Tuesday , December 11 2018

شہریوں کی شکایت کی یکسوئی کیلئے جی ایچ ایم سی کی مہم

کیمرہ سے لیس گاڑیوں کے استعمال کا فیصلہ ، بلدی مسائل پر توجہ مرکوز

کیمرہ سے لیس گاڑیوں کے استعمال کا فیصلہ ، بلدی مسائل پر توجہ مرکوز
حیدرآباد ۔ 20 اپریل ۔ (سیاست نیوز) گریٹر حیدرآباد میونسپل کارپوریشن نے سٹی پولیس کی طرز پر کیمروں کی گاڑیوں کے استعمال کا فیصلہ کیا ہے۔ گلی کوچوں میں بلدی مسائل اور اس کی یکسوئی کیلئے بلدی عہدیدار اس طریقہ کو بہترین ذریعہ قرار دے رہے ہیں۔ تاہم اس طریقہ کار سے جس کو ’’اڈوانس سٹیزن گریونس ریڈرسیل سسٹم ‘‘ کا نام دیا گیا ہے۔ بلدی عہدیداروں کی عوام مسائل سے دلچسپی بھی عیاں ہوگی۔ آج اس خصوص میں بلدی کمشنر نے ایک اعلیٰ سطحی اجلاس میں اس اسکیم کی عمل آوری پر تبادلہ خیال کیا جس میں سٹی پولیس کمشنر مسٹر مہندر ریڈی و دیگر موجود تھے ۔ بلدی عہدیدار دعویٰ کررہے ہیں کہ اس نئے و منفرد طریقہ کار سے شہری خدمات میں مزید بہتری پیدا کی جائے گی ۔ گاڑی پر کیمرے نصب کئے جائیں گے جو گلی کوچوں اور کئی مقامات پر گھوم کر تصویریں حاصل کریں گے۔ فٹ پاتھ پر ناجائز قبضہ ، کچرہ کی عدم نکاسی ، گڑھے خستہ حال سڑکیں ، پانی اور ڈڑینج کے مسائل ، آورہ کتوں کی بہتات، ٹریفک، برقی پول کی کارکردگی ، اوپن مین ہولس و دیگر مسائل حل کئے جائیں گے ۔ گاڑی کے اوپر کے حصہ میں ہائی ڈیفنیشن کیمرے نصب کئے جائیں گے اور گاڑی میں خصوصی سافٹ ویر سسٹم موجود رہے گا ۔ کیمروں سے جوڑی ہوئی یہ گاڑیاں موجودہ مقامات سے تصویر حاصل کرتے ہوئے متعلقہ عہدیدار کو تصور روانہ کرے گی ۔ بلدیہ کے صدر دفتر میں بھی ایک کنٹرول کمانڈ روم کو قائم کیا جائے گا جو تصاویر کو گاڑیوں سے حاصل کیا جائے گا ۔ ان تصاویر کو کمانڈ کنٹرول روم سے روانہ کردیا جائے گا ۔بلدیہ نے پہلے مرحلہ کے تحت 12 گاڑیوں کو استعمال کرنے کا فیصلہ کیا ہے۔ ایک گاڑی فی گھنٹہ 15 کیلومیٹر اور روزآنہ 200 کیلومیٹر کے احاطہ کو طئے کرے گی ۔ اس طرح 10 گاڑیاں روزانہ 2 ہزار کیلومیٹر کااحاطہ کرتے ہوئے مسائل کو حاصل کریں گی اور نشاندہی کرتے ہوئے متعلقہ عہدیداروں کو اس سے واقف کیا جائے گا ۔ٹوٹ کر گرے درخت ، خستہ حال سڑکیں ، غیرمجاز و غیرقانونی تعمیرات ، بلدی عہدیداروں کی بے قاعدگیاں ، ٹائلٹ کے مسائل ، غیرمجاز ہولڈنگس اس طرح بے پناہ مسائل جو شہریوں کیلئے پریشانی کا باعث بنے ہوئے ہیں انھیں حل کیا جائے گا ۔

TOPPOPULARRECENT