ سے واپس ہونا چاہتے ہیں، وہ لوگ بھی اس صورتحال کے باعث شمس آباد کی سڑک کا انتخاب کرنے پر مجبور ہیں۔ چندرائن گٹہ چوراہے سے ایرہ کنٹہ، شاہین نگر کے قریب تک اسٹریٹ لائیٹس موجود اور کارکرد ہیں لیکن پہاڑی شریف سے قبل نئی سڑک جو ایرپورٹ کیلئے تعمیر کی گئی ہے ، اس اہم ترین سڑک پر 75 برقی کھمبے موجود ہیں اور عصری برقی کھمبوں پر دونوں جانب بلبس بھی لگائے گئے ہیں، لیکن مقامی عوام کا کہنا ہے کہ اس سڑک پر اسٹریٹ لائیٹس شاذ و نادر ہی کھلی رہتی ہیں چونکہ اس سڑک کی تعمیر کے بعد سے مجلس بلدیہ عظیم تر حیدرآباد نے اس سڑک کی اسٹریٹ لائیٹس پر کوئی توجہ دی ہے اور نہ ہی محکمہ برقی کی جانب سے اس سلسلے میں کوئی اقدامات کئے گئے ہیں۔ اتنا ہی نہیں ان دونوں محکموں کی جانب سے اختیار کردہ رویہ کی طرح ایرپورٹ انتظامیہ کا رویہ بھی اس سڑک کے متعلق بے اعتنائی والا تصور کیا جارہا ہے چونکہ اس سڑک کی ترقی کے متعلق کوئی بھی دلچسپی کا مظاہرہ نہیں کررہا ہے جس کی وجہ سے پرانے شہر کی سمت آنے والی یہ اہم ترین سڑک جو پرانے شہر کو ایرپورٹ سے جوڑتی ہے ، دن بہ دن ویران ہوتی جارہی ہے۔ جی ایم آر ، مجلس بلدیہ عظیم تر حیدرآباد اور محکمہ برقی کو چاہئے کہ وہ فوری طور پر اس سڑک پر موجود 75 اسٹریٹ لائیٹس کو کارکرد بناتے ہوئے روزانہ رات کے اوقات میں انہیں کھلا رکھنے کے اقدامات کریں تاکہ یہ اہم سڑک بھی شمس آباد کی طرح مصروف رہے۔

TOPPOPULARRECENT