شوکت عزیز نے ایمرجنسی کا مشورہ دیا تھا : مشرف

اسلام آباد ۔ 15 اپریل (سیاست ڈاٹ کام) پرویز مشرف نے کہا ہیکہ انہوں نے 3 نومبر کو ایمرجنسی سابق وزیراعظم شوکت عزیز کی مشورہ پر لگائی تھی۔ اقدام سول اور فوجی حکام کے مشورہ سے کیا۔ اپنے وکلاء کے ذریعہ جاری بیان میں پرویز مشرف نے کہا کہ ان کے وکیل ابراہیم ستی نے نظرثانی کیس میں ایمرجنسی کے نفاذ پر جو موقف اختیار کیا انہوں نے اس کی ہدایت نہی

اسلام آباد ۔ 15 اپریل (سیاست ڈاٹ کام) پرویز مشرف نے کہا ہیکہ انہوں نے 3 نومبر کو ایمرجنسی سابق وزیراعظم شوکت عزیز کی مشورہ پر لگائی تھی۔ اقدام سول اور فوجی حکام کے مشورہ سے کیا۔ اپنے وکلاء کے ذریعہ جاری بیان میں پرویز مشرف نے کہا کہ ان کے وکیل ابراہیم ستی نے نظرثانی کیس میں ایمرجنسی کے نفاذ پر جو موقف اختیار کیا انہوں نے اس کی ہدایت نہیں دی تھی۔ سچ یہ ہیکہ 3 نومبر کو ایمرجنسی سابق وزیراعظم شوکت عزیز کے مشورہ پر لگائی۔ ایمرجنسی کا نفاذ حکم نامے میں شامل سول اور فوجی حکام کے مشورے سے کیا۔ پرویز مشرف نے کہا کہ ایمرجنسی کی قومی اسمبلی نے قرارداد کے ذریعہ توثیق کی تھی۔ پرویز مشرف کے وکیل ابراہیم ستی ایڈوکیٹ نے ایک وضاحت بیان سپریم کورٹ میں داخل کیا ہے جس میں انہوںنے کہا ہیکہ بطور آرمی چیف ایمرجنسی کے نفاذ کا صدابدیدی استعمال ان کی یعنی ابراہیم ستی کی قانونی سمجھ بوجھ تھی۔

TOPPOPULARRECENT