Tuesday , December 12 2017
Home / شہر کی خبریں / شہر اور اضلاع میں شراب کی دکانات کے خلاف احتجاج

شہر اور اضلاع میں شراب کی دکانات کے خلاف احتجاج

مذہبی مقامات کے قریب دکانات کی مخالفت ، حالات کشیدہ
حیدرآباد ۔ /4 اکٹوبر (سیاست نیوز) تلنگانہ حکومت کی گزشتہ دنوں قطعیت دی گئی شراب پالیسی کے بعد قائم کی جانے والی شراب کی دوکانوں کے مسئلہ پر نہ صرف شہر حیدرآباد کے مختلف مقامات بلکہ تلنگانہ کے متعدد اضلاع سے عوام کی جانب سے شدید اعتراض و مخالفت اور سخت احتجاجی مظاہرے کرنے کی اطلاعات ہیں ۔ کیونکہ نئی شراب کی دوکانیں ، مدارس ، مذہبی عبادتگاہوں ، دواخانوں وغیرہ جیسے مقامات کے بالکل قریب اور متصل مقامات پر قائم کی جارہی ہیں ۔ بتایا جاتا ہے کہ چنچل گوڑہ سنٹرل جیل سے متصل علاقہ کرما گوڑہ میں قائم کی جانے والی نئی شراب کی دوکانوں کے خلاف عوام نے سخت احتجاج کیا اور اس دوکان کو کسی اور مقام پر لگالینے کی خواہش کی ۔ عوام کے جاری احتجاج کی اطلاع پر متعلقہ حلقہ کے رکن اسمبلی اور جی ایچ ایم سی ڈیویژن کارپوریٹر و پولیس عہدیداروں کے پہونچنے اور حالات سے واقفیت کے بعد شراب پالیسی کے رہنمایانہ ہدایات کی خلاف ورزی کرنے کی روشنی میں قائم کی جانے والی نئی شراب کی دوکان کو برخواست کروادیا گیا ۔ پولیس کے ذریعہ شراب کی دوکان خالی کروادی گئی ۔ جس کے بعد عوام نے اپنا احتجاج ختم کردینے کی اطلاعات پائی جاتی ہیں ۔ علاوہ ازیں راچاکونڈہ پولیس کمشنریٹ کے حدود میں واقع بی این ریڈی نگر ، کالونی میں جہاں دو منادر ، اور مدارس کے درمیان شراب کی دوکان قائم کی جارہی تھی کہ مقامی عوام نے شراب کی دوکان کے قیام میں رکاوٹیں پیدا کرکے سخت احتجاج کیا ۔ اس کے باوجود شراب کی دوکان مالک نے شراب کی دوکان قائم کرنے کیلئے اپنے کاموں کو جاری رکھا ۔ تب بتایا جاتا ہے کہ خواتین نے متحدہ طور پر مداخلت کرتے ہوئے شراب کی دوکان کے جاری بعض تعمیری کاموں کو منہدم کردیا ۔ جس کی وجہ سے وہاں کچھ دیر کیلئے صورتحال کشیدہ ہونے کی اطلاعات پائی جاتی ہیں اور مقام واقعہ پر پولیس پہونچکر کشیدہ حالات کو دیکھتے ہوئے دونوں گروپوں سے بات چیت کے ذریعہ حالات کو پرامن بنانے میں اپنا رول ادا کیا ۔ اسی طرح پداپلی ڈسٹرکٹ سے موصولہ اطلاعات کے مطابق بتایا جاتا ہے کہ پداپلی ڈسٹرکٹ کے کالوا سری رام پور منڈل مستقر پر جمعرات بازار کے مقام پر قائم کردہ شراب کی دوکان کو وہاں سے برخواست کروانے کا مطالبہ کرتے ہوئے مقامی خواتین نے زبردست احتجاج منظم کیا اور شراب کی دوکان کے روبرو اکٹھا ہوتے ہوئے زبردست دھرنا پروگرام کے ذریعہ شراب کی دوکان کو وہاں سے برخواست کروانے کا متعلقہ عہدیداران ریاستی محکمہ نشہ بندی و آبکاری سے پرزور مطالبہ کیا ۔ اس کے علاوہ مزید بتایا جاتا ہے کہ ضلع کریم نگر کے چوپہ ڈنڈی منڈل کے مستقر پر عوامی مقامات پر شراب کی دکان کے قیام کی عوام کی جانب سے سخت مخالفت کی گئی اور شراب کی دوکان قائم کرنے کو رکوادیا ۔ یہاں یہ بات قابل ذکر ہے کہ تلنگانہ حکومت کی نئی شراب پالیسی کے رہنمایانہ خطوط کی روشنی میں مدارس ۔ منادر ، مساجد ( مذہبی مقامات) کے علاوہ عوامی مقامات کے پاس کی صورت میں شراب کی دوکانیں قائم نہیں کی جانی چاہئیے لیکن ان رہنمایانہ ہدایات کی خلاف ورزی کرکے شراب کی دوکان قائم کرنے کی کوشش پر مالکین شراب دوکانات کو عوامی برہمی مخالفت اور احتجاج کا سامنا کرنا پڑرہا ہے ۔

TOPPOPULARRECENT