Friday , January 19 2018
Home / شہر کی خبریں / شہر میں آن لائن دھوکہ دہی کے واقعات میں اضافہ

شہر میں آن لائن دھوکہ دہی کے واقعات میں اضافہ

گرہست خواتین آسان شکار، عوام کو چوکنا رہنے کی ضرورت

گرہست خواتین آسان شکار، عوام کو چوکنا رہنے کی ضرورت
حیدرآباد ۔ 4 جولائی (سیاست نیوز) شہر میں آن لائن دھوکہ دہی کے واقعات میں دن بہ دن اضافہ ہوتا جارہا ہے۔ دھوکہ باز ٹولیاں گرہست خواتین کو نشانہ بنارہے ہیں اور خواتین کو بہ آسانی دھوکہ دہی کا شکار بنایا جارہا ہے۔ خود کو بینک کا منیجر ظاہر کرتے ہوئے ایک خاتون کے بنک کھاتے سے رقم لوٹنے کا واقعہ پیش آیا۔ تاہم رسوائی اور خاندانی مسائل کے خوف سے یہ خاتون پولیس میں شکایت کرنے تیار نہیں اور اس خاتون نے نام نہ ظاہر کرنے کی خواہش پر تفصیلات بتائی۔ تاہم عہدیداروں کا کہنا ہیکہ آن لائن دھوکہ دہی کے تعلق سے شعور بیداری بے حد ضروری ہے اور شعور بیداری کے بغیر ایسے واقعات کی روک تھام بے حدمشکل ہے۔ شہر میں آئے دن ایسے واقعات کہیں نہ کہیں پیش آرہے ہیں۔ جن میں چند شکایت لیکر پولیس اسٹیشن سے رجوع ہوتے ہیں تو چند پولیس تک پہنچ نہیں پاتے جبکہ سائبر کرائم شعبہ جو محکمہ پولیس میں خاص طور پر ایسے ہی واقعات کی روک تھام اور ان پر قابو پانے کیلئے تشکیل دیا گیا۔ اس محکمہ کے عہدیداروں کا کہنا ہیکہ ایسے واقعات میں ریکوری مشکل ہے اور خاطیوں کی گرفتاری کے باوجود واقعات میں اضافہ تشویشناک ہوتا جارہا ہے۔ اس خاتون کو جو کاروان علاقہ کی ساکن ہیں گذشتہ ہفتہ ان کے سیل پر فون آیا اور فون کرنے والے نے اپنے آپ کو اسٹیٹ بنک کا منیجر ظاہر کیا اور مسلم خاتون سے ان کے اے ٹی ایم کی تفصیلات طلب کیا جس پر خاتون نے برہمی کے عالم میں انکار کردیا۔ تاہم خود کو منیجر ظاہر کرنے والے اس دھوکہ باز نے خاتون کو اپنی باتوں میں ڈال دیا اور خاتون سے کہنے لگا کہ ڈرنے کی کوئی بات نہیں وہ منیجر ہے اور بنک اکاونٹ کی جانچ کررہا ہے۔ اس نے خاتون سے کہا کہ ان کا اے ٹی ایم بند ہوچکا ہے۔ منیجر نے خاتون کو مشورہ دیا کہ وہ ان کے سیل فون پر ایس ایم ایس آئیں گے نہیں دیکھا اور مجھے اطلاع دینے کے بعد ایس ایم ایس کو مٹا دینا چاہئے۔ خاتون اس دھوکہ باز کی باتوں میں آ گئیں اور اس نے ایسا ہی کیا۔ جس کے بعد اس خاتون اور اس کے شوہر دونوں کے اکاونٹ سے رقم غائب ہوگئی۔ خاتون کا اے ٹی ایم نمبر لینے کے بعد دھوکہ باز نے ان کے شوہر کا اے ٹی ایم نمبر بھی لیا۔ 26 جون کے دن اے ٹی ایم کے ذریعہ دھوکہ دیا گیا اور کچھ دن وقفہ کے بعد جب میاں بیوی بنک سے رجوع ہوئے انہیں دھوکہ دہی کا علم ہوا۔ خاتون کی درخواست کو بنک منیجر نے مسترد کرتے ہوئے کہا کہ بنک سے ایسا کام کوئی نہیں کرتا لہٰذا خود کو احتیاط سے کام لینا چاہئے۔ اس نے عوام بالخصوص خواتین سے درخواست کی کہ وہ ایسے کسی بھی باتوں کا شکار نہ بنیں اور فوری متعلقہ بنک سے ربط پیدا کریں۔

TOPPOPULARRECENT