Thursday , January 18 2018
Home / اضلاع کی خبریں / شہدائے کربلا کو خراج پیش کرنے کیلئے نماز کی پابندی کی تلقین

شہدائے کربلا کو خراج پیش کرنے کیلئے نماز کی پابندی کی تلقین

بگدل۔12 نومبر ( راست ) نماز کی پابندی کے ذریعہ شہادت حسینؓ کو یاد کریں‘ کیونکہ واقعہ کربلا عبادتوں و شریعت مطہرہ کی نافرمانی کے خلاف ایک عظیم جدوجہد حق و باطل کے درمیان حصرت سیدنا امام حسینؓ و خانوادۂ رسولؐ نے جو اپنی عزیز جانوں کو قربان کر کے قیامت تک کے آنے والوں کیلئے مشعل راہ ہے ۔ ان خیالات کا اظہار مولانا شاہ خلیفہ محمد ادریس اح

بگدل۔12 نومبر ( راست ) نماز کی پابندی کے ذریعہ شہادت حسینؓ کو یاد کریں‘ کیونکہ واقعہ کربلا عبادتوں و شریعت مطہرہ کی نافرمانی کے خلاف ایک عظیم جدوجہد حق و باطل کے درمیان حصرت سیدنا امام حسینؓ و خانوادۂ رسولؐ نے جو اپنی عزیز جانوں کو قربان کر کے قیامت تک کے آنے والوں کیلئے مشعل راہ ہے ۔ ان خیالات کا اظہار مولانا شاہ خلیفہ محمد ادریس احمد قادری سجادہ نشین آستانہ قادریہ نے جلسہ یاد حسینؓ و فیضان اولیاء سے خطاب کرتے ہوئے کیا ۔ مہمان خصوصی مولانا حافظ مظفر حسین خان بندہ نوازی صدرمرکزی میلاد جلوس نے کہا کہ حسد و غیبت تمام بیماریوں کو جنم دیتی ہے ۔ حضرت نبی کریمﷺ نے کہا کہ غیبت کرنا کسی مردہ کا گوشت کھانے کے برابر ہے اور غیبت کرنے سے وضو و روزہ بھی ٹوٹ جاتا ہے ۔ بندہ جب حسد و غیبت سے پاک رہتا ہے تو اللہ تعالیٰ کے تجلیات و قرآن کا فہم سے وہ روشناس ہونے لگتا ہے ۔ اس جلسہ سے ممتاز عالم دین مولانا محمدحسام الدین ثانی المعروف جعفرپاشاہ جانشین حضرت مولانا حمید الدین حسامی عاقل نے اپنے مخصوص انداز میں خطاب کرتے ہوئے کہا ۔ نماز دین کا ستون ہے جو نماز کو قائم کیا اس نے دین کو قائم کیا اور جو نماز کی پابندی کرتے ہیں ان کے چہروں پر اللہ کی رحمت کے انوار نظر آتے ہیں ۔ مولانا جعفر پاشاہ نے آستانہ قادریہ کی خدمات کی ستائش کی ۔ دورحاضر کو خانقاہی نظام کی تربیت کی اہم ضرورت ہے ۔ اس جلسہ سے مولانا عبدالحمید رحمانی چشتی نے کہا کہ نئے سال کا آغاز شہادت حضرت سیدنا عمر فاروقؓ سے ہوتا ہے اور اُمت مسلمہ کو چاہیئے کہ نیک کاموں کی نیت کریں ‘ نئے سال میں اور گذرے ہوئے سال کے گناہوں پر استغفار کریں ۔ جب بندہ اچھے کاموں کی نیت کرتا ہے تو اللہ اس کے نامہ اعمال میں بے انتہا نیکیاں لکھتا ہے ۔ اس جلسہ سے حافظ ریاض احمد قادری ‘ جلسہ کا آغاز حافظ شاہ نواز کی قرات کلام پاک سے ہوا ۔ قاری حنیف نقشبندی موذن تاریخی مکہ مسجد حیدرآباد نے ہدیہ نعت پیش کی ۔ حافظ غوث قادری ناگارم شمس آباد ‘ جناب وسیم الہامی ‘ جناب لئیق احمد قادری ‘ ڈاکٹر غوث الدین احمد ‘ فیض الدین اشرفی ‘ قادر باشاہ کڑپہ ‘گورے بھائی ظہیرآبادی موجود تھے

TOPPOPULARRECENT