Thursday , January 18 2018
Home / ہندوستان / شہریان دہلی کے ساتھ عام آدمی پارٹی کی دغا بازی۔ مرکزی وزیر قانون کا الزام

شہریان دہلی کے ساتھ عام آدمی پارٹی کی دغا بازی۔ مرکزی وزیر قانون کا الزام

بنگلور۔/12جون، ( سیاست ڈاٹ کام ) عام آدمی پارٹی حکومت پر شہریان دہلی کے ساتھ دغا بازی کا الزام عائد کرتے ہوئے مرکزی وزیر قانون ڈی وی سدانند گوڑا نے آج کہا ہے کہ روز اول سے ہی چیف منسٹر کجریوال مرکز کے خلاف تصادم کی راہ اختیار کئے ہوئے ہیں۔ مسٹر گوڑا نے عام آدمی پارٹی کے ان الزامات کو مسترد کردیا کہ جعلی ڈگری کیس میں دہلی کے ایک وزیر جتن

بنگلور۔/12جون، ( سیاست ڈاٹ کام ) عام آدمی پارٹی حکومت پر شہریان دہلی کے ساتھ دغا بازی کا الزام عائد کرتے ہوئے مرکزی وزیر قانون ڈی وی سدانند گوڑا نے آج کہا ہے کہ روز اول سے ہی چیف منسٹر کجریوال مرکز کے خلاف تصادم کی راہ اختیار کئے ہوئے ہیں۔ مسٹر گوڑا نے عام آدمی پارٹی کے ان الزامات کو مسترد کردیا کہ جعلی ڈگری کیس میں دہلی کے ایک وزیر جتندرسنگھ تومر کی گرفتاری کے پس پردہ مودی حکومت محرک ہے۔ انہوں نے یہاں میڈیا سے بات چیت کرتے ہوئے کہا کہ تحقیقاتی رپورٹ آجانے کے بعد مرکزی حکومت کے خلاف سیاسی الزامات ختم ہوجائیں گے۔ انہوں نے بتایا کہ جعلی ڈگری کا معاملہ دو ماہ قبل ہی پولیس کو معلوم ہوگیا تھا لیکن متعلقہ یونیورسٹی اور دیگر مقامات سے تفصیلات اور اطلاعات حاصل کرنے کے بعد تحقیقات شروع کی گئی ہے۔ انہوں نے کہا کہ بحیثیت وزیر قانون و انصاف اس مسئلہ پر تبصرہ مناسب نہیں ہے اور توقع ہے کہ بہت جلد تحقیقات سے حقائق آشکار ہوجائیں گے۔ مسٹر سدانند گوڑا نے بتایا ہے کہ کجریوال نے دہلی کے عوام سے یہ وعدہ کیا تھا کہ ایک شفاف اور کرپشن سے پاک حکمرانی فراہم کی جائے گی لیکن انہوں نے وعدہ خلافی کرکے دغا بازی کی ہے اور کیجروال بحیثیت چیف منسٹر جائزہ حاصل کرنے کے بعد متعدد واقعات پیش انے کے ثبوت موجود ہیں۔ انہوں نے کہا کہ یہ پہلی بار ایسا نہیں ہوا ہے کہ دہلی میں حکومت کو مکمل اختیارات حاصل ہوئے ہیں لیکن ہم ( مرکزی حکومت ) حدود اور اختیارات سے متجاوز نہیں ہوتے۔ انہوں نے بتایا کہ کجریوال روز اول سے ہی مرکز کے ساتھ محاذ آرائی پر اُتر آئے ہیں جوکہ مناسب نہیں ہے اور ایک چیف منسٹر کی حیثیت سے ان کی یہ ذمہ داری ہے کہ مرکز کے ساتھ خوشگوار تعلقات استوار کریں۔ انہوں نے عام آدمی پارٹی کے اس الزام کو بھی مسترد کردیا کہ مرکزی حکومت لیفٹننٹ گورنر کے ذریعہ دہلی حکومت کو کنٹرول کرنے کی کوشش میں ہے۔ دریں اثناء دہلی بی جے پی یونٹ نے آج چیف منسٹر ارویند کجریوال سے مطالبہ کیا ہے کہ جعلی ڈگری کیس میں عام آدمی پارٹی لیڈر جتیندر سنگھ تومر کی گرفتاری پر اخلاقی ذمہ داری قبول کرتے ہوئے استعفی دے دیں۔ دہلی بی جے پی صدر ستیش اپا دھیائے نے کہا کہ دھوکہ اور جعلسازی کے الزامات میں ماخوذ دہلی کے وزیر قانون جے ایس تومر کی مدافعت کرنے پر چیف منسٹر کو مستعفی ہوجانا چاہیئے۔ جبکہ وہ ( کجریوال ) پھر ایک بار عام آدمی پارٹی سے تومر کے اخراج کا بہانہ بناتے ہوئے عوام کو بے وقوف بنانے کی کوشش میں ہیں۔انہوں نے الزام عائد کیا کہ چیف منسٹر نے انتخابی مہم کے دوران اصول و قواعد اور شفافیت جیسے الفاظ کا استعمال کیا تھا لیکن قول و فعل میں تضاد سے ان کی منافقت بے نقاب ہوگئی ہے۔ پونہ سے موصولہ اطلاعات کے بموجب عام آدمی پارٹی کے ارکان اسمبلی سلسلہ وار تنازعات میں پھنسنے پر اس کے باغی گروپ سوراج ابھیان نے چیف منسٹر ارویند کجریوال سے استعفی کا مطالبہ کیا ہے اور بتایا کہ وہ حکمرانی کے اخلاقی حق سے محروم ہوگئے ہیں۔

TOPPOPULARRECENT