Tuesday , December 12 2017
Home / شہر کی خبریں / شہر میں وبائی امراض ڈینگو، سوائن فلو اور ڈائیریا میں اضافہ

شہر میں وبائی امراض ڈینگو، سوائن فلو اور ڈائیریا میں اضافہ

صاف صفائی پر توجہ دینے کی ضرورت ۔ ڈاکٹرس کے انتباہ کے باوجود جگہ جگہ کوڑا کرکٹ کا انبار
حیدرآباد۔24ستمبر(سیاست نیوز) ڈینگو اور سوائن فلو کے علاوہ ڈایئریا شہر میں تیزی سے وبائی شکل اختیار کرتے جا رہے ہیں اور ان وباؤ ں کو روکنے کا واحد حل صفائی کے نظم کو بہتر بنانا ہی ہے ۔ شہر حیدرآباد کے سرکاری دواخانو ںمیں سوائن فلو اور ڈینگو کے مریضوں کی تعداد میں بتدریج اضافہ دیکھا جا رہا ہے اور اس اضافہ کے متعلق ڈاکٹرس کا کہنا ہے کہ جن علاقوں میں صفائی کے انتظامات ناقص ہیں ان علاقو ںمیں یہ صورتحال پائی جا رہی ہے اور ان علاقوں سے تعلق رکھنے والے مریضوں کی ہی تعداد بڑھتی جا رہی ہے۔ ڈاکٹرس کی جانب سے متعدد مرتبہ یہ کہے جانے کے باوجود بھی شہری زندگی کو پاک و صاف اور بہتر بنانے کے اقدامات نہ کئے جانے کے سبب صورتحال مزید بگڑتی جا رہی ہے اور شہر میں مچھروں کی کثرت نے شہریوں کی زندگی کو محال کر رکھا ہے۔ دونوں شہروں حیدرآباد و سکندرآباد کے کئی علاقوں میں کھلے برساتی نالوں کے علاوہ ان نالوں میں گندگی اور کھلے عام رفع حاجت کے مسائل شہرمیں متعدد وبائی امراض کا سبب بن سکتے ہیں اور ان بیماریوں کی روک تھا م کیلئے ضروری ہے کہ شہری انتظامیہ شہر کی گلی اور سڑکوں کو صاف ستھرا رکھنے کے لئے سخت گیر اقدامات اور وقت پر کچرے کی نکاسی کے انتظامات کو ممکن بنائے لیکن مجلس بلدیہ عظیم تر حیدرآباد کی جانب سے اختیار کردہ لاپرواہی والا رویہ شہریوں کے لئے تکلیف کا باعث بنا ہوا ہے۔ بتایاجاتاہے کہ گاندھی ہاسپٹل‘ عثمانیہ دواخانہ کے علاوہ دیگر سرکاری مراکز صحت سے ڈینگو اور سوائن فلو سے متاثرہ مریض رجوع ہو رہے ہیں اور اسی طرح فیور ہاسپٹل اور نیلوفر دواخانہ سے رجوع کئے جانے والے معصوم مریض بھی ڈائیریا جیسی بیماریوں کا شکار ہیں جو کہ بنیادی طور پر عدم صفائی کے سبب ہوا کرتی ہیں۔ شہری علاقوں بالخصوص حیدرآباد کی گنجان آبادیوں میں صفائی کے ناقص انتظامات شہریوں کی صحت کو متاثر کرنے کا سبب بن رہے ہیں اور عوام کو بھی اپنے گھروں کے ساتھ ساتھ آس پاس کے علاقوں کی صفائی کو ممکن بنانے کے اقدامات کرنے چاہئے تاکہ وبائی امراض کو پھیلنے سے روکا جا سکے۔ بلدی عہدیداروں کا کہنا ہے کہ عوامی شعور بیداری کیلئے جی ایچ ایم سی کی جانب سے تشہیری مہم چلائی جا رہی ہے اور حکومت کی جانب سے صفائی کے اصولوں سے واقف کروانے کے اقدامات کو ممکن بنایا جا رہا ہے۔ شہریوں کا کہنا ہے کہ تشہیری اقدامات کیلئے حکومت اور بلدیہ کی جانب سے جو اخراجات کئے جا رہے ہیں اگر ان کے ساتھ ساتھ کھلے نالوں اور گندگی والے علاقوں کی صفائی کو ممکن بنایا جا تا ہے تویہ عمل صحت عامہ کے حق میں بہتر ثابت ہوسکتا ہے۔ جی ایچ ایم سی عہدیداروں کا کہنا ہے کہ شہر کی آبادیوں میں مچھر کش ادویات کے چھڑکاؤ کے ذریعہ مچھروں کی افزائش کو روکنے کی کوشش کی جا رہی ہے اور رہائشی علاقو ںمیں مچھر کش ادویات کے چھڑکاؤ کی خصوصی مہم چلائی جا رہی ہے۔

TOPPOPULARRECENT