Wednesday , September 26 2018
Home / شہر کی خبریں / شہر حیدرآباد میں برائلر مرغ کے گوشت کے استعمال میں کمی

شہر حیدرآباد میں برائلر مرغ کے گوشت کے استعمال میں کمی

مضر صحت، کئی امراض لاحق ہونے کا خدشہ، تحقیقی رپورٹ میں انکشاف سے عوام کی احتیاط

حیدرآباد۔18مارچ(سیاست نیوز) مرغ میں پائی جانے والی بیماریوں کی انسانوں میں منتقلی کی اطلاعات کے بعد شہریان حیدرآباد میں مرغ کے گوشت کے استعمال کے رجحان میں کمی ریکارڈ کی جانے لگی ہے اور عوام مرغ کی تیار کردہ اشیاء کے استعمال سے گریز کرنے لگے ہیں۔ دونوں شہروں حیدرآباد و سکندرآباد میں جاریہ ماہ کے اواخر سے شادیوں کا موسم شروع ہونے جا رہاہے لیکن کہا جا رہاہے کہ شادیوں میں چکن کے اشیاء کی تیاری کے رجحان میں تیزی سے گراوٹ ریکارڈ کی جا رہی ہے اور دعوت میں تیار کی جانے والی اشیاء طعام کی فہرست سے چکن کی اشیاء غائب ہونے کی اطلاعات ہیں علاوہ ازیں گھریلو استعمال میں بھی گراوٹ ریکارڈ کی گئی ہے کیونکہ لوگوں کو اب برائلر چکن کے استعمال کے نقصانات کا اندازہ ہوگیا اور اب عالمی سطح پر اس مسئلہ کو موضوع بحث بنایا جانے لگا ہے اور کہا جا رہاہے کہ برائلر مرغ کو دیئے جانے والے غذائی اجزاء انسانی صحت کیلئے مضر ہیں اور برائلر مرغ انسان کی نہ صرف قوت مدافعت کو کمزور کرتا ہے بلکہ اس کے زیادہ استعمال کے نظام مدافعت کو ناکارہ ہوجانے کے علاوہ دیگر مہلک بیماریوں کے خطرات کے انکشاف نے بھی عوام میں خوف و دہشت پیدا کردیا ہے۔ برائلر مرغ کے استعمال سے ہونے والے مضر اثرات میں سب سے اہم اینٹی بائیوٹک ادویات کا انسانی جسم پر اثر نہ ہونا ہے جس کے سبب عام امراض کے علاج کے لئے دی جانے والی ادویات انسانی جسم پر اثر کرنا بند کردیتی ہیں۔ انسانی صحت میں سب سے اہم انسان کی قوت مدافعت ہوتی ہے اور اس میں پیدا ہونے والی کمزوری انسان کو دیگر امراض میں مبتلاء کردیتی ہے۔ حالیہ عرصہ میں امریکہ کے ایک ادارہ نے ہندستانی بازار میں فروخت کئے جانے والے انڈوں کے سلسلہ میں بھی ایک تحقیقی رپورٹ شائع کی تھی اور اس میں اس بات کا انکشاف کیا گیا تھا کہ انڈوں میں بھی ان اثرات کو محسوس کیا جا رہاہے جو برائلر مرغ میں پائے جاتے ہیں۔ ادارہ سیاست نے مرغ میں پائی جانے والی بیماریوں اور اس کے استعمال سے ہونے والی بیماریوں کے متعلق کئی سال قبل انکشاف کیا تھا اوراب کئی تحقیقی اداروں کی جانب سے اس بات کی توثیق کی جا رہی ہے کہ ہندستان کے علاوہ جنوبی ایشیائی ممالک کے برائلر مرغ میں مختلف اقسام کی بیماریاں پائی جا رہی ہیں اور ان بیماریوں کے تدارک کا واحد حل صرف برائلر کے استعمال کو ترک کرنا ہی ہے۔ بتایاجاتاہے کہ حیدرآباد کے علاوہ ریاست کے دیگر اضلاع میں بھی برائلر مرغ کے استعمال میں کمی ریکارڈ کی جا رہی ہے اور سرکاری سطح پر بھی اس بات کو محسوس کیا جار ہا ہے ۔ مرغ کی تجارت سے وابستہ تاجرین کا کہنا ہے کہ بڑے صنعتی ادارے جو غذائیں برائلر مرغ کو دے رہے ہیں ا س کے منفی اثرات چھوٹے تاجرین پر مرتب ہو ر ہے ہیں اور انہیں شدید کاروباری نقصان کا سامنا کرنا پڑ رہا ہے۔

TOPPOPULARRECENT