شکتی ملز اجتماعی عصمت ریزی مقدمہ

ممبئی 20 مارچ (سیاست ڈاٹ کام) ویران شکتی ملز کے احاطہ میں گزشتہ سال 2 خواتین کی اجتماعی عصمت ریزی کے مقدمہ میں سیشن کی عدالت نے 5 افراد کو مجرم قرار دیا۔ عدالت اُن کی سزا کا کل اعلان کرے گی۔ جملہ 7 افراد بشمول دو نابالغ دونوں مقدمات کے سلسلہ میں گرفتار کئے گئے تھے۔ اُن میں سے 3 دونوں مقدمات کے مشترکہ ملزم تھے۔ پرنسپال سیشن جج شالینی پھنس

ممبئی 20 مارچ (سیاست ڈاٹ کام) ویران شکتی ملز کے احاطہ میں گزشتہ سال 2 خواتین کی اجتماعی عصمت ریزی کے مقدمہ میں سیشن کی عدالت نے 5 افراد کو مجرم قرار دیا۔ عدالت اُن کی سزا کا کل اعلان کرے گی۔ جملہ 7 افراد بشمول دو نابالغ دونوں مقدمات کے سلسلہ میں گرفتار کئے گئے تھے۔ اُن میں سے 3 دونوں مقدمات کے مشترکہ ملزم تھے۔ پرنسپال سیشن جج شالینی پھنسالکر جوشی نے 19 سالہ وجئے جادھو، 21 سالہ محمد قاسم شیخ اور 28 سالہ محمد انصاری کو اجتماعی عصمت ریزی کے دونوں مقدمات میں مجرم قرار دیا۔ اِن تینوں کے علاوہ عدالت نے سراج خان کو بھی فوٹو جرنلسٹ کی 22 اگسٹ کو اجتماعی عصمت ریزی کے مقدمہ کا مجرم قرار دیا اور 26 سالہ محمد اشفاق شیخ کو ٹیلیفون آپریٹر کی 21 جولائی کو اِسی عمارت میں اجتماعی عصمت ریزی کا مجرم قرار دیا۔ 2 نابالغ افراد کا مقدمہ علیحدہ طور پر بچوں سے انصاف کے بورڈ میں زیرسماعت ہے۔ عدالت نے 5 افراد کو اجتماعی عصمت ریزی، سازش، مشترکہ ارادے، غیر فطری جنسی تعلق اور انفارمیشن ٹیکنالوجی قانون کے تحت جرائم کا مرتکب قرار دیا۔ وزیرداخلہ مہاراشٹرا آر آر پاٹل نے جو عدالت میں موجود تھے، فیصلہ کی ستائش کی اور کہاکہ سماعت ممکنہ حد تک تیز رفتار ترین تھی اور متاثرین کو انصاف حاصل ہوگیا۔ اُنھوں نے اُمید ظاہر کی کہ یہ فیصلہ دیگر افراد کے ایسے ہی ارادوں میں بڑی رکاوٹ ثابت ہوگا۔

TOPPOPULARRECENT